Centre

19 فروری کے پروگرام  میں رام دیو اور بال کرشن کے ساتھ مرکزی وزیر ڈاکٹر ہرش وردھن اور نتن گڈکری۔ (فوٹوبہ شکریہ: فیس بک/@/AcharyBalkrishna)

کیا کورونا کی دوا کے نام پر رام دیو نے ملک کو پھر گمراہ کیا ہے

کورونا کے علاج کے دعوے کے ساتھ لانچ ہوئی پتنجلی کی‘کورونل’کو وزارت آیوش سے ملے سرٹیفیکیٹ کو ڈبلیو ایچ او کی منظوری اور رام دیو کے ذریعے کورونل کو 150 سے زیادہ ممالک میں فروخت کرنے کی اجازت ملنے کا دعویٰ شک کے دائرے میں ہے۔ ساتھ ہی اس کو لےکر انڈین میڈیکل ایسوسی ایشن نے بھی سوال اٹھائے ہیں۔

بابا رام دیو اور آچاریہ بال کرشنن۔ (فوٹو: رائٹرس)

کبھی نہیں کہا کہ پتنجلی کی کورونل سے کورونا کا علاج ہو سکتا ہے: آچاریہ بال کرشنن

بابا رام دیو نے گزشتہ23 جون کو‘کورونل’نام کی دوا لانچ کرتے ہوئے اس کے کووڈ 19 کے علاج میں صد فیصدکارگر ہونے کا دعویٰ کیا تھا۔ اس کے بعد وزارت آیوش نے دوا کےاشتہار پر روک لگاتے ہوئے کمپنی سے اس کے کلینیکل ٹرائل اور ریسرچ کی تفصیلات فراہم کرنے کو کہا تھا۔

ہری دوار میں کورونل دوا لانچ کرتے یوگ گرو رام دیو اور آچاریہ بال کرشنن(فوٹو:ٹوئٹر/پتنجلی آیوروید)

پتنجلی کورونا کٹ: چنڈی گڑھ میں رام دیو کے خلاف معاملہ درج، جئے پور کے نمس ہاسپٹل کو نوٹس

پتنجلی آیوروید کی کورونا کٹ کو لےکر چنڈی گڑھ کی ایک عدالت میں ملاوٹی دوا بیچنے اور دھوکہ دھڑی کی مختلف دفعات میں معاملہ درج کروایا گیا ہے۔ وہیں راجستھان حکومت نے اس دوا کے ‘کلینیکل ٹرائل’ کو لےکرنیشنل انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز اینڈ ریسرچ سے وضاحت طلب کی ہے۔

2402 Rtu.00_25_29_00.Still005

کورونا وائرس کی دوا بنانے کا پتنجلی کا دعویٰ سوالوں کے گھیرے میں کیوں ہے؟

ویڈیو: بابا رام دیو کی پتنجلی آیوروید نے کووڈ 19 کے علاج میں صدفیصدمؤثر ہونے کا دعویٰ کرتے ہوئے دوا لانچ کی ہے۔حالانکہ وزارت نے ان کے دعووں کی جانچ ہونے تک اس دوا کی تشہیراورفروخت پر روک لگادی ہے۔

ہری دوار میں کورونل دوا لانچ کرتے یوگ گرو رام دیو اور آچاریہ بال کرشنن(فوٹو:ٹوئٹر/پتنجلی آیوروید)

پتنجلی کی ’کورونل‘ نہ سائنسی طور پر تصدیق شدہ ہے، نہ ہی اس کو متعلقہ محکموں سے اجازت ملی ہے

پتنجلی آیوروید کی کورونا کٹ کی صداقت پرسنگین سوالات اٹھ رہے ہیں۔کمپنی نے کورونا کےصد فیصد علاج کادعویٰ کرنے والی اس دوا سے متعلق کچھ دستاویزوزارت آیوش کو سونپے ہیں، لیکن ماہرین کا کہنا ہے کہ یہ ثابت نہیں ہوتا ہے کہ اس سے کووڈ 19 ٹھیک ہو جائےگا۔

(فوٹو بہ شکریہ: فیس بک)

 اے جی آر معاملہ: ایئرٹیل نے ادا کیے 10000 کروڑ روپے، سپریم کورٹ نے ووڈافون کی تجویز ٹھکرائی

اے جی آر معاملے میں سپریم کورٹ نے ووڈافون کے سوموار کو 2500 کروڑ روپے اور جمعہ تک 1000 کروڑ روپے ادا کرنے کے ساتھ ہی اس کے خلاف کوئی کارروائی نہ کئے جانےکی تجویز کو ٹھکرا دیا۔

علامتی تصویر، فوٹو: رائٹرس

ووڈا فون–آئیڈیا، ایئرٹیل کو دوسری سہ ماہی میں کل 74000 کروڑ روپے کا نقصان

ووڈافون- آئیڈیا نے دوسری سہ ماہی میں50921 کروڑ روپے اور ایئرٹیل نے 23045 کروڑ روپے کا نقصان دکھایا ہے۔ پچھلے مہینے سپریم کورٹ کے ایک فیصلے کی وجہ سے کمپنیوں پر ایس یو سی اورریونیو میں سرکار کی حصے داری جیسے مدوں میں دین داری اچانک بڑھ گئی ہے۔

فوٹو: پی ٹی آئی

سپریم کورٹ کا فیصلہ، 6 میں سے 4 معالے ایل جی کے حق میں

سپریم کورٹ نے دہلی حکومت اور ایل جی کے دائرہ اختیارات کو لے کر فیصلہ سنایا ہے، جس میں اینٹی کرپشن بیورو اور جانچ کمیشن کو مرکزی حکومت کے ماتحت رکھا گیا ہے جبکہ الیکٹرسٹی اور ریوینو محکمہ کو دہلی حکومت کے ماتحت رکھا گیا ہے۔

وگیان بھون،فوٹو : وکیپیڈیا

آر ایس ایس لیکچر سیریز کے لیے وگیان بھون دینے پر خصوصی اختیارات کا استعمال کرے گا مرکز

حکومت ہند، ریاستی حکومت ، عوامی شعبہ کی کمپنیوں اور خود مختار اداروں کو ترجیحی بنیاد پر شعبہ جاتی ، قومی یا عالمی کانفرنس ،سیمینار کا انعقاد کرنے کے لیے وگیان بھون دیا جاتا ہے۔

Supreme-court-Reuters

سپریم کورٹ نے موت کی سزا کے طریقے پر حکومت سے مانگا جواب

 لاءکمیشن کی 187ویں رپورٹ کی بنیاد پر  مرکز کو نوٹس جاری کیاگیاہے۔ مرکز کو تین ہفتے کے اندر نوٹس کا جواب دینا ہے۔ نئی دہلی : سپریم کورٹ نے موت کی سزا پانے والے مجرم کو موت واقع ہونے تک پھانسی پر لٹکانے کے قانونی اصول کو چیلنج […]

Don`t copy text!