Author Archives

سمیدھا پال

نارائن پور ڈسٹرکٹ کلکٹریٹ کے باہر عیسائی مخالف تشدد کے خلاف احتجاجی مظاہرہ  کی ایک تصویر۔ (تصویر: اسپیشل ارینجمنٹ)

چھتیس گڑھ: نارائن پور ضلع میں عیسائی مخالف تشدد کے خلاف گاؤں والوں کا احتجاجی مظاہرہ

بستر ڈویژن کے نارائن پور ضلع میں کلکٹریٹ کے باہرسینکڑوں لوگوں نے احتجاجی مظاہرہ کیا۔ کلکٹر کو دیے گئے میمورنڈم میں انہوں نے الزام لگایا ہے کہ آر ایس ایس اور دیگر ہندوتوا تنظیموں کے اکساوے پر عیسائیوں کے خلاف تشددکیا جا رہا ہے۔ ان کا مطالبہ ہے کہ ملزمان کے خلاف ایف آئی آر درج کرکے کارروائی کی جائے۔

(بائیں سے دائیں) وکیل کولن گونجالوس، صفورہ  زرگر، شرجیل عثمانی، ندا پروین اور تزئین جنید۔ (تصویر: سمیدھا پال/ دی وائر)

ہندوستان میں ہیٹ کرائم کو بڑھاوا دینے میں پولیس کا رول: رپورٹ

ایک امریکی این جی او کے زیر اہتمام ‘ہندوستان میں مذہبی اقلیتیں’ کے عنوان سے شائع ہونے والی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ مذہبی اقلیتوں کے خلاف ہیٹ کرائم کے زیادہ تر واقعات بی جے پی مقتدرہ ریاستوں میں رونما ہوئے ہیں۔ رپورٹ کے مطابق، بہت سے معاملات میں سیاسی اثر و رسوخ کے تحت پولیس متاثرین کی من مانی گرفتاریاں کرتی ہے یا ان کی شکایات درج کرنے سے انکار کرتی ہے۔

توڑ پھوڑکی کارروائی کے دوران بنائے گئے ویڈیو کا اسکرین شاٹ۔ (تصویر: اسپیشل ارینجمنٹ)

اڑیسہ: جس گاؤں میں جندل اسٹیل پلانٹ لگایا جانا ہے، وہاں 20 گھر گرائے گئے

اڑیسہ کے ڈھنکیا گاؤں میں جندل گروپ 65000 کروڑ روپے کی لاگت سے اسٹیل پلانٹ لگانے جا رہا ہے۔ گاؤں والوں اورسماجی کارکنوں کا الزام ہے کہ 22 اکتوبر کو کمپنی کے اہلکاروں نے مقامی غنڈوں اور پولیس کی مدد سے تقریباً 20 گھروں کو گرا دیا۔ گاؤں والوں کا کہنا ہے کہ وہ 20 سال سے یہاں رہ رہے ہیں۔

داؤد علی تیاگی۔ (تصویر: اسپیشل ارینجمنٹ)

یوپی: ’مسلمانوں کو ڈرانے‘ کی مبینہ کوشش میں بھیڑ نے کیا تھا ایک مسلمان شخص کا قتل

اتر پردیش کے باغپت ضلع میں 2 ستمبر کو 20-22 لوگوں کی بھیڑ نے ونے پور کے رہنے والے داؤد علی تیاگی پر حملہ کر دیا تھا۔ کارکنوں کا دعویٰ ہے کہ تیاگی کے قتل سے پہلے اس علاقے میں ایک بیٹھک ہوئی تھی، جس میں علاقے کے مسلمانوں کو ڈرانے کا منصوبہ بنایا گیا تھا۔ پولیس نے بھی بیٹھک اور سازش کی بات قبول کی ہے۔

سلطان پور کے بلدی رائے تھانہ حلقہ میں نکالے گئے جلوس کے وائرل ویڈیو کا اسکرین شاٹ۔

اترپردیش: درگا وسرجن کے دوران فرقہ وارانہ تشدد، علماء نے یکطرفہ کارروائی کا الزام لگایا

اتر پردیش کے سلطان پور ضلع کے بلدی رائے تھانہ حلقہ میں10 اکتوبر کو درگا مورتی وسرجن کے دوران ہوئے فرقہ وارانہ تشدد کے سلسلے میں 32 لوگوں کو گرفتار کیا گیا ہے۔ اس سلسلے میں علماء کے ایک وفد نے ضلع مجسٹریٹ سے ملاقات کی ہے اور کہا ہے کہ اس رات جن لوگوں کی گرفتاریاں ہوئیں اور آج تک جو نامزد ہوئے ہیں وہ سبھی مسلم کمیونٹی سے ہیں۔

گجرات پولیس کے حراست میں لیے جانے سے پہلے بلقیس بانو کے لیے اپنی حمایت کا اظہار کرتے سماجی کارکنان۔ (تصویر: twitter/@hrishirajanand_)

بلقیس بانو کی حمایت میں مجوزہ پیدل مارچ سے پہلے میگسیسے ایوارڈ یافتہ سندیپ پانڈے کو حراست میں رکھا گیا

گجرات پولیس نے سندیپ پانڈے سمیت سات سماجی کارکنوں کو 25 ستمبر کی دیر رات اس لیے حراست میں لے لیا کہ وہ اگلے دن گجرات فسادات کے دوران گینگ ریپ کی شکار ہونے والی بلقیس بانو کی حمایت میں ان کے مجرموں کی قبل از وقت رہائی کے خلاف پیدل مارچ نکالنے والے تھے۔

واقعے کے بعد سامنے آئے ایک ویڈیو میں کچھ لوگ لاٹھیوں سے  گھروں میں توڑ پھوڑ کرتے نظر آ رہے ہیں۔ (اسکرین گریب کریڈٹ: ٹوئٹر)

بہار: مہاویری اکھاڑہ کے جلوس میں فرقہ وارانہ تصادم کے بعد ایک بزرگ اور ایک نابالغ گرفتار

واقعہ سیوان ضلع کا ہے۔ الزام ہے کہ جمعرات کو مہاویری اکھاڑہ کے جلوس کے دوران ایک مسجد کے قریب فرقہ وارانہ نعرے لگائے گئے، جس کے بعد دو گروپوں کے درمیان پتھراؤ ہوا اور ایک دکان کو آگ لگا دی گئی۔

(علامتی تصویر: رائٹرس)

ہندوستان میں اس سال جولائی تک عیسائیوں پر 300 سے زیادہ حملے ہوئے: این جی او

غیر سرکاری تنظیم یونائیٹڈ کرسچن فورم نے اپنی ہیلپ لائن پر مدد کے لیےآئے فون کال کا حوالہ دیتے ہوئے دعویٰ کیا ہے کہ 2022 کے پہلے سات مہینوں میں ملک میں عیسائیوں کے خلاف ہوئے حملوں میں اتر پردیش سرفہرست اور چھتیس گڑھ دوسرے نمبر پر ہے۔

29 اگست کے حملے کا اسکرین شاٹ۔ (تصویر: اسپیشل ارینجمنٹ)

اتراکھنڈ: جائیداد کے جھگڑے میں پڑوسیوں نے مبینہ طور پر مسلم فیملی پر حملہ کیا

یہ واقعہ اتراکھنڈ کے ہری دوار ضلع کے جھبریڑا قصبے کا ہے۔ ایک مسلم فیملی کا اپنے پڑوسیوں کے ساتھ جائیداد کو لے کر تنازعہ چل رہا ہے، جس کو لے کر انہیں پہلے بھی دھمکیاں مل چکی ہیں، جس کی شکایت انہوں نے پولیس میں بھی درج کرائی تھی۔ شکایت پر کوئی کارروائی نہیں کی گئی۔ 29 اگست کو پڑوسیوں نے ہتھیاروں کے ساتھ فیملی پر مبینہ طور پر حملہ کیا تھا۔

مکان توڑے جانے کے دوران کی تصویر۔ (فوٹو: اسکرین گریب ٹوئٹر/@Satyamooknayak)

مدھیہ پردیش: متاثرہ خاندان کا دعویٰ – کارپوریشن افسر کے ساتھ تنازعہ کی وجہ سے مکان توڑا گیا

مدھیہ پردیش کی راجدھانی بھوپال کے بان گنگا علاقے میں 27 اگست کو ایک مسلم فیملی کے گھر کو میونسپل کارپوریشن نے غیر قانونی قرار دیتے ہوئے گرا دیا تھا۔ فیملی نے اپنے مکان کو قانونی بتاتے ہوئے دعویٰ کیا ہے کہ ان کے گھر کو انتقامی کارروائی کے تحت توڑا گیا، کیونکہ 20 اگست کو انسداد تجاوزات مہم کے دوران کارپوریشن کے ایک اہلکار کا اس مکان میں رہنے والی ایک خاتون کے بیٹے کے ساتھ جھگڑا ہوگیا تھا۔

Rupesh Thumb

عوام کی آواز بلند کرنے والوں کو دھمکیاں دی جا رہی ہیں: اپسا شتاکشی

ویڈیو: جھارکھنڈ کے صحافی روپیش کمار سنگھ کو 17 جولائی کو ماؤنوازوں سے مبینہ تعلقات کے الزام میں گرفتار کیا گیا ہے۔ ان کی اہلیہ اپسا شتاکشی نے بتایا کہ انہیں جیل میں متعدی مریضوں کے وارڈ میں رکھا گیا ہے اور وہاں کی حالت ٹھیک نہیں ہے۔ ان کے ساتھ سمیدھا پال کی بات چیت۔

اپنی شکایت پولیس کو دیتے ہندوتوا کارکن ۔ (تصویر: اسپیشل ارینجمنٹ)

کانپور: اسکول میں اسلامی دعا کو ہندوتوا تنظیم نے ’شکشا جہاد‘ بتایا، کیس درج

ہندوتوا تنظیم کا الزام ہے کہ اتر پردیش میں کانپور کے فلوریٹس انٹرنیشنل اسکول میں اسلامی دعا کے ذریعے طالبعلموں کا مذہب تبدیل کرنے کی کوشش کی جارہی تھی، جبکہ اسکول انتظامیہ کا کہنا ہے کہ ان کے یہاں کسی خاص مذہب نہیں، بلکہ تمام مذاہب کی دعائیں طالبعلموں سے کرائی جاتی ہیں اور ایسا 12-13 سالوں سے چل رہا ہے۔

Namaz thumb

نماز ادا کرنے پر بڑھتی گرفتاریاں، کیا ہے اس کی بنیاد؟

ویڈیو: حالیہ دنوں میں دیکھنے میں آیا ہے کہ عوامی طور پر نماز ادا کرنے کو ‘جرم’ قرار دیا جا رہا ہے، اور ہندوتوا تنظیمیں اس کی مخالفت کر رہی ہیں ۔دی وائر ایکسپلین کے اس ایپی سوڈ میں ہم اس سیاسی تناظر پر بات کرنے کی کوشش کررہے ہیں جس کے تحت عوامی طور پر نماز ادا کرنے کو ‘جرم’بنا دیا گیا ہے اور یہاں یہ سمجھنے کی کوشش بھی گئی ہے کہ کیا ہندوستانی قانون میں اس کے خلاف کسی طرح کی کارروائی کی کوئی بنیاد ہے؟

گھنگھٹی پارہ میں توڑے  گئے گھر۔

اڑیسہ: سملیشوری مندر کے ری ڈیولپمنٹ پروجیکٹ کی وجہ سے 200 دلت خاندان بے گھر ہونے کے دہانے پر

اڑیسہ حکومت سنبل پور کےسملیشوری مندر کےری ڈیولپمنٹپروجیکٹ پر کام کر رہی ہے، جس کی وجہ سے قریبی بستی میں برسوں سے جھگیاں بناکر رہ رہے تقریباً 200 دلت خاندان متاثر ہوں گے ہیں ۔ سماجی کارکنوں کے مطابق، کم از کم ایک سو گھروں کو پہلے ہی منہدم کیا جاچکا ہے۔ دیگر خاندانوں نے اپنے گھروں کو بچانے کے لیےاڑیسہ ہائی کورٹ سے رجوع کیا ہے۔

الہ آباد میں 10 جون کو تشدد کے بعد 12 جون کو انتظامیہ نے جاوید محمد کے گھر کو مسمار کر دیا تھا۔ پولیس نے دعویٰ کیا ہے کہ وہ تشدد کے کلیدی  سازش کار تھے۔ (تصویر: رائٹرس)

پیغمبر پر تبصرہ : الہ آباد میں ہوئے مظاہروں کے لیے جاوید محمد پر این ایس اے لگایا گیا

پیغمبر اسلام کے بارے میں تبصرے کے خلاف 10 جون کو الہ آباد میں ہوئے تشدد کے سلسلے میں ویلفیئر پارٹی آف انڈیا کے رہنما اور سی اے اے مخالف مظاہروں میں شامل رہے جاوید محمد کو اتر پردیش پولیس نےگرفتار کیا تھا۔ ان کے وکیل کا کہنا ہے کہ جب پولیس ان کے خلاف کوئی ٹھوس ثبوت اکٹھا کرنے میں ناکام رہی تو اس نے این ایس اے لگا دیا۔

سہارنپور میں بلڈوزر کے ذریعے توڑے گئے  مکان کا کچھ حصہ۔ (تصویر: اسپیشل ارینجمنٹ)

سہارنپور تشدد: ملزمین کو موصول ہوئے گھر توڑے جانے کے نوٹس، متاثرین نے کہا – انتقامی کارروائی

بی جے پی لیڈروں کی جانب سے پیغمبر اسلام پر تبصرہ کرنے کے بعد منعقد مظاہرے کے دوران سہارنپور میں پیش آنے والے تشدد کے واقعات میں ملزم بنائے گئے افراد کے اہل خانہ کو گھر توڑے جانے سے متعلق نوٹس مل رہے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ نوٹس کا 10 جون یعنی تشدد کے دن ہی جاری ہونا ان پر سوال کھڑے کرتا ہے۔

اعظم گڑھ لوک سبھا سیٹ پر ضمنی انتخاب کے تحت جمعرات کو ووٹ ڈالے گئے۔ ایس پی نے اس دوران گڑبڑی  کے الزام لگائے ہیں۔ (تصویر: پی ٹی آئی)

یوپی ضمنی انتخاب: مسلمانوں کا الزام – پولیس نے انہیں ووٹ ڈالنے سے روکا، پولیس نے کہا – بھیڑ کو کنٹرول کر رہے تھے

اتر پردیش میں رام پور اور اعظم گڑھ کی لوک سبھا سیٹوں کے ضمنی انتخاب کے لیے جمعرات کو ووٹنگ کے دوران سوشل میڈیا پر ایسے ویڈیوز وائرل ہو رہے ہیں، جن میں دعویٰ کیا جا رہا ہے کہ پولیس مسلم ووٹروں کو پولنگ مراکز کے اندر جانے سے روک رہی ہے۔ وہیں اپوزیشن پارٹی ایس پی نے بھی مختلف علاقوں میں گڑبڑی کا الزام لگاتے ہوئے کئی ٹوئٹ کیے ہیں۔

جس ہنومان مندر کے پاس 10 جون کو احتجاجی مظاہرہ پرتشدد ہو گیا تھا، اس کے باہر تعینات حفاظتی دستے۔ (تصویر: پی ٹی آئی)

رانچی تشدد میں مارے گئے نابالغ کے اہل خانہ  10 دنوں سے ایف آئی آر لکھوانے کے لیے بھٹک رہے ہیں

پیغمبر اسلام کےبارے میں بی جے پی لیڈروں کے تبصرے کے خلاف میں 10 جون کو جھارکھنڈ کی راجدھانی رانچی میں پیش آئے تشدد کے واقعہ میں ایک نابالغ سمیت دو افراد کی موت ہوگئی تھی۔ متاثرہ خاندان نے پولیس کے ساتھ ساتھ ایک مقامی ہندوتوا کارکن پر گولی باری کا الزام لگایاہے، لیکن پولیس نے ابھی تک اس سلسلے میں ان کی ایف آئی آر نہیں لکھی ہے۔ اب اہل خانہ نے ہائی کورٹ میں عرضی داخل کرنے کی بات کہی ہے۔

1005 r Clips.00_15_11_18.Still006

بلڈوزر کی سیاست پر کیوں خاموش ہیں دہلی کے ایل جی؟

ویڈیو: لیفٹ پارٹی، اسٹوڈنٹ گروپ اور خواتین تنظیم راجدھانی دہلی کے میونسپل کارپوریشنوں کے ذریعے چلائی جا رہی انسداد تجاوزات مہم کے خلاف نظر آ رہی ہیں۔ بائیں بازو کی جماعتوں نے اس معاملے پر لیفٹیننٹ گورنر انل بیجل کی خاموشی پر سوال اٹھائے ہیں۔

0905 KT.00_01_29_08.Still007

دہلی پولیس ہمیں گھر سے اٹھانے کی دھمکی دے رہی ہے؛ دہشت میں جہانگیرپوری کے نوجوان

ویڈیو: دہلی کے جہانگیر پوری علاقے میں ہنومان جینتی کے موقع پر فرقہ وارانہ تشدد اور پھر تجاوزات کی مہم کے بعد یہاں کے مسلمانوں نے پولیس کی طرف سے ہراساں کیے جانے اور حراست میں لیے جانے کے خوف کے بارے میں دی وائر سے بات چیت کی۔

£

روہنگیا-بنگلہ دیشی کے نام پر اب کیا دہلی کے جیت پور میں چلے گا بلڈوزر؟

ویڈیو: گزشتہ دنوں جنوبی دہلی کے کونسلر کے کے شکلا نے جیت پور کا دورہ کیا اور دعویٰ کیا کہ اس علاقے میں بنگلہ دیشی اور روہنگیا رہتے ہیں اور اس علاقے سے تجاوزات کو ہٹایا جانا چاہیے۔ دی وائر کی ٹیم نےجیت پور میں یہ جاننے کی کوشش کی کہ کیا وہاں رہنے والے روہنگیا ہیں۔

ریلی میں رکاوٹ ڈالنے والے بجرنگ دل کے مبینہ کارکنان ۔ (تصویر: اسپیشل ارینجمنٹ)

اڑیسہ: امبیڈکر جینتی ریلی پر حملہ کرنے والے بجرنگ دل کے کارکن اب تک آزاد گھوم رہے ہیں

اڑیسہ کے برگڑھ علاقے میں امبیڈکر جینتی کے موقع پر 14 اپریل کو بھیم آرمی کی قیادت میں ایک بائیک ریلی نکالی گئی تھی۔ الزام ہے کہ اس ریلی پر بجرنگ دل کے 40-50 کارکنوں نے لاٹھی-ڈنڈوں اور چاقوؤں سے حملہ کر دیا تھا، جس میں 25 لوگ زخمی ہوگئے تھے۔ امبیڈکر کے پیروکاروں نے الزام لگایا ہے کہ پولیس ان پر سمجھوتہ کرنے کا دباؤ بنا رہی ہے۔

1904 NSC.00_53_38_17.Still002

روڑکی تشدد: ابھی مسلمانوں نے گھر چھوڑا ہے، انہیں ملک بھی چھوڑنا ہوگا

ویڈیو: اتراکھنڈ کے روڑکی ضلع کے دادا جلال پور گاؤں میں 16 اپریل کو ہنومان جینتی پر نکالے گئے جلوس کے دوران پتھراؤ کیا گیا تھا، جس کے نتیجے میں فرقہ وارانہ تشدد پھوٹ پڑا تھا۔ متاثرین سے بات چیت۔

1904 NSC.00_54_28_22.Still006

’مسلمانوں پر جاری حملے کے خلاف ہندو سماج کو آگے آکر بولنا چاہیے‘

ویڈیو: حجاب، گوشت اور رام نومی کے نام پر مسلمانوں پر لگاتار ہو رہےحملوں کے خلاف گزشتہ دنوں دہلی کے جنتر منتر پر طلبا، فنکار، اساتذہ اور مختلف طبقات کےعام شہری جمع ہوئے۔ انہوں نے مسلمانوں کی حمایت کرنے کی اپیل کی۔

1904 NSC.00_54_08_22.Still022

جب فرقہ وارانہ تشدد کے بعد دہلی میں بھی چلا بلڈوزر

ویڈیو: دہلی کے تشدد زدہ علاقے جہانگیر پوری میں شمالی دہلی میونسپل کارپوریشن کی انسداد تجاوزات مہم کے تحت مبینہ غیر قانونی تعمیرات کو منہدم کر دیا گیا ہے۔ سپریم کورٹ نے کہا ہے کہ وہ توڑ پھوڑ کی اس کارروائی کا نوٹس لے گی، جو کارپوریشن کو ہماریہدایت کے بارے میں مطلع کیے جانے کے بعد بھی جاری رہی۔

روڑکی کے دادا جلال پور کا منظر۔

روڑکی: ’کشمیر فائلز‘ سے متاثر ہندوتوادیوں نے مسلمانوں کو گاؤں سے نکالنے کی دھمکی دی

اتراکھنڈ کے روڑکی ضلع کے دادا جلال پور گاؤں میں 16 اپریل کو ہنومان جینتی پر نکلی ایک شوبھا یاترا کے دوران پتھراؤ ہوا تھا، جس کے نتیجے میں زیادہ تر مسلمانوں کو بھگوان پور کا علاقہ چھوڑنا پڑا ہے ۔ جو پیچھے رہ گئےہیں ، ان کا کہنا ہے کہ وہ مسلسل خوف کے سائے میں جی رہے ہیں۔

1604 HKB.00_10_22_23.Still006

مسلمان عورتوں کو ریپ کی دھمکی دینے والے ملزم مہنت نے کب کب زہر فشانی کی

ویڈیو: اتر پردیش کے سیتا پور ضلع کے خیر آباد علاقے کے مہنت بجرنگ منی نے 2 اپریل کو ہندو نئے سال اور نوراتری کے موقع پر مسلمان عورتوں کو مبینہ طور پر ریپ کرنے کی دھمکی دی تھی۔ اس معاملے میں اسے گرفتار کیا گیا ہے۔ مدھیہ پردیش پولیس کے ایک سابق سب انسپکٹر کے بیٹے بجرنگ منی پہلے انوپم مشرا کے نام سے معروف تھے۔

Sumedha Karauli 4 March.00_26_46_05.Still007

راجستھان فرقہ وارانہ تشدد: کیا مسلمانوں کو نشانہ بنانے کی کوئی منصوبہ بند کوشش ہو رہی ہے؟

ویڈیو: ہندو دائیں بازو کے گروپوں نے ہندو نئے سال کے دوران راجستھان کے کرولی میں مسلم اکثریتی علاقوں سے ایک جلوس نکالا تھا، جس میں مبینہ طور پر فرقہ وارانہ گالیاں دی گئی تھیں، جس کے بعد علاقے میں تشدد پھوٹ پڑا۔ دی وائر کی سمیدھا پال نے اس بارے میں سماجی کارکن ارجن مہر اور پروفیسر جتیندر مینا سے بات کی۔

0504 Sumedha Story.00_19_16_23.Still003

براڑی ہندو مہا پنچایت میں صحافی ارباب علی کے ساتھ کیا ہوا تھا؟

ویڈیو: 3 اپریل کو دارالحکومت دہلی کے براڑی علاقے میں منعقد ہندو مہاپنچایت کے دوران دائیں بازو کے ہجوم نے مبینہ طور پر چار مسلم صحافیوں سمیت پانچ صحافیوں پر حملہ کردیاتھا۔ دی وائر کی سمیدھا پال نے ان صحافیوں میں سے ایک ارباب علی سے بات کی۔

3103. NSC.00_39_52_14.Still025

حکومت ماب لنچنگ کے اعداد و شمار کیوں سامنے نہیں لانا چاہتی؟

ویڈیو: گزشتہ دنوں پارلیامنٹ میں مرکزی حکومت نے کہا کہ ان کے پاس الگ سےماب لنچنگ کا کوئی ڈیٹا نہیں ہے۔ اس ایشو پر ماہرین کے ساتھ بات چیت کہ کیوں حکومت کو ماب لنچنگ کے اعدادوشمار دوسرے جرائم سے الگ سامنے رکھنا چاہیے۔

' (1)

’دی کشمیر فائلز‘ ایجنڈہ کے تحت بنائی گئی فلم ہے: اشوک کمار پانڈے

ویڈیو: ‘کشمیر اور کشمیری پنڈت’ کتاب کے مصنف اشوک کمار پانڈے نے فلم ‘دی کشمیر فائلز’ کے بارے میں بات کی۔ انہوں نے اس بات چیت میں سمجھایا کہ 1990 میں کشمیری پنڈتوں کے ساتھ جو کچھ ہوا وہ آزاد ہندوستان کی سب سے بڑی ٹریجڈی میں سےایک تھی۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ کس طرح فلم کو اقلیتوں میں عدم تحفظ کا ماحول پیدا کرنے کے لیے استعمال کیا جاتا ہے۔

2502 SCMS.00_53_13_12.Still041

روس یوکرین جنگ کے درمیان واپس آئے ہندوستانی طلبا، اب ہندوستان کی اگلی حکمت عملی کیا ہے؟

ویڈیو: روس کی جانب سے اپنے پڑوسی ملک یوکرین پر حملے کے بعد دونوں ممالک کے درمیان گزشتہ کئی دنوں سے جنگ جاری ہے۔ یوکرین میں پھنسے ہندوستانی طلباءکو بھی روزانہ ہوائی جہاز سے واپس لایا جا رہا ہے۔ دی وائر نے ہندوستان لوٹے طلباء سے بات چیت کی۔

2701 Mukul.00_11_11_14.Still009

’یہاں دلت رہتے ہیں، اگر برہمن، ٹھاکر یا اونچی ذات کے لوگ رہتے تو کب کا وکاس ہو گیا ہوتا‘

ویڈیو: اسمبلی انتخاب کے پیش نظر دی وائر کی ٹیم زمینی صورتحال جاننے اتر پردیش کے آگرہ کے سیرولی گاؤں پہنچی تھی۔گزشتہ 100دنوں سے یہاں سڑک پر جمع پانی کو ہٹانے کےلیے اقدامات کا مطالبہ کرتے ہوئے لوگ دھرنے پر بیٹھے ہیں۔ گاؤں والوں کا کہنا ہے کہ وہ دلت ہیں اس لیے ان کے ساتھ امتیازی سلوک کیا جا رہا ہے۔

1301 Sumedha INT.00_36_06_14.Still004

مہاماری کے بیچ جیل میں سیاسی قیدیوں کی ابتر حالت

ویڈیو: مبینہ ماؤنواز لنک معاملے میں سزا کاٹ رہے پروفیسر جی این سائی بابا حال ہی میں کورونا سے متاثر پائے گئے ہیں، جس کے بعد ان کی اہلیہ نے ان کی رہائی کا مطالبہ کیا ہے۔ دہلی فسادات سے متعلق معاملوں میں گرفتار ایک اور سیاسی قیدی خالدسیفی کی اہلیہ نرگس نےبھی جیل کے ناقص انتظامات پر سوالات اٹھائے ہیں۔ ان کے ساتھ بات چیت۔

2912 Sumedha MONO.00_10_40_15.Still002

غازی آباد-لونی میٹ بین: لائسنس کے نام پر مسلمانوں کو نشانہ بنایا جا رہا ہے

ویڈیو: اتر پردیش کےغازی آبادمیں لونی سے بی جے پی کے ایم ایل اے نند کشور گرجر نے حال ہی میں اپنے علاقے میں گوشت کی دکانیں بند کروا دیں۔ سوشل میڈیا پر وائرل ایک ویڈیو میں گرجر کہہ رہے ہیں کہ گوشت بیچنے والوں کو جیل بھیج دیا جائے گا اور ضمانت نہیں ہوگی۔

2712 Sumedha.00_05_29_10.Still007

ہری دوار دھرم سنسد کے خلاف دہلی میں مظاہرہ؛ ہندوتوا لیڈروں کی گرفتاری کا مطالبہ

ویڈیو: اتراکھنڈ کےہری دوارمیں 17-19 دسمبر کے درمیان ہندوتوا لیڈروں اور شدت پسندوں کی طرف سے ایک’دھرم سنسد’کا انعقاد کیا گیا تھا، جس میں مبینہ طور پرمسلمانوں اور اقلیتوں کے خلاف کھلے عام نفرت انگیز بیان بازی کی گئی، یہاں تک کہ ان کے قتل عام کی بھی اپیل کی گئی۔

2112 Sumedha.00_15_16_20.Still002

اترپردیش: ٹی-20 میں پاکستان کی جیت کے بعد جیل میں بند کشمیری طلبا، اہل خانہ کر رہے ہیں انصاف کا مطالبہ

ویڈیو: اتر پردیش کی آگرہ یونیورسٹی سے منسلک ایک پرائیویٹ کالج کے تین کشمیری طالبعلموں کو 24 اکتوبر کو ٹی-20 کرکٹ ورلڈ کپ میں پاکستان کے ہاتھوں ہندوستان کی شکست کے بعد جیت کا جشن منانے کےالزام میں جیل بھیج دیا گیا تھا۔ ان کے اہل خانہ اب تک انصاف کی اپیل کر رہے ہیں اور انتظار کر رہے ہیں کہ انہیں آخر کب رہا کیا جائے گا۔

1412 Sumedha.00_13_05_12.Still001

اتراکھنڈ میں لینڈ جہاد کے نام پر ووٹ لینے کی بی جے پی کی حکمت عملی

ویڈیو: آئندہ انتخابات کی وجہ سے شدید سیاسی مفادات کے بیچ اتراکھنڈ میں بی جے پی کی قیادت اب لینڈ جہاد کے نام پر ووٹروں کو پولرائز کر رہی ہے۔ دی وائر نے اس مسئلے اور بی جے پی کے لیے اس کی اہمیت کے بارے میں ماہرین سےبات کی۔

Don`t copy text!