کسانوں کا احتجاج

 (علامتی فوٹو : رائٹرس)

پردھان منتری فصل بیمہ یوجنا: کمپنیوں نے کسانوں کے2800 کروڑ روپے کا دعویٰ نہیں چکایا

بیمہ کمپنیوں کو اکتوبر 2018 تک 66242 کروڑ روپے کا پریمیم مل چکا ہے۔ ایک طرف کمپنیوں کو وقت پر پریمیم مل رہا ہے، وہیں دوسری طرف کسانوں کے دعوے کی ادائیگی کئی مہینوں سے زیر التوا ہے۔

خراب ہوئی فصل کو دیکھتا کسان (فوٹو : پی ٹی آئی)

مودی حکومت کی فصل بیمہ یوجنا سے کمپنیوں کے پریمیم میں 350 فیصدی کا اضافہ

وائر کی اسپیشل رپورٹ: آر ٹی آئی سے ملی جانکاری کے مطابق پردھان منتری فصل بیمہ یوجنا کے تحت کمپنیوں کو پہلے کی بیمہ اسکیموں کے مقابلے میں36848 کروڑ روپے کا زیادہ پریمیم ملا ہے جبکہ کور کئے گئے کسانوں کی تعداد میں صرف 0.42 فیصد کا اضافہ ہوا ہے۔

پی سائی ناتھ اور نریندر مودی۔  (فوٹو : پی ٹی آئی/فیس بک)

رافیل سے بھی بڑا گھوٹالہ ہے پردھان منتری فصل بیمہ یوجنا: پی  سائی ناتھ

سینئر صحافی اور کسان کارکن سائی ناتھ نے دعویٰ کیا کہ مہاراشٹر کے ایک ضلع‎ میں فصل بیمہ یوجنا کے تحت کل 173 کروڑ روپے ریلائنس انشیورنس کو دئے گئے۔ فصل برباد ہونے پر ریلائنس نے کسانوں کو صرف 30 کروڑ روپے کی ادائیگی کی اور بنا ایک پیسہ لگائے 143 کروڑ روپے کا منافع کما لیا۔

کوٹہ کی بھاماشاہ منڈی میں فروخت کےلیے آئی ارد۔  (فوٹو :اودھیش آکودیا/دی وائر)

راجستھان: ہاڑوتی کے کسان ارد کو اونے پونے دام پر بیچنے کو کیوں مجبور ہیں؟

گراؤنڈ رپورٹ : ارد کی Minimum Support Price(ایم ایس پی)5600 روپے فی کوئنٹل ہے، لیکن سرکاری مراکز پر خرید شروع نہیں ہونے کی وجہ سے کسانوں کو 500 سے 2000 روپے فی کوئنٹل کی قیمت سے اپنی اپج بیچنی پڑ رہی ہے۔

فوٹو :  پی ٹی آئی

کسان آندولن شروع : احتجاج کے طور پر سڑکوں پر پھینکی سبزیاں ،بہایادودھ

کسانوں کے اس آندولن سے روز مرہ کی چیزوں کو لے کر لوگوں کو مشکلوں کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے۔ گزشتہ سال کسان تنظیموں نے مدھیہ پردیش کے مند سور میں اپنی مانگوں کو لے کر آندولن کیا تھا،جس میں ریاستی پولیس کی فائرنگ میں 5 کسانوں کی موت ہو گئی تھی۔

چھیپابڑود کی لہسن منڈی کا سرکاری خرید مرکز (فوٹو : اودھیش آکودیا)

ہمارے کھانے کا ذائقہ بڑھانے والا لہسن کسانوں کی صحت کیوں بگاڑ رہا ہے؟

راجستھان کے ہاڑوتی ڈیویژن کے کسانوں نے گزشتہ سال لہسن کی اچھی قیمت ملنے کی وجہ سے اس بار زیادہ لہسن بویا، لیکن کم قیمت ملنے کی وجہ سے ابتک تین کسان خودکشی کر چکے ہیں جبکہ دو کی موت صدمے سے ہو گئی ہے۔