عشرت جہاں انکاؤنٹر

فوٹو: پی ٹی آئی

عشرت جہاں کی ماں کا شنوائی میں حصہ لینے سے انکار، کہا–ناامید اور بے بس ہوچکی ہوں

گجرات پولیس کے مبینہ فرضی انکاؤنٹر میں ماری گئی عشرت جہاں کی ماں شمیمہ کوثر نے احمدآباد میں ایک اسپیشل سی بی آئی عدالت میں کہا کہ 15 سے زائد سال گزر گئے لیکن پولیس افسروں سمیت سبھی ملزمین ضمانت پر ہیں ۔ انہوں نے سی بی آئی سے ملزمین کے جرم کو طے کرنے کی اپیل کی۔

احمد آباد میں منگل کو عشرت جہاں انکاؤنٹر معاملے کی سماعت کے لئے سابق پولیس افسر ڈی جی ونزارا  اور این کے امین اسپیشل  سی بی آئی کورٹ  پہنچے۔ (فوٹو : پی ٹی آئی)

عشرت جہاں معاملہ: ونجارا اور امین کو الزامات سے بری کئے جانے کو چیلنج نہیں کرے‌ گی سی بی آئی

اسی سال مارچ میں ڈی جی ونجارا اور این کے امین نے سی بی آئی کی اسپیشل کورٹ میں ایک عرضی داخل کرتے ہوئے ان کو فوراً اس معاملے میں بری کرنے کی مانگ کی تھی۔ اس سے پہلے گجرات حکومت نے سی بی آئی کو دونوں سابق افسروں کے خلاف مقدمہ چلانے کی منظوری دینے سے انکار کر دیا تھا۔

فوٹو: پی ٹی آئی

گجرات انکاؤنٹر: سپریم کورٹ نے ایچ ایس بیدی رپورٹ کو عرضی داخل کرنے والوں کے ساتھ شیئر کرنے کو کہا

سال 2007 میں صحافی بی جی ورگیج اور نغمہ نگار جاوید اختر نے عرضی داخل کر کے گجرات میں 22 مبینہ فرضی انکاؤنٹر کی جانچ کی مانگ کی تھی۔ اس وقت نریندر مودی وزیر اعلیٰ تھے۔

احمد آباد میں منگل کو عشرت جہاں انکاؤنٹر معاملے کی سماعت کے لئے سابق پولیس افسر ڈی جی ونزارا  اور این کے امین اسپیشل  سی بی آئی کورٹ  پہنچے۔ (فوٹو : پی ٹی آئی)

عشرت جہاں انکاؤنٹر : ونجارہ اور امین کی الزام سے بری کرنے کی عرضی خارج

عشرت جہاں کی ماں نے ڈی جی ونجارہ اور این کے امین کی عرضی کی مخالفت کرتے ہوئے عدالت کو بتایا کہ ان کی بیٹی کا اعلیٰ عہدوں پر فائز پولیس افسروں اور طاقتور عہدوں پر بیٹھے لوگوں کے بیچ ہوئی سازش کے بعد قتل کیا گیا۔

jayant-patel-judge

عشرت جہاں انکاؤنٹر معاملے میں سی بی آئی انکوائری کا حکم دینے والے جج کا استعفیٰ

جسٹس پٹیل نے عشرت جہاں کیس میں صرف سی بی آئی انکوائری کا حکم نہیں دیا تھا بلکہ اس کی نگرانی بھی کی تھی اور سی بی آئی کے رول پر نظر رکھے جانے کا حکم  بھی شامل تھا ۔ نئی دہلی : کرناٹک ہائی کورٹ کے سینئر جج جینت […]