وزارت ماحولیات

Illustration: Reuters/The Wire

پالیوشن نارمس: سبھی تھرمل پلانٹ کی تعمیل کے باوجود اڈانی پاور کے لیےضابطے میں ڈھیل دی گئی

خصوصی رپورٹ: سینٹرل پالیوشن کنٹرول بورڈ نے جن تھرمل پاور پلانٹ کی سات اکائیوں کی آلودگی کی سطح کی نگرانی کی تھی، ان میں سے پانچ طےشدہ معیارات کی تعمیل کر رہی تھیں۔ اڈانی پاور کی دو اکائیاں ان معیارات پر کھری نہیں پائی گئیں۔ 17 مئی کو وزارت ماحولیات نے بورڈ کے اعتراضات کو درکنار کرتے ہوئے تھرمل پاور پلانٹ کے فضائی آلودگی کےمعیار کو ہلکا کرنے کی اصولی منظوری دے دی۔

(فوٹو بہ شکریہ : پی آئی بی)

مودی حکومت نے گزشتہ 5 سالوں میں 1 کروڑ سے زیادہ پیڑ کاٹنے کی اجازت دی

لوک سبھا میں ماحولیات کے وزیرمملکت بابل سپریو نے گزشتہ دنوں بتایا تھا کہ سال 2014 سے 2019 کے بیچ منسٹری آف انوائرمنٹ نے ترقیاتی کاموں کے لئے 1.09 کروڑ پیڑ کاٹنے کی اجازت دی۔ کانگریس نے کہا ہے کہ مودی حکومت پیڑ کٹواکر ملک کے مستقبل کے ساتھ کھلواڑ کر رہی ہے۔

(فائل فوٹو : رائٹرس)

گاڑیوں کے دھوئیں سے 2015 میں ہوئی تقریباً 74 ہزار لوگوں کی موت

انٹرنیشنل کاؤنسل آن کلین ٹرانسپورٹیشن، جارج واشنگٹن یونیورسٹی اور یونیورسٹی آف کولوریڈو بالڈر کی ایک رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ سال 2010 سے 2015 کے درمیان ہندوستان میں گاڑیوں سے نکلے دھوئیں سے ہونے والی اموات میں 26 فیصد کا اضافہ ہوا۔

Children-March-against-alarming-levels-of-pollution-in-Delhi-PTI-2

دہلی : پانچ سالوں میں فضائی آلودگی نے لی 981 لوگوں کی جان، 17 لاکھ لوگ ہوئے متاثر

دہلی میں 2013 سے 2017 کے بیچ اکیوٹ ریسپریٹری انفیکشن (اے آر آئی )کی وجہ سے 981 لوگوں کو اپنی جان گنوانی پڑی اور قریب 17 لاکھ لوگ اس بیماری سے متاثر پائے گئے۔ پارلیامنٹ میں منگل کو اسٹینڈنگ کمیٹی کی ایک رپورٹ میں یہ بات کہی گئی ہے۔