فرضی انکاؤنٹر

امت شاہ (فوٹو : رائٹرس)

امت شاہ اور ڈی جی ونجارہ، تلسی رام پرجاپتی قتل معاملے  کے اہم سازش کرنے والے ہیں: سی آئی او

تلسی رام پرجاپتی فرضی انکاؤنٹر کیس کے سی آئی او سندیپ تمگڑے نے سی بی آئی کورٹ کو بتایا کہ امت شاہ اور ڈی جی ونجارہ، دنیش ایم این اور راج کمار پانڈین جیسے آئی پی ایس افسر اس معاملے کے اہم سازش کرنے والے تھے۔

امت شاہ اور سہراب الدین شیخ (فوٹو : رائٹرس)

 سہراب الدین فرضی انکاؤنٹر سے امت شاہ کو سیاسی اور اقتصادی فائدہ ہوا: سابق انکوائری آفیسر

سہراب الدین فرضی انکاؤنٹر معاملے میں سابق چیف انکوائری آفیسر امیتابھ ٹھاکر نے بتایا کہ امت شاہ کو اس معاملے میں 70 لاکھ کی ادائیگی کی گئی تھی۔ سابق آئی پی ایس افسر ڈی جی ونجارہ، سابق ایس پی (ادئےپور) دنیش ایم این، سابق ایس پی (احمد آباد) راج کمار پانڈین اور سابق ڈی سی پی (احمد آباد) ابھئے چوڑاسما کو بھی فائدہ ہوا تھا۔

سہراب الدین شیخ اور کوثر بی

سہراب الدین کے بھائی نے کہا، پر جا پتی نے مجھے اس کے فرضی انکاؤنٹر کے بارے میں بتایا تھا

سہراب الدین شیخ کے بھائی رباب الدین نے عدالت کو بتایا کہ تلسی رام پرجاپتی نے اس کو بتایا تھا کہ اس کے بھائی کو فرضی انکاؤنٹر میں مارا گیاہے ۔ سہراب الدین کے ساتھی پر جاپتی کی بھی 2006میں ایک مبینہ فرضی انکاؤنٹر میں موت ہوئی تھی ۔

علامتی تصویر: پی ٹی آئی

آسام فرضی انکاؤنٹر: 5 نوجوانوں کے قتل کے معاملے میں 7 فوجیوں کو عمر قید

آسام کے تنسکیا ضلع میں 1994 میں یہ انکاؤنٹر ہوا تھا۔ آرمی کورٹ کے ذریعے سزا پانے والوں میں ایک سابق میجر جنرل ، 2 کرنل اور 4 دوسرے فوجی شامل ہیں۔ نئی دہلی: سابق میجر جنرل اے کے لال سمیت فوجیوں کو آرمی کورٹ نے 24 سال […]

فوٹو : پی ٹی آئی

فوج کی بے جا حرکتوں کو ’دیش ہِت‘ کے نام پر نظر انداز کرنا دراصل دیش کے ساتھ غداری ہے

فوج میں بھرتی ہونے والے عام انسان ہیں جنہیں وردی ایک خاص مقصد سے پہنائی جاتی ہے۔ان کی بے جا حرکتوں کو ’دیش ہِت ‘ میں نظر انداز کرنا دراصل دیش کے ساتھ غدّاری ہے۔ عوام کا اعتماد سسٹم میں باقی رہے اس کے لئے قانون نافذ کرنے والوں کو قانون کا پابند بنانا ہی ہوگا۔

فوٹو: بہ شکریہ ٹوئٹر

سکما انکاؤنٹر: چھتیس گڑھ حکومت نے انکاؤنٹر کی آزادانہ جانچ کی سپریم کورٹ میں مخالفت کی

چھتیس گڑھ کے سکما ضلع میں 6 اگست کو ہوئے انکاؤنٹر میں پولیس کے 15 نکسلیوں کو مارنے کے دعوے پر مقامی گاؤں والوں نے سوال اٹھاتے ہوئے کہا تھا کہ نکسلیوں کے نام پر بے قصور آدیواسیوں کا قتل کیا گیا ہے۔ معاملے کی آزادانہ جانچ کے لیے سپریم کورٹ میں عرضی دی گئی ہے۔

فوٹو: پی ٹی آئی

منی پور: نابالغ کے فرضی انکاؤنٹر معاملے میں میجر وجئے سنگھ سمیت 8 فوجیوں کے خلاف مقدمہ

کمیشن کو دیے گئے بیان میں آزاد کے اہل خانہ نے بتایا کہ آزاد کا قتل 4 مارچ 2009 کو کیا گیا تھا۔ ساتویں جماعت کے اسٹوڈنٹ آزاد کا کوئی مجرمانہ ریکارڈ بھی نہیں تھا ۔ مارنے سے پہلے اس کو گھر سے اٹھایا گیا تھا ۔