Finance Minister Nirmala Sitaraman

(فوٹو: رائٹرس)

اثاثہ منیٹائزیشن: آئندہ 30 سالوں میں اس اثاثے سے ہونے والی شہریوں کی آمدنی پر مودی حکومت آج ہی جھپٹا مار رہی ہے

بینک فنڈز تک رسائی والےممکنہ چار یا پانچ کارپوریٹ گروپ ہی ہوائی اڈوں، بندرگاہوں، کوئلہ کانوں، گیس پائپ لائنوں اور بجلی پیداکرنے والےمنصوبوں کی طویل مدتی لیز کے لیے بولی لگائیں گے۔ایسے میں کہنے کے لیے بھلے ہی ملکیت حکومت کے پاس رہے، لیکن یہ عوامی اثاثےکچھ چنندہ کارپوریٹ گروپس کی جھولی میں چلے جائیں گے، جن کی پہلے ہی کسی حد تک اجارہ داری ہے۔

WjY16got

ملک  کے اثاثےکو کیوں بیچ رہی ہے مودی حکومت؟

ویڈیو: وزیرخزانہ نرملا سیتارمن نے چھ لاکھ کروڑ روپے کے قومی منیٹائزیشن پلان کااعلان گزشتہ دنوں کیا ۔اس پلان کے تحت ٹرین، ریلوے اسٹیشن سے لےکر سڑک جیسے الگ الگ بنیادی ڈھانچوں کے سیکٹر کامنیٹائزیشن شامل ہے۔ یعنی سرکارمنیٹائزیشن کے ذریعے ان سیکٹروں میں اپنی حصہ داری نجی سیکٹروں کو فروخت کرےگی۔ اس موضوع پر ماہرمعاشیات ارون کمار سے عارفہ خانم شیروانی کی بات چیت۔

راجیو بجاج(فوٹو بہ شکریہ: ٹوئٹر)

سخت لاک ڈاؤن سے تباہ ہوئی معیشت: صنعت کار راجیو بجاج

کانگریس رہنما راہل گاندھی کے ساتھ بات چیت میں صنعت کار راجیو بجاج نے کہا کہ سخت اور خامیوں سے پُر لاک ڈاؤن یہ یقینی بناتا ہے کہ وائرس ابھی بھی موجود رہے گا۔ یعنی آپ نے وائرس کےمسئلے کو حل نہیں کیا۔ انفیکشن کے گراف کو فلیٹ کرنے کے بجائے جی ڈی پی کے گراف کوفلیٹ کر دیا گیا۔

فوڈ کارپوریشن آف انڈیا کے ایک گودام میں رکھا گیا چاول۔ (فوٹو: پی ٹی آئی)

کورونا وائرس: اپریل ختم ہو نے کو ہے لیکن اب بھی تقریباً 40 فیصدی اضافی راشن نہیں بنٹا

ملک کی 24 ریاستوں کے 529 اضلاع میں کل ملاکر 14.13 کروڑ راشن کارڈ ہیں، جس میں سے اب تک میں 8.49 کروڑ راشن کارڈ پر ہی اناج دیا گیا ہے۔ اس کا مطلب ہے کہ اب بھی 5.64 کروڑ راشن کارڈ پر اضافی راشن ملنا باقی ہے۔

نریندر مودی(فوٹو : پی ٹی آئی)

کورونا: مودی حکومت کے 1.75 لاکھ کروڑ کے راحت پیکیج کا سچ وہی ہے جو دکھایا جا رہا ہے؟

25 مارچ کو اشیائےخوردنی کے مرکزی وزیر رام ولاس پاسوان نے بتایا کہ اشیائےخوردنی تحفظ قانون کے تحت اب پی ڈی ایس ہولڈرز کو 2 کلو اضافی اناج ملے‌گا، جس سے ملک کے 81 کروڑ مستفید اگلے تین مہینے تک مستفیض ہوں‌گے۔ 26 مارچ کے وزیر خزانہ کے اعلان میں مستفید کی تعداد 80 کروڑ ہے۔ ایک کروڑ کا حساب کیا حکومت کے بولنے-لکھنے میں غائب ہو گیا؟

فوٹو: رائٹرس

ملک میں روزگار کی کمی نہیں،شمالی ہند میں اہل لوگوں کی کمی ہے: مرکزی وزیر سنتوش گنگوار

مرکزی وزیر برائے محنت و روزگار سنتوش گنگوار کے اس بیان پر کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی نے کہا کہ شمالی ہندکےباشندوں کو ذمہ دار ٹھہرا کر وزیر روزگار کے سوالوں سے بچنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

نارتھ بلاک (فوٹو بہ شکریہ : وکی میڈیا کامنس)

افسروں سے اجازت لینے کے بعد ہی وزارت خزانہ میں داخل ہو پائیں گے صحافی: مرکزی حکومت

بجٹ پیش ہونے سے کچھ دن پہلے پرائیویسی بنائے رکھنے کے لئے وزارت خزانہ میں صحافیوں کے داخلہ پر پابندی لگا دی جاتی ہے، لیکن بجٹ پیش ہونے کے بعد یہ پابندی ہٹا لی جاتی ہے۔ حالانکہ، اس بار ایسا نہیں کیا گیا۔

Don`t copy text!