فرضی انکاؤنٹر

فوٹو : پی ٹی آئی

فوج کی بے جا حرکتوں کو ’دیش ہِت‘ کے نام پر نظر انداز کرنا دراصل دیش کے ساتھ غداری ہے

فوج میں بھرتی ہونے والے عام انسان ہیں جنہیں وردی ایک خاص مقصد سے پہنائی جاتی ہے۔ان کی بے جا حرکتوں کو ’دیش ہِت ‘ میں نظر انداز کرنا دراصل دیش کے ساتھ غدّاری ہے۔ عوام کا اعتماد سسٹم میں باقی رہے اس کے لئے قانون نافذ کرنے والوں کو قانون کا پابند بنانا ہی ہوگا۔

فوٹو: بہ شکریہ ٹوئٹر

سکما انکاؤنٹر: چھتیس گڑھ حکومت نے انکاؤنٹر کی آزادانہ جانچ کی سپریم کورٹ میں مخالفت کی

چھتیس گڑھ کے سکما ضلع میں 6 اگست کو ہوئے انکاؤنٹر میں پولیس کے 15 نکسلیوں کو مارنے کے دعوے پر مقامی گاؤں والوں نے سوال اٹھاتے ہوئے کہا تھا کہ نکسلیوں کے نام پر بے قصور آدیواسیوں کا قتل کیا گیا ہے۔ معاملے کی آزادانہ جانچ کے لیے سپریم کورٹ میں عرضی دی گئی ہے۔

فوٹو: پی ٹی آئی

منی پور: نابالغ کے فرضی انکاؤنٹر معاملے میں میجر وجئے سنگھ سمیت 8 فوجیوں کے خلاف مقدمہ

کمیشن کو دیے گئے بیان میں آزاد کے اہل خانہ نے بتایا کہ آزاد کا قتل 4 مارچ 2009 کو کیا گیا تھا۔ ساتویں جماعت کے اسٹوڈنٹ آزاد کا کوئی مجرمانہ ریکارڈ بھی نہیں تھا ۔ مارنے سے پہلے اس کو گھر سے اٹھایا گیا تھا ۔