جنسی استحصال

India-Society-Boys-Girls-Reuters-2

ایسی کوئی جگہ نہیں، جہاں بچوں کا جنسی استحصال نہ ہوتا ہو

منسٹری آف وومینز اینڈ چائلڈ ڈیولپمنٹ کی اسٹڈی ‘چائلڈ ایبیوز ان انڈیا’کے مطابق ہندوستان میں 53.22 فیصد بچوں کے ساتھ ایک یا ایک سے زیادہ طرح کی جنسی بد سلوکی اور زیادتی ہوئی ہے۔ ایسے میں کون کہہ سکتا ہے کہ میرے گھر میں بچوں کا جنسی استحصال نہیں ہوا؟

بہار کے مظفر پور واقع بالیکا گریہہ میں بچوں سے ریپ  کے معاملے کا اہم ملزم برجیش ٹھاکر۔ (فوٹو بشکریہ : فیس بک / ٹوئٹر)

بہار بالیکا گریہہ: ملزم برجیش ٹھاکر کے ہیں 3 اخبار، فرضی واڑے  سے پائے لاکھوں کے اشتہار

برجیش کی ملکیت والے ایک ہندی روزنامہ کی 300 سے زیادہ کاپیاں شائع نہیں ہوتی ہیں لیکن روزانہ 60862 کاپیاں چھپیں دکھاکر بہار حکومت سے ہر سال تقریباً 30 لاکھ روپے کے اشتہار ملتے تھے۔ ملزم آئی پی آر ڈی سے منظور شدہ صحافی تھا۔

(علامتی فوٹو : رائٹرس)

خواتین کے لحاظ سے ہندوستان دنیا میں سب سے خطرناک ملک :سروے

تھامسن رائٹرس فاؤنڈیشن کے سروے میں 193ملکوں کو شامل کیا گیا تھا، جن میں سے عورتوں کے لئے ٹاپ 10 بدترین ملکوں کا انتخاب کیا گیا۔اس فہرست میں افغانستان اور سیریا دوسرے اور تیسرے، صومالیہ چوتھے اور سعودی عرب پانچویں مقام پر ہے۔

BerlinFilmFest_DWUrdu

برلن فلم فیسٹیول میں جنسی استحصال میں ملوث ہدایتکاروں اور اداکاروں کی فلمیں شامل نہیں کی جائیں گی

گزشتہ سال سوشل میڈیا پر جنسی استحصال کے خلاف شروع ہونے والی تحریک MeToo# کے بعد 15 سے 25 فروری تک جاری رہنے والا برلینالے فلم فیسٹیول کے منتظمین فلمی صنعت میں جنسی مساوات کے مسئلے پر توجہ مرکوز کروانا چاہتے ہیں۔

mid-day

محروم طبقوں کے  بچوں کے  لیے بنے رہائشی اسکول موت کے کنوئیں  کیوں بن رہے ہیں؟

رہائشی اسکولوں میں پڑھنے والے بچوںکے ساتھ جنسی استحصال ، ظلم و زیادتی اور ان کے موت کے واقعات عام ہو چلے ہیں لیکن اس موضوع پرعام طور سے کہیں کوئی بات نہیں ہوتی ۔ اڑیسہ کے ملکانگری ضلع میں تعینات بارڈر سیکورٹی فورس کے باڈاپاڈا واقع عارضی […]