Madras High Court

(علامتی تصویر، فوٹو: پی ٹی آئی)

مدراس ہائی کورٹ نے سی اے اے مظاہرین کے خلاف کیس خارج کیا، کہا-احتجاج پرامن تھا

مدراس ہائی کورٹ کی بنچ سی اے اے اور این آرسی کو لےکرمظاہرہ کرنے والےدوافراد کی عرضیوں پرشنوائی کر رہی تھی، جنہوں نے اسے لےکر اپنے خلاف درج ایف آئی آر کو خارج کرنے کی مانگ کی تھی۔

شہریت ترمیم قانون کی مخالفت میں ڈی ایم کے کی طرف سے سوموار کو منعقد ریلی میں پارٹی چیف ایم کے اسٹالن کے ساتھ کانگریس رہنما پی چدمبرم، ایم ڈی ایم کے چیف وائیکو اور دیگر رہنما شامل ہوئے(فوٹو : پی ٹی آئی)

مرکز کی جانب سے شہریت ترمیم قانون کو رد کرنے تک ہمیں رکنا نہیں چاہیے: ایم کے اسٹالن

تمل ناڈو کی راجدھانی چنئی میں شہریت قانون کی مخالفت میں سخت سکیورٹی کے درمیان ڈی ایم کے نے ریلی کا انعقاد کیا۔ پارٹی چیف نے سوال اٹھایا کہ شہریت ترمیم قانون کے تحت مسلمانوں کو پناہ گزین اور سری لنکا کو پڑوسی ملک کا درجہ کیوں نہیں دیا گیا ہے۔

مدراس ہائی کورٹ/فوٹو: پی ٹی آئی

مدراس ہائی کورٹ نے کہا-پرامن مظاہرہ جمہوریت کی بنیاد، اس کو نہیں روکا جا سکتا

شہریت ترمیم قانون کےخلاف تمل ناڈو کی اہم حزب مخالف پارٹی اور اس کے اتحاد میں شامل پارٹیوں کی آج چنئی میں ہو رہی مہاریلی پر روک لگانے کے لئے مدراس ہائی کورٹ میں پی آئی ایل داخل کی گئی تھی۔ حالانکہ، ہائی کورٹ نے ریلی پر روک لگانے سے انکار کر دیا۔ ہائی کورٹ نے پولیس کو ریلی کا ویڈیو بنانے کا حکم دیا ہے۔

چیف جسٹس وجیہ کے تہل رمانی (فوٹو: پی ٹی آئی)

سی جے آئی رنجن گگوئی نے جسٹس تہل رمانی کے خلاف کارروائی کے لئے سی بی آئی کو اجازت دی

سپریم کورٹ کےکالیجئم نے جسٹس وجیہ کے تہل رمانی کا تبادلہ میگھالیہ ہائی کورٹ میں ہونے پر از سر نوغور کرنے سے انکار کر دیا تھا جس کے بعد 6 ستمبر کوانہوں نے استعفیٰ دے دیا تھا۔

فوٹو: دی وائر

سوشل میڈیا کے غلط استعمال نے خطرناک صورت اختیار کر لی ہے، حکومت کو مداخلت کرنی چاہیے: سپریم کورٹ

سوشل میڈیا اکاؤنٹ کو آدھار سے منسلک کرنے کی اپیل پر شنوائی کے دوران سپریم کورٹ نے کہامرکزی حکومت سے کہا کہ ہم صرف یہ کہہ کر نہیں بچ سکتے ہیں کہ آن لائن جرم کہاں سے شروع ہوا اس کا پتہ لگانے کی تکنیک ہمارے پاس نہیں ہے۔

مدراس ہائی کورٹ۔ (فوٹو بہ شکریہ : فیس بک / Chennaiungalkaiyil)

ایسا لگ رہا ہے حکومت خود ذات کی بنیاد پر تقسیم کو بڑھاوا دے رہی ہے: مدراس ہائی کورٹ

تمل ناڈو کے ویلور ضلع‎ میں دلتوں کے ایک شمشان گھاٹ تک جانے والے راستے کو روکے جانے کے معاملے کا ہائی کورٹ نے از خود نوٹس لیا ہے۔ راستہ روکنے سے کمیونٹی کے لوگ اپنے رشتہ داروں کی لاش کو ایک ندی پر واقع پل سے نیچے گرانے کے لئے مجبور ہیں۔

Social-Media-Pixabay

سپریم کورٹ پہنچا سوشل میڈیا پروفائل کو آدھار سے جوڑنے کی مانگ کا معاملہ

سپریم کورٹ فیس بک کی اس عرضی پر سماعت کے لئے راضی ہو گیا ہے جس میں صارفین کے سوشل میڈیا اکاؤنٹ کو آدھار نمبر سے جوڑنے کی مانگ کرنے والے معاملوں کو مدراس، ممبئی اور مدھیہ پردیش کے ہائی کورٹ سے سپریم کورٹ منتقل کرنے کی مانگ کی گئی ہے۔

(فائل فوٹو : پی ٹی آئی)

’والدین کا سوچنا ہے کہ عیسائی تعلیمی اداروں میں مخلوط تعلیم ان کے بچوں کے لیے غیر محفوظ ہے‘

مدراس کرشچین کالج(ایم سی سی)میں بیالوجی کی کم سے کم 34 طالبات نے کالج کے ایک پروفیسر پر جنسی استحصال کا الزام لگایا ہے۔ جسٹس ایس ویدیہ ناتھن نے پروفیسر کو جاری وجہ بتاؤ نوٹس کو خارج کرنے سے انکار کرتے ہوئے یہ تبصرہ کیا۔

راجیو گاندھی قتل معاملے میں مجرم  نلنی (فوٹو : پی ٹی آئی)

راجیو گاندھی قتل معاملہ: عمر قید کی سزا کاٹ رہی نلنی 30 دن کے پیرول پر رہا

اس مہینے کی شروعات میں مدراس ہائی کورٹ نے نلنی کو اس کی بیٹی کی شادی میں شامل ہونے کے لئے 30 دن کے پیرول کی منظوری دی تھی۔ حالانکہ، اس دوران اس کے انٹرویو دینے، سوشل میڈیا پر پوسٹ کرنے اور کسی بھی سیاسی شخصیت سے ملاقات کرنے پر روک رہے‌گی۔

مدراس ہائی کورٹ/فوٹو: پی ٹی آئی

ریپ متاثرہ میڈیکل بورڈ کی منظوری کے بغیر کرا سکتی ہیں اسقاط حمل: مدراس ہائی کورٹ

مدراس ہائی کورٹ نے کہا کہ میڈیکل ٹرمینشن آف پریگننسی قانون، 1971 کی دفعہ 3 کے اہتماموں کے تحت اسقاط حمل کرایا جا سکتا ہے۔ متاثرہ کو بےوجہ عدالت کا دروازہ کھٹکھٹانے کے لئے مجبور نہیں کیا جانا چاہیے۔

(فائل فوٹو : پی ٹی آئی)

جج کو دھمکی بھرا خط : مدراس ہائی کورٹ نے فوراً سماعت سے کیا انکار

عدالت نے 18 ایم ایل اے کو نااہل ٹھہرائے جانے کے تمل ناڈو اسمبلی صدر کے حکم کے خلاف فیصلہ سنانے والے جسٹس ایم سندر کو دھمکی بھرا نامعلوم خط بھیجنے والوں کے خلاف کڑی کارروائی کی مانگ کو لےکر فوراً سماعت کی درخواست کو نامنظور کر دیا۔

perumal-murugan-1

اپنی موت کا اعلان کرنے والے ادیب پیرومل موروگن کی ادبی دنیا میں واپسی

شدت پسندوں کی مخالفت کے بعد اپنی موت کا اعلان کرنے والے تمل ادیب اور شاعر موروگن کا نیا شعری مجموعہ’بزدل کے نغمے’شائع  ہوچکا ہے۔ نئی دہلی :اپنے ناول کے خلاف شدت پسندوں کے شورشرابے اور مخالفت کے بعد 2015میں اپنی موت اور تخلیقی کام سے دستبردار ہونے […]

Don`t copy text!