Lokpal

لوک پال جسٹس پیناکی چندر گھوش  اور اس کے ممبران(فوٹوبہ شکریہ: پی آئی بی)

لوک پال: ایک سال بعد اصول و ضوابط جاری، پی ایم کے خلاف ملی شکایت پر سماعت کرے‌ گی پوری بنچ

اگر وزیر اعظم کے خلاف شکایت کو خارج کیا جاتا ہے تو اس کی کوئی وجہ نہیں بتائی جائے‌گی۔ وہیں مرکزی وزیر یا قانون سازمجلس کے ممبروں کے خلاف معاملہ ہے تو اس بارے میں لوک پال کے کم سے کم تین ممبروں کی بنچ فیصلہ لے‌گی۔

سی جے آئی رنجن گگوئی ، فوٹو: پی ٹی آئی

جب کسی معاملے میں سیاسی رنگ نہیں ہوتا، تبھی سی بی آئی اچھا کام کیوں کرتی ہے: سی جے آئی گگوئی

نئی دہلی میں ایک پروگرام میں چیف جسٹس رنجن گگوئی نے کہا کہ سی بی آئی کو زیادہ خود مختار بنانے کے لئے کیگ کی طرح درجہ ملنا چاہیے، جس سے وہ انتظامی کنٹرول سے الگ ہو سکیں۔

وزیر اعظم نریندر مودی(رائٹرس)

کیا مودی حکومت نے انتخابی فائدے کے لئے ایک آزاد اور قابل اعتماد لوک پال کی قربانی دے دی

لوک پال کے صدر اور ا س کے ممبروں کی تقرری میں اقتدار میں موجود ممبروں کی تعداد زیادہ تھی اور انتخاب میں پوری طرح سے رازداری برتی گئی۔ ایسا کرنا لوک پال قانون کے اہتماموں کی پوری طرح سے خلاف ورزی ہے۔ انتخابی عمل سے سمجھوتہ کرکے مودی حکومت نے کام کاج شروع کرنے سے پہلے ہی لوک پال ادارہ کو کمزور کر دیا ہے۔

راہل گاندھی: پی ٹی آئی

آر ٹی آئی کے دائرے میں آئیں سیاسی جماعت، عدلیہ، میڈیا اور صنعت کار: راہل گاندھی

کانگریس صدر راہل گاندھی نے الزام لگایا کہ موجودہ حکومت آر ٹی آئی قانون کو ہی تباہ کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ بد عنوانی پر حملے کے کئی طریقے ہیں جن میں لوک پال بھی ہے، لیکن اس کی اجازت ہی نہیں دی جا رہی۔

انا ہزارے، فوٹو: پی ٹی آئی

اگر مودی حکومت اپنے وعدوں کو پورا نہیں کرتی تو میں اپنا پدم بھوشن لوٹا دوں گا: انا ہزارے

لوک پا ل کی تقرری کے مطالبے کو لے کر بھوک ہڑتال پر بیٹھے انا ہزارے کی حمایت میں بی جے پی کی اتحادی پارٹی شیو سینا نے ان سے گزارش کی ہے کہ وہ جئے پرکاش نارائن کی طرح بدعنوانی کے خلاف تحریک کی قیادت کریں۔

انا ہزارے ، فوٹو: پی ٹی آئی

لوک پا ل کی تقرری کے مطالبے کو لے کر انا  ہزارے کی بھوک ہڑتال شروع

انا ہزارے نے کہا کہ ہڑتال تب تک جاری رہے گی جب تک مرکزی حکومت اقتدار میں آنے سے پہلے کیے گئے اپنے وعدوں جیسے – لوک آیکت قانون بنانے ، لوک پال کی تقرری کیے جانے اور کسانوں کے مدعے کو سلجھانے کا کام پورا نہیں کردیتی۔

اتر پردیش کے وزیراعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ (فوٹو : پی ٹی آئی)

یوپی کے وزیراعلیٰ کو لوک آیکت کے دائرے میں لانے کے لیے سپریم کورٹ میں عرضی

عرضی میں کہا گیا ہے کہ اتر پردیش کے لوک آیکت وزیراعلیٰ کے کلاف کارروائی کے لیے اہل نہیں ہیں ۔ اس لیے ان کے خلاف بدعنوانی کے الزامات کی جانچ کے لیے لوک آیکت کے دائرے میں لانے کی ضرورت ہے ۔

anna_modi

مودی کو انا ہزارے کا خط، کہا پھر سے تحریک چلائیں گے

خط میں مسٹر  انا ہزارےنے آگے لکھا ہے کہ ‘ نئی حکومت کو کام کے لئے کچھ وقت دیا جانا چاہئے ایسا سوچ کر میں خاموش رہا ۔کچھ وقت گزر جانے کے بعد لوک پال اور بدعنوانی پر لائے گئے قوانین پر عمل کے سلسلے میں گزشتہ تین […]

Don`t copy text!