model code of conduct

 جسٹس آر ایف نریمن(فوٹو : یوٹیوب)

اپنی حکومت سے کہیں کہ ہمارے فیصلے کھیلنے کے لیے نہیں ہیں: جسٹس آر ایف نریمن

سپریم کورٹ کے جسٹس آر ایف نریمن نے ایک معاملے کی سماعت کرتے ہوئےسالیسٹر جنرل تشار مہتہ سے کہا کہ برائے مہربانی اپنی حکومت کو سبری مالا معاملےمیں سنائے گئے عدم اتفاق کے فیصلے کو پڑھنے کے لئے کہیں، جو بہت ہی اہم ہے…ہمارا فیصلہ کھیلنے کے لئے نہیں ہے۔

سبری مالا مندر (فوٹو بشکریہ : facebook.com/sabrimalaofficial)

سپریم کورٹ نے سبری مالا معاملے میں نظرثانی کی عرضی کو سات ججوں کی بنچ کے پاس بھیجا

سبری مالا مندر معاملے میں فیصلہ سناتے ہوئے سپریم کورٹ کے پانچ ججوں کی آئینی بنچ نے کہا کہ مذہبی مقامات میں خواتین کے داخلے پر پابندی صرف سبری مالا تک ہی محدود نہیں ہے بلکہ دیگر مذاہب میں بھی ایسا ہے۔سبری مالا، مسجدوں میں خواتین کے داخلے اور داؤدی بوہرا کمیونٹی میں خواتین میں ختنہ جیسے مذہبی مدعوں پر فیصلہ بڑی بنچ لے‌گی۔

نریندر مودی اور امت شاہ(فوٹو : پی ٹی آئی)

آرٹیکل 370 جیسے مدعوں کی کاٹ کے لیے گجرات کے ’کھام‘ کو دوہرانا ہوگا

گجرات کا وکاس ماڈل ایک فریب تھا۔ گجرات فسادات کے بعد مسلمانوں کو الگ تھلگ کرنے کا جو تجربہ شروع ہوا، مودی-شاہ اسی کے سہارے مرکز میں اقتدار میں آئے۔ آج یہی گجرات ماڈل سارے ملک میں اپنایا جا رہا ہے۔ 370 کا مدعا اسی تجربے کی اگلی کڑی ہے، جس کو مودی شاہ مہاراشٹر اور ہریانہ انتخاب میں بھنانے جا رہے ہیں۔

فوٹو : پی ٹی آئی

مہاراشٹر اسمبلی الیکشن  سے 3 مہینے پہلے چیف الیکٹورل آفیسر کا تبادلہ

مہاراشٹر کے چیف الیکٹورل آفیسر اشونی کمار نے لوک سبھا الیکشن کے دوران وزیر اعظم نریندر مودی کے خلاف ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کے دو معاملوں پر اپنی رپورٹ سونپی تھی۔ یہ رپورٹ لاتور اور وردھا میں مودی کی تقریر کو لےکر تھی۔

(فوٹو : پی ٹی آئی)

یوپی-بہار میں کئی جگہوں پر ای وی ایم کی مشتبہ آمد ورفت پر اٹھے سوال

اتر پردیش کے غازی پور، چندولی، ڈمریاگنج، مئوکے ساتھ بہار میں بھی کچھ جگہوں پر ای وی ایم کی مشتبہ آمد ورفت کا الزام لگایا گیا ہے۔ الیکشن کمیشن نے ان تمام الزامات کو بے بنیاد بتاتے ہوئے کہا کہ تمام معاملوں کو سلجھا لیا گیا ہے۔

امت شاہ، فوٹو: ٹوئٹر

پلواما حملے کے بعد دہشت گردوں کو تباہ کرنے کے لیے مودی نے بھیجی’اپنی ایئر فورس‘: امت شاہ

سوموار کو مغربی بنگال کی ایک انتخابی ریلی میں بی جے پی صدر امت شاہ کا یہ بیان یوگی آدتیہ ناتھ کے ہندوستانی فوج کو’مودی جی کی سینا‘بتانے کے کچھ ہفتوں بعد آیا ہے ۔ یوگی کے بیان پر الیکشن کمیشن نے ان کو نوٹس دیتے ہوئے مستقبل میں ایسے بیانات سے بچنے کی وارننگ دی تھی ۔

اتر پردیش کے وزیراعلی یوگی آدتیہ ناتھ (فوٹو : پی ٹی آئی)

علی-بجرنگ بلی والے تبصرے پر الیکشن کمیشن نےیوگی آدتیہ ناتھ کو نوٹس جاری کیا

الیکشن کمیشن نے بی ایس پی چیف مایاوتی کو بھی دیوبند میں ایک ریلی کے دوران مسلم رائےدہندگان کو کانگریس کے بجائے ایس پی –بی ایس پی اور راشٹریہ لوک دل اتحاد کو ووٹ دینے کی اپیل کی شکایت پر نوٹس جاری کیا ہے۔

(علامتی تصویر: پی ٹی آئی)

سابق فوجی افسروں نے صدر جمہوریہ کولکھا خط، کہا-سیاسی فائدے کے لئے فوج کا استعمال روکیے

خط لکھنے والوں میں تینوں فوج کے آٹھ سابق چیف سمیت 150 سے زیادہ سابق فوجی افسر شامل ہیں۔ صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند سے اپیل کی گئی ہے کہ وہ یہ یقینی بنائیں کہ فوج کا سیکولر اورغیر سیاسی کردار محفوظ رہے۔

سپریم کورٹ (فوٹو : پی ٹی آئی)

سیاسی پارٹیوں کو آر ٹی آئی کے دائرے میں لانے کے لیے سپریم کورٹ میں عرضی دائر

بی جے پی رہنما اور وکیل اشونی اپادھیائے نے عرضی دائر کرتے ہوئے اس معاملے میں ہدایت دینے کا مطالبہ کیا ہے کہ سبھی رجسٹرڈ اور منظور شدہ پارٹیاں 4 ہفتے کے اندر پبلک انفارمیشن آفیسر ، پبلک اتھارٹی کی تقرری کریں اور آرٹی آئی قانون 2005 کے تحت جانکاریوں کو عام کریں۔

وی کے سنگھ(فوٹو : پی ٹی آئی)

اگر کوئی کہتا ہے کہ ہندوستان کی سینا ’مودی کی سینا‘ ہے تو وہ دیش دروہی  ہے: جنرل وی کے سنگھ

سابق فوجی سربراہ ور بی جے پی ایم پی جنرل وی کے سنگھ کے لئے انتخابی تشہیر کرتے ہوئے اتر پردیش کے وزیراعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ نے ہندوستانی فوج کو ‘مودی جی کی سینا’کہا تھا۔ اس تبصرہ کے لئے ان کو الیکشن کمیشن سے نوٹس بھی مل چکی ہے جس پر ان کو جمعہ تک جواب دینا ہے۔

فوٹو: پی ٹی آئی

ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کے معاملے میں ایئر انڈیا اور وزارت ریل کے  جواب نہیں دینے  پر الیکشن کمیشن ہواناراض

الیکشن کمیشن نے ڈھل مل رویے پر ضابطے کی کارروائی کا فیصلہ کیا ہے۔ اس سلسلے میں وزارت ریل اور آئی آر سی ٹی سی کو نوٹس جاری کرکے 4 اپریل تک جواب دینے کو کہا ہے۔

فوٹو: بہ شکریہ ٹوئٹر

ریلوے پر ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کا الزام، چائے کے کپ پر لکھا ’میں بھی چوکیدار‘

کاٹھ گودام شتابدی ایکسپریس میں سفر کر رہے ایک مسافر کے ذریعے پیپر کپ کی تصویر کے ساتھ کیا گیا ٹوئٹ وائرل ہونے پر ریلوے نے کہا کہ اس نے کپ ہٹا لیے ہیں اور ٹھیکے دار کو سزا دی ہے۔حال ہی میں ریلوے اور ایئر انڈیا نے اپنے ٹکٹ اور بورڈنگ پاس پر نریندر مودی کی تصویر شائع کی تھی۔

علامتی تصویر، فوٹو: پی آئی بی

ٹکٹوں سے مودی کی تصویر نہیں ہٹانے پر ریل اور وزارت شہری ہوابازی کو الیکشن کمیشن کی نوٹس

الیکشن کمیشن نے سخت لہجے میں کہا ہے کہ یہ ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی ہے ۔ خط لکھ کر جواب مانگا ہے کہ کیوں ضابطہ اخلاق نافذ ہونے کے بعد بھی وزیر اعظم مودی کی تصویر ریل ٹکٹوں اور ایئرا نڈیا بورڈنگ پاس سے نہیں ہٹائی گئی۔ […]

فوٹو: رائٹرس

کیاپلواما حملے کےبعد مودی کی اقتدار میں واپسی آسان ہوگئی ہے؟

کانگریس کو حکومت بنانے کی فکر سے زیادہ اپنے وجود کو بچانے کی طرف توجہ دینی چاہئے تھی۔ پرینکا گاندھی کے میدان میں آنے سے پارٹی کو واحد فائدہ یہ ہوگیا ہے کہ زرخرید اور گودی میڈیا اس کی مہم اور جلسوں کو نظر انداز نہیں کر سکے گا ۔

فوٹو: پی ٹی آئی

اگر عدالت حکم جاری کرے تو سوشل میڈیا پر سیاسی اشتہاروں پر روک لگائیں گے: الیکشن کمیشن

الیکشن کمیشن نے بامبے ہائی کورٹ سے کہا کہ سوشل میڈیا پر اشتہاروں کے لیے واضح اصولوں کی ضرورت ہے اور ہم سبھی طریقوں کا استعمال کر کے یہ یقینی بنانے کی کوشش کریں گے کہ ملک میں غیر جانبدارانہ اور آزاد انتخابات ہوں۔

maxresdefault

ہم بھی بھارت: کیا جگنیش میوانی گجرات میں بی جے پی کو چیلنج دے سکتے ہیں؟

ویڈیو: ہم بھی بھارت کے اس ایپی سوڈ میں سنیےگجرات کےاونا کی دلت تحریک سے مشہور ہوئے نوجوان رہنما اور ایم ایل اے جگنیش میوانی سے آئندہ عام انتخابات میں پلواما اور بالاکوٹ کی سیاست اور اپوزیشن کی حکمت عملی پر عارفہ خانم شیروانی کی بات چیت۔

فوٹو: پی ٹی آئی

اپوزیشن کو مودی کے جال سے نہ صرف بچنا ہوگا بلکہ عوام کے مدعوں پر بھی توجہ دینی پڑے گی

بی جے پی نے عام انتخاب میں راشٹر واد اور پاکستان سے خطرے کو مدعا بنادیا ہے۔ وہ چاہتی ہے کہ اپوزیشن ان کے اسی جال میں پھنس جائے۔اپوزیشن کو یہ سمجھنا ہوگا کہ عوام میں روزگار، زرعی بحران، دلت-آدیواسی اور اقلیتوں کے خلاف تشدد میں اضافہ جیسے کئی مدعوں کو لےکر کافی بےچینی ہے اور وہ ان کا حل چاہتے ہیں۔

فوٹو: پی ٹی آئی

الیکشن کمیشن نے فیس بک سے کہا-ونگ کمانڈر ابھینندن کی تصویروالے بی جے پی کےاشتہار کو ہٹائیں

دہلی کے بی جے پی کے ایم ایل اے اوم پرکاش شرما کے فیس بک پر وزیر اعظم نریندر مودی اور ونگ کمانڈر ابھینندن ورتھمان کے ساتھ دو تصویریں پوسٹ کرنے کو ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی مانتے ہوئے الیکشن کمیشن نے ان کو وجہ بتاؤ نوٹس جاری کیا ہے۔

Episode 36

ویڈیو : کیا کیرانہ ضمنی انتخاب میں کوڈ آف کنڈکٹ کی خلاف ورزی ہوئی ہے؟

ویڈیو: ہم بھی بھارت کے اس ایپی سوڈ میں سنیے کیرانہ ضمنی انتخاب کے دوران گرمی سے ای وی ایم خراب ہونے کی شکایتوں اور عین ووٹنگ سے پہلے نریندر مودی کے روڈ شو کو لے کر سابق چیف الیکشن کمشنر ایس وائی قریشی اور راجستھان پتریکا کے کنسلٹنگ ایڈیٹر اوم تھانوی کے ساتھ عارفہ خانم شیروانی کی بات چیت۔

Don`t copy text!