پردھان منتری کسان سمان ندھی

Photo: Dominik Hundhammer/CC BY-SA 3.0

پی ایم کسان یوجنا: تقریباً 75 فیصد کسانوں کو تینوں قسط نہیں ملی

پی ایم کسان یوجنا کے تحت کسانوں کو ایک سال میں 2000 روپے کی تین قسطوں کے ذریعے کل 6000 روپے دینے تھے۔ حالانکہ آر ٹی آئی کے تحت حاصل کی گئی جانکاری سے پتہ چلتا ہے کہ تقریباً25 فیصد کسانوں کو ہی اس کا پورا فائدہ مل پایاہے۔

 (علامتی تصویر : پی ٹی آئی)

مرکزی حکومت کو کسان کی تعریف اور کسانوں  کی تعداد کے بارے میں واضح جانکاری نہیں

کسان کی تعداد کاپتہ نہیں ہونے اور اس کی صحیح تعریف نہیں طے کئے جانے کی وجہ سے مودی حکومت کی پی ایم-کسان جیسی اسکیموں پر کافی برا اثر پڑ رہاہے اور لوگوں کو اس کا فائدہ نہیں مل پا رہا ہے۔

(علامتی فوٹو : پی ٹی آئی)

پی ایم کسان: 30 فیصد رقم خرچ نہیں ہو پا ئے‌گی کیونکہ مرکز کو کسانوں کی کل تعداد کا پتہ نہیں

وزارت زراعت نے شروع میں اندازہ لگایاتھا کہ پی ایم کسان یوجنا کے تحت کل 14.5 کروڑ کسان فیملی کو فائدہ مل سکتا ہے۔حالانکہ صحیح اعداد و شمار نہیں ہونے کی وجہ سے یہ تعداد گھٹ‌کر 10 کروڑ تک آنے کا امکان ہے۔

فوٹو: پی ٹی آئی

پی ایم کسان یوجنا کے تحت ہزاروں کسانوں کے اکاؤنٹ میں ڈالے گئے پیسے واپس لئے گئے

آر ٹی آئی کے تحت اسٹیٹ بینک آف انڈیا، بینک آف مہاراشٹر، یوکو بینک، سنڈکیٹ بینک، کینرا بینک جیسے نیشنلائزڈ بینکوں نے قبول کیا ہے کہ کسانوں کے اکاؤنٹ میں ڈالے گئے کروڑوں روپے واپس لے لئے گئے ہیں۔

Don`t copy text!