Maharashtra Police

ادھو ٹھاکرے، فوٹو: پی ٹی آئی

بھیما کورے گاؤں تشدد معاملے میں کارکنوں کے خلاف درج معاملے واپس لیے جائیں گے: ادھو ٹھاکرے

این سی پی کے ایم ایل اے پرکاش گج بھیے نے مہاراشٹر کے وزیر اعلیٰ ادھو ٹھاکرے کو خط لکھ کر بھیما کورےگاؤں معاملے میں کارکنوں کے خلاف درج معاملے واپس لینے کی مانگ کی تھی۔

Gautam-Navlakha_youtube-1200x600

بھیما کورے گاؤں معاملہ: عدالت نے گوتم نولکھا کی ضمانت عرضی خارج کی

پونے کی اسپیشل کورٹ نے کہا کہ پہلی نظر میں نولکھا کے خلاف ایسے ثبوت ہیں جو ثابت کرتے ہیں کہ وہ ممنوعہ تنظیم کے ایک ممبر ہی نہیں بلکہ فعال رہنما ہیں۔ اس لیے ان کی حراست میں پوچھ تاچھ ضروری ہے۔ بھیما کورے گاؤں تشدد معاملے میں گوتم نولکھا کو سپریم کورٹ سے گرفتاری سے تحفظ ملا ہوا تھا۔

Karnataka-rebel-MLAs-1200x600

کرناٹک: ایم ایل اے کی نااہلیت کو سپریم کورٹ نے ٹھہرایا صحیح، لیکن ضمنی انتخاب لڑنے کی دی منظوری

کانگریس-جے ڈی ایس کے 17 ایم ایل اے نے اس وقت کے اسمبلی اسپیکر کے آر رمیش کمار کے ذریعے ان کو نااہل قرار دیے کئے جانے کے خلاف عرضی داخل کی تھی۔ اس عرضی میں انہوں نے اسپیکر کے ذریعے ان کو نااہل ٹھہرائے جانے کو چیلنج کیا تھا۔

Gautam-Navlakha_youtube-1200x600

بھیما کورے گاؤں: سپریم کورٹ نے گوتم نولکھا کی گرفتاری سے تحفظ کی مدت چار ہفتہ بڑھائی

بھیما کورےگاؤں تشدد معاملے میں مہاراشٹر حکومت کے وکیل نے جب ہیومن رائٹس کارکن گوتم نولکھا کو اور عبوری تحفظ دئے جانے کی مخالفت کی تو سپریم کورٹ نے سوال کیا کہ انہوں نے ایک سال سے زیادہ وقت تک ان سے پوچھ تاچھ کیوں نہیں کی۔

فوٹو: دی وائر/ یوٹیوب اور ٹوئٹر

بھیما کورے گاؤں معاملہ: بامبے ہائی کورٹ کا 3 سماجی کارکنوں کو ضمانت دینے سے انکار

سماجی کارکن سدھا بھاردواج ، ارون پھریرا اور ورنن گونجالوس کو جنوری 2018 میں مہاراشٹر کے بھیما کورے گاؤں میں ہوئے تشدد کے بارے میں ماؤوادیوں سے مبینہ لنک ہونے کے الزام میں 28 اگست کو گرفتار کیا گیا تھا۔

Gautam-Navlakha_youtube-1200x600

بھیما کورے گاؤں معاملے میں گوتم نولکھا کی عرضی پر پانچویں جج نے خود کو شنوائی سے الگ کیا

سماجی کارکن گوتم نولکھا نے بھیما کورے گاؤں تشدد معاملے میں خود کے خلاف درج ایف آئی آر ر د کرنے کے لیے عرضی دائر کی ہے۔ سی جے آئی رنجن گگوئی سمیت اب تک کل 4 جج اس معاملے کی شنوائی کرنے سے خود کو الگ کر چکے ہیں۔

Gautam-Navlakha_youtube-1200x600

گوتم نولکھا معاملہ: سی جے آئی گگوئی کے بعد 3 ججوں کی بنچ نے شنوائی سے خود کو الگ کیا

سماجی کارکن گوتم نولکھا نے بھیما کورے گاؤں تشدد معاملے میں خود کے خلاف درج ایف آئی آر ر د کرنے کے لیے عرضی دائر کی ہے۔ عدالت نے کہا کہ نو لکھا کی اپیل اب 3 اکتوبر کو کسی دوسری بنچ کے سامنے لسٹیڈ کی جائے گی۔

ڈی یو پروفیسر ہینی بابو ایم ٹی، فوٹو: Special Arrangement

بھیما کورے گاؤں معاملہ: ڈی یو کے پروفیسر کے گھر پر پو نے پولیس کا چھاپہ

بھیماکورے گاؤں تشدد معاملے میں پونے پولیس نے منگل کو ڈی یو کے ایسوسی ایٹ پروفیسر ہینی بابو کے نوئیڈا واقع گھر پر چھاپے ماری کی ۔ بابو کا کہنا ہے کہ پولیس کے پاس چھاپہ مارنے کا وارنٹ نہیں تھا۔

بامبے  ہائی کورٹ (فوٹو : پی ٹی آئی)

بھیما کورےگاؤں: بامبے  ہائی کورٹ نے گونجالوس سے پوچھا، ’ آپ نے گھر پر ’وار اینڈ پیس‘ کتاب کیوں رکھی تھی؟‘

بامبے ہائی کورٹ نے ایلگار پریشد-بھیما کورےگاؤں معاملے میں ملزم ورنن گونجالوس اور دیگر کی ضمانت عرضی پر سماعت کرتے ہوئے کہا کہ’وار اینڈ پیس ‘جیسی کتابیں ریاست کے خلاف مواد کی طرف اشارہ کرتی ہیں۔’ وار اینڈ پیس ‘روس‌کے شہرہ آفاق ادیب لیو ٹالسٹائی کا ناول ہے۔

فوٹو: پی ٹی آئی

کرناٹک: یدورپا نے حاصل کیا ٹرسٹ ووٹ، اسپیکر نے دیا استعفیٰ

کرناٹک میں گزشتہ 23 جولائی کو ایچ ڈی کمار سوامی کی قیادت والی کانگریس-جے ڈی ایس اتحاد والی حکومت تب گر گئی تھی،جب باغی ایم ایل اے کی وجہ سے وہ ٹرسٹ ووٹ حاصل نہیں کر پائی تھی۔اس کے بعد بی ایس یدورپا نے 26 جولائی کو نئے وزیراعلیٰ کے طور پر حلف لیا تھا۔

کرناٹک اسمبلی میں وزیراعلیٰ ایچ ڈی کمارسوامی (فوٹو : پی ٹی آئی)

کرناٹک: ٹرسٹ ووت آج، اسپیکر نے باغی ایم ایل اے کو سمن جاری کر ملنے بلایا

کرناٹک اسمبلی کے اسپیکر کے آر رمیش کمار نے باغی ایم ایل اے کو سمن جاری کرکے منگل کی صبح 11 بجے اپنے آفس میں طلب کیا ہے۔ یہ سمن ایم ایل اے کی نااہلی کو لےکر اتحاد کے رہنماؤں کی طرف سے دی گئی عرضی کے بعد دیا گیا ہے۔

سدھا بھاردواج ، فوٹو ،دی وائر

ماؤوادیوں سے تعلقات کے الزام میں گرفتار وکیل سدھا بھاردواج کو ملا ہارورڈ سے اعزاز

بھیما کورے گاؤں معاملے میں گرفتاری کے 7 مہینے بعد سدھا بھاردواج کو ہارورڈ لاء اسکول کی ایک پورٹریٹ ایکزبٹ میں جگہ ملی ہے۔کالج کے ذریعے یہ اعزاز دنیا بھر سے قانون کے شعبہ میں کار ہائے نمایاں انجام دینے  والی خواتین کو دیا جاتا ہے۔ نئی دہلی:وکیل […]

خط لکھنے والے یورپ کے رکن پارلیامان (وکی میڈیا کامنس اور ٹوئٹر)

یورپ کے رکن پارلیامان نے حکومت ہند سے کہا، انسانی حقوق کے کارکنوں پر کارروائی بند کریں

20 ممبرآف پارلیامنٹ نے حکومت ہند اور نیشنل ہیومن رائٹس کمیشن کو خط لکھ‌کر انسانی حقوق اور سماجی حقوق کے لیے کام کرنے والوں کے خلاف لگے الزامات ہٹانے اور جیل میں بند لوگوں کو رہا کرنے کی درخواست کی ہے۔

سماجی کارکن آنند تیلتمبڑے (فوٹو بشکریہ : ٹوئٹر)

آنند تیلتمبڑے کی حمایت میں آئے 600 غیر ملکی ماہر تعلیم، کہا-بند کی جائیں سبھی قانونی کارروائی

سماجی کارکن آنند تیلتمبڑے پر بھیما کورےگاؤں تشدد اور ماؤوادیوں سے مبینہ تعلقات کے الزامات کو امریکہ اور یورپ کے ماہر تعلیم نے قانون کا غلط استعمال بتاتے ہوئے کہا کہ یہ جمہوریت پر سنگین حملہ ہے۔

فوٹو: ٹوئٹر

عدالت نے آنند تیلتمبڑے کی گرفتاری کو غیر قانونی کہا، رہا کرنے کا حکم

پونے پولیس نے بھیما – کورے گاؤں تشدد اور ماؤوادیوں سے مبینہ تعلق رکھنے کے الزم میں سپریم کورٹ سے ملے عبوری تحفظ کے باوجود سنیچر کو سماجی کارکن اوراسکالر آنند تیلتمبڑے کو گرفتار کرلیا تھا۔

 آنند تیلتمبڑے (فوٹو بہ شکریہ: فیس بک)

سپریم کورٹ کے ذریعے گرفتاری سے تحفظ کے باوجود آنند تیلتمبڑے گرفتار

بھیما-کورےگاؤں تشدد میں مبینہ کردار اور ماؤوادیوں سے مبینہ تعلقات کے معاملے میں سپریم کورٹ نے گزشتہ14 جنوری کو دلت اسکالر اور سماجی کارکن آنند تیلتمبڑے کی گرفتاری سے عبوری تحفظ کی مدت4 ہفتے اور بڑھا دی تھی۔

فوٹو: فیس بک

دہشت کا سناتن چہرہ

سناتن سنستھا اور ہندو جن جاگرتی سمیتی جیسی’روحانی’ کہی جانے والی تنظیموں سے مبینہ طور پر وابستہ کئی لوگوں کی گرفتاری ان کی انتہاپسند سرگرمیوں کی طرف اشارہ کرتی ہے۔ گزشتہ دنوں سامنے آیا ایک اسٹنگ آپریشن بتاتا ہے کہ اپنی منظم تشدد آمیز سرگرمیوں کے باوجود ان تنظیموں کو ملے سیاسی تحفظ کی وجہ سے ان کے خلاف سخت کارروائی سے ہمیشہ بچا گیا۔

سدھا بھاردواج، فوٹو: دی وائر

بھیما کورے گاؤں تشدد : سماجی کارکن اور وکیل سدھا بھاردواج کو پونے پولیس نے حراست میں لیا

پونے کی ایک عدالت نے گزشتہ جمعہ کو سدھا بھاردواج ، ورنان گونجالوس اور ارن فریرا کی ضمانت عرضی خارج کر دی ، جس کے بعد دیر شام ورنان گونجالوس اور ارن فریرا کو گرفتار کر لیا گیا تھا۔

ماؤوادیوں سے مبینہ تعلقات کو لےکر نظربند کئے گئے شاعر وراورا راؤ، سماجی کارکن اور وکیل ارون فریرا، وکیل سدھا بھاردواج، گوتم نولکھا، ورنن گونجالوس۔ (بائیں سے دائیں)

بھیما کورے گاؤں معاملہ: بامبے ہائی کورٹ کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ پہنچی مہاراشٹر حکومت

بھیما کورے گاؤں تشدد کی جانچ پوری کرنے کی مدت بڑھانے کو لے کر نچلی عدالت کے فیصلے کو بامبے ہائی کورٹ نے رد کر دیا تھا ۔ معاملے میں گرفتار 5 میں سے 4سماجی کارکنوں کو نظر بند رکھا گیا ہے ۔ ایک سماجی کارکن گوتم نولکھا کی نظربندی ختم کردی گئی ہے۔

ماؤوادیوں سے مبینہ تعلقات کو لےکر نظربند کئے گئے شاعر وراورا راؤ، سماجی کارکن اور وکیل ارون فریرا، وکیل سدھا بھاردواج، گوتم نولکھا، ورنن گونجالوس۔ (بائیں سے دائیں)

بھیما کورے گاؤں معاملہ: سپریم کورٹ نے ایس آئی ٹی جانچ کی مانگ خارج کی

بھیما کورے گاؤں میں ہوئے تشدد کے معاملے میں ماؤوادیوں سے مبینہ تعلقات کو لے کر شاعر وراوراراؤ، وکیل سدھا بھاردواج ، سماجی کارکن ارون فریرا ، گوتم نولکھا اور ویرنان گونجالوس گزشتہ 29 اگست سے نظر بند ہیں۔

سپریم کورٹ (فوٹو : پی ٹی آئی)

سماجی کارکنوں کی نظر بندی 19ستمبر تک برقرار،مرکز نے عدالت کی’دخل اندازی‘پر اٹھایا سوال

مرکزی حکومت نے عدالت کی دخل اندازی اور شنوائی کی مخالفت کی ہے ۔مرکزی حکومت کا کہنا ہے کہ نکسل ازم ایک سنگین مسئلہ ہے جو پورے ملک میں پھیل رہا ہے۔اگر اس طرح کی عرضی پر شنوائی ہوگی تو یہ ایک خطرناک مثال بن جائے گی ۔

ماؤوادیوں سے مبینہ تعلقات کو لےکر نظربند کئے گئے شاعر وراورا راؤ، سماجی کارکن اور وکیل ارون فریرا، وکیل سدھا بھاردواج، گوتم نولکھا، ورنن گونجالوس۔ (بائیں سے دائیں)

سماجی کارکنوں کی گرفتاری : یہ غیراعلانیہ ایمرجنسی ہے، جو ایمرجنسی سے زیادہ خطرناک ہے

بھیما کورےگاؤں تشدد اور وزیر اعظم نریندر مودی کے قتل کی مبینہ سازش کے الزام میں سماجی کارکنوں کی گرفتاری کے بعد سے ایلگار پریشد چرچہ میں ہے۔ ایلگار پریشد کے ماؤوادی کنیکشن سمیت تمام دوسرے الزامات پر اس کے کنوینر اور بامبے ہائی کورٹ کے ریٹائرڈ جسٹس بی جی کولسے پاٹل کا نظریہ۔

SudhaBhardwaj_Mahtab

سدھا بھاردواج کی بیٹی کا خط ؛ مما سہی کہتی تھیں کہ’بیٹا میں نے پیسے نہیں کمائے لوگ کمائے ہیں‘

گزشتہ دنوں حقوق انسانی کی وکیل اور ٹریڈ یونین ایکٹیوسٹ سدھا بھاردواج کو پونے پولیس نے ماؤنوازوں سے تعلق رکھنے کے الزام میں ان کے گھر فریدآباد سے گرفتار کیا تھا ۔پڑھیے ان کی بیٹی مائشہ کا خط۔

فوٹو: پی ٹی آئی

ارن دھتی رائے : میں بھی’اربن نکسل‘ہوں!

آج کے ہندوستان میں کسی اقلیتی گروپ میں ہونا ایک گناہ ہے۔ مار دیا جانا ایک جرم ہے۔ پیٹ پیٹ کر مار دیا جانا (لنچ کر دیا جانا) ایک جرم ہے۔ غریب ہونا جرم ہے۔ غریبوں کے حق میں کھڑا ہونے اور اس کی پیروی کرنے کا مطلب حکومت کا تختہ پلٹ کرنے کی سازش کی جارہی ہے۔

Don`t copy text!