Rajasthan

فوٹو : رائٹرس

رام چندر گہا کا کالم: ’کانگریس کو ووٹ دینا ایک ہزار گایوں کی ہتیا کرنے جیسا…‘

کئی صوبوں میں کانگریس پارٹی گروہ بندی میں پھنسی ہوئی ہے، جہاں لیڈران انفرادی طور پر اپنا اثر و رسوخ جمائے بیٹھے ہیں۔ وہ پارٹی کے بجائے اپنے مفادات حاصل کرنے میں لگے رہتے ہیں۔ وہیں دائیں بازو کی پارٹیاں آج بھی کانگریس اور اس کے لیڈران کے خلاف جھوٹا پروپیگنڈا کرنے میں لگی ہیں۔

فوٹو: رائٹرس

راجستھان: رام نومی جلوس کے دوران فرقہ وارانہ  تشدد، 2 پولیس اہلکار زخمی

جودھپور میں ایک کمیونٹی کے لوگوں کے ذریعے سنیچر کو رام نومی کے جلوس پر پتھراؤ کے بعد فرقہ وارانہ تشدد شروع ہو گیا۔کچھ گاڑیوں میں آگ لگا دی گئی اور بھیڑ نے پولیس اور کچھ گھروں پر پتھراؤ بھی کیا۔

(فائل فوٹو : رائٹرس)

ملک میں سوائن فلو سے مرنے والوں کی تعداد 377 ہوئی، 12ہزار سے زیادہ لوگ متاثر: حکومت

راجستھان میں سوائن فلو کے سب سے زیادہ 3508 معاملے سامنے آئے،جس میں سے 127 لوگوں کی موت ہو گئی۔ اس معاملے میں گجرات دوسرے نمبر پر ہے،جہاں اس وائرس سے 1983 لوگ متاثر ہوئےجن میں سے 71 لوگوں کی موت ہو گئی۔

فوٹو بہ شکریہ : indiarailinfo.com

راجستھان: پاکستانی شہریوں کو 48 گھنٹے کے اندر بیکانیر چھوڑنے کا حکم

بیکانیر سرحد میں کسی بھی دھرم شالہ، ہوٹل اور اسپتال وغیرہ میں پاکستانی شہریوں کے رہنے-ٹھہرنے پر بھی پابندی۔ کلکٹر نے کہا ہے کہ پلواما دہشت گردانہ حملے سے عوام میں پاکستان کے خلاف شدید غصہ کی وجہ سے کرفیو نافذ کیا گیا۔

علامتی تصویر فوٹو: رائٹرس

اتر پردیش: اشرافیہ  نے نہیں نکلنے دی دلت کی بارات

متھرا کے نوہ جھیل تھانہ حلقہ کا معاملہ۔ دلہن کے رشتہ داروں کا الزام ہے کہ اتوار کو والمیکی کمیونٹی کی ایک لڑکی کی شادی تھی، جہاں بارات کو آنے سے روکا گیا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ براہمنوں کے ذریعے معافی مانگنے کے بعد دونوں فریقوں کے بیچ سمجھوتہ ہو گیا ہے۔

(فائل فوٹو : رائٹرس)

دہلی میں سوائن فلو کے 1000 سے زیادہ معاملے، 1 کی موت: رپورٹ

دہلی میں سوائن فلو سے کم سے کم 14 لوگوں کی موت ہوئی ہیں، جن میں صفدرجنگ اسپتال میں 3، رام منوہر لوہیا اسپتال میں 10 اور ایمس میں 1 موت ہوئی ہے۔ حالانکہ، دہلی کے یہ اعداد و شمار مرکزی وزارت صحت کے ڈیٹا میں ظاہر نہیں کئے گئے ہیں۔

علامتی فوٹو: رائٹرس

دہلی این سی آر سمیت ملک بھر میں سوائن فلو کا قہر جاری

این سی ڈی سی کے ڈیٹا کے مطابق ، اب تک ملک بھر میں 4571 سوائن فلو کے متاثرین پائے گئے ہیں ۔صرف راجستھان میں سب سے زیادہ 40 فیصدی معاملے درج کیے گئے ہیں ۔ راجستھان میں ہی سب سے زیادہ 72 لوگوں کی موت ہوئی ہے ،اس کے بعد پنجاب میں 26، گجرات میں 20 ،مہاراشٹر میں 12 اور دہلی میں 8 لوگوں کی موت ہوئی ہے۔

فوٹو: فیس بک

راجستھان کےسابق وزیر داخلہ نے کہا؛اگر حالات نہیں بدلے تو راجستھان کے ہر شہر میں پاکستا ن ہوگا

بی جے پی ایم ایل اے اور راجستھان کے سابق ریاستی وزیر داخلہ گلاب چند کٹاریہ نے اجلاس میں کہا ، وہ ہر شہر میں پاکستان چاہتے ہیں ۔ آپ کے بھگوان مندر میں رو رہے ہیں ۔ ان کی پوجا کرنے کے لیے کوئی نہیں ہے۔

علامتی تصویر (فوٹو : رائٹرس)

راجستھان : بیگن کی فصل برباد ہونے پر کسان نے کی خودکشی

راجسمند ضلع کے کانکرولی پیپلی آچاریان گاؤں میں ایک کسان لیہرولال کیر نے مبینہ طور پر فصل برباد ہونے پر خودکشی کر لی۔ اہل خانہ نے بتایا کہ بینک سے قرض نہ ملنے پر مجبوراً ساہوکار سے قرض لینا پڑا تھا، اس لئے حکومت کی قرض معافی سے ہمیں کوئی فائدہ نہیں۔

بینگلورو میں ایچ ڈی کمارسوامی کی حلف برداری کے دوران اسٹیج پر متحدہ ہوئے اپوزیشن کے رہنما (فائل فوٹو : پی ٹی آئی)

آئندہ لوک سبھا انتخابات میں کانگریس کی حکمت عملی کیا ہونی چاہیے؟

اتر پردیش میں کسی بھی پارٹی کے ساتھ اتحاد میں نہ رہنا کانگریس کے لیے بھی سودمند رہے گا۔ اس سے اسے راجستھان، مدھیہ پردیش و چھتیس گڑھ میں ایس پی، بی ایس پی کے امیدواروں کا تصفیہ کرنے میں آسانی ہوگی، جہاں پارٹی کو بی جے پی سے سیدھے مقابلے میں زیادہ فائدہ ہونے کی امید ہے۔

RahulGandhi_CongressTwitter

اسمبلی انتخابات 2018: کیا کانگریس کے’اچھے دن‘ آگئے ہیں؟

ان نتائج سے یہ بھی معلوم ہوتا ہے کہ اگر ان تین ریاستوں میں اپوزیشن متحد ہو کر لڑتی تو بی جے پی کو اس ے زیادہ بڑی ہار کا سامنا کرنا پڑسکتا تھا۔خصوصاً مدھیہ پردیش میں جہاں شیوراج سنگھ چوہان کوبے دخل کرنے میں کانگریس کو مشقت کرنی پڑی ۔

MuslimsRajasthan_DeccanHerald

اسمبلی انتخابات 2018: مسلم ایم ایل اے کی تعداد 11 سے بڑھ کر 19ہوئی

گزشتہ 25 سالوں میں پہلی بار ہوگا کہ راجستھان اسمبلی میں بی جے پی کا کوئی مسلم ایم ایل اے نہیں ہے۔ وسندھرا راجے حکومت میں وزیر یونس خان جن کو ٹونک سے ٹکٹ دیا گیا وہ بھی کانگریس کے سچن پائلٹ سے ہار گئے ہیں۔

فوٹو: پی ٹی آئی

مدھیہ پردیش: مایاوتی کی حمایت، کانگریس کے لیے حکومت بنانے کا راستہ صاف

بی جے پی سے موجودہ وزیر اعلیٰ شیو راج سنگھ چوہان نے استعفیٰ دیا ۔ 230 سیٹوں والی ودھان سبھا میں کسی بھی پارٹی کے پاس حکومت بنانے کے لیے 116 سیٹیں ہونا ضروری ہیں ۔ کسی بھی پارٹی کے پاس مکمل اکثریت نہیں ہے ۔ ایس پی اور بی ایس پی نے کانگریس کی حمایت کی ۔

assembly-election-results-2018

اسمبلی انتخابات نتائج (لائیو): رجحانوں کے مطابق میزورم میں ایم این ایف کو اکثریت

میزورم میں رجحانوں کے مطابق ایم این ایف کو اکثریت مل گئی ہے ۔ یہاں 40 میں سے 24 سیٹوں پر ایم این ایف ،کانگریس 10 اور بی جے پی 1 اور دیگر 5 پر آگے چل رہی ہے۔ نئی دہلی: 5 ریاستوں میں ہوئے اسمبلی انتخابات میں  ووٹوں کی گنتی شروع […]

علامتی فوٹو : رائٹرس

راجستھان : ای وی ایم کے تحفظ  کو لےکر بھرت پور میں تنازعہ کے بعد ایس پی کو چھٹی پر بھیجا گیا

بھرت پور ضلع کے ڈیگ کمہیر سے کانگریس امیدوار وشویندر سنگھ نے ای وی ایم سے چھیڑچھاڑ اور اس کے تحفظ کو لےکر لاپرواہی برتے جانے کا الزام لگایا تھا۔سنیچر کی شب  کانگریس کے کارکنوں اور پولیس کے درمیان ای وی ایم کو لےکر تنازعہ ہوا تھا۔ ای […]

  (فوٹو : پی ٹی آئی)

کیوں پوری طاقت جھونکنے کے باوجود راجستھان میں بی جے پی پولرائزیشن کرنے میں ناکام رہی

بی جے پی کے اسٹارپرچارک اور مقامی رہنما راجستھان کے انتخابی میدان میں ہندو رائےدہندگان کی صف بندی کرنے کی بھرپور کوشش کر رہے ہیں، لیکن ایک آدھ سیٹ کو چھوڑ‌کر اس کا اثر ہوتا ہوا نظر نہیں آ رہا۔

فوٹو بشکریہ،فلپ کارٹ اسٹوریز

کیوں راجستھان کے پوکھرن کا انتخابی ماحول فرقہ وارانہ ہوتا جا رہا ہے

گراؤنڈ رپورٹ : بی جے پی نے باڑمیر ضلع‎ میں پڑنے والے ناتھ فرقے کے تارترا مٹھ کے مہنت پرتاپ پوری مہاراج کو پوکھرن سے ٹکٹ دیا ہے تو کانگریس نے علاقے کے مشہور سندھی-مسلم مذہبی رہنما غازی فقیر کے بیٹے صالح محمد کو میدان میں اتارا ہے۔

ایک انتخابی ریلی کے دوران وزیراعلیٰ وسندھرا راجے (فوٹو : پی ٹی آئی)

راجستھان : وسندھرا راجے سے راجپوتوں کی ناراضگی کا خمیازہ بی جے پی کو بھگتنا پڑ سکتا ہے

وسندھرا راجے کی وجہ سے راجپوت راجستھان انتخابات میں بی جے پی کا انتخابی کھیل اسی طرح بگاڑ سکتے ہیں، جیسے 2013 میں جاٹوں کے اشوک گہلوت کے خلاف ناراضگی نے کانگریس کو نقصان پہنچایا تھا۔

راجستھان کانگریس صدر سچن پائلٹ/ (فوٹو : پی ٹی آئی)

کیا وزیراعلیٰ بننے کا خواب دیکھ رہے سچن پائلٹ اپنے ہی چکرویو میں پھنس گئے ہیں؟

خاص رپورٹ: راجستھان میں کانگریس کی کمان سنبھال رہے سچن پائلٹ نہ تو خود اسمبلی کا انتخاب لڑنا چاہتے تھے اور نہ ہی اشوک گہلوت کو انتخابی میدان میں امیدوار کی حیثیت سے اترتا ہوا دیکھنا چاہتے تھے، لیکن ان کے اس منصوبے  پر ایک جھٹکے میں پانی […]

بی جے پی صدر امت شاہ اور راجستھان کی وزیراعلیٰ وسندھرا راجے۔  (فوٹو : پی ٹی آئی)

راجستھان : کیا وسندھرا راجے اور امت شاہ میں ایک بار پھر ٹھن گئی ہے؟

امت شاہ آدھے سے زیادہ ایم ایل اے کا ٹکٹ کاٹنا چاہتے ہیں جبکہ وسندھرا راجے 80 فیصد سے زیادہ ایم ایل اے کو پھر سے ٹکٹ دینے کے حق میں ہیں۔ اس رسّہ کشی میں شاہ کے ساتھ پوری ٹیم ہے جبکہ راجے اکیلی جدّو جہد کر رہی ہیں۔

جئے پور میں تیسرے مورچے کا اعلان کرتے ہوئے  ہنومان بینی وال، گھنشیام  تیواری، جینت چودھری اور دیگر رہنما۔  (فوٹو : اودھیش  آکودیا/دی وائر)

راجستھان میں تیسرا مورچہ اس بار بھی سرخیوں سے آگے بڑھتا ہوا دکھائی کیوں نہیں دے رہا

گراؤنڈ رپورٹ : صوبے میں کانگریس اور بی جے پی کو ٹکر دینے کے لئے ہنومان بینی وال کی راشٹریہ لوک تانترک پارٹی نے گھنشیام تیواری،ایس پی اور آر ایل ڈی کے ساتھ انتخابی میدان میں اترنے کا اعلان کیا ہے۔ یہ اتحاد سرخیاں تو خوب بٹور رہا ہے، لیکن اس کی کامیابی پر شک برقرار ہے۔

اپنےبیٹے دشینت سنگھ(ایم پی) اور ان کی بیوی نہاریکا کے ساتھ وزیراعلیٰ وسندھرا حکومت‌راجے۔  (فوٹو بشکریہ: فیس بک)

راجستھان : وزیراعلیٰ وسندھرا راجے اپبا انتخابی حلقہ کیوں بدل رہی ہیں؟

راجستھان کی وزیراعلیٰ وسندھرا راجے کا راجاکھیڑا سے انتخاب لڑنے بات پہلے سے کی جارہی تھی۔ بی جے پی کی طرف سے کی گئی رائےشماری میں بھی اس سیٹ سے دعوے دار میں ان کا نام سامنے آیا، لیکن وسندھرا نے قیاس آرائیوں کو دور کرتے ہوئے اپنی روایتی سیٹ جھالراپاٹن سے انتخاب لڑنے کا اعلان کیا ہے۔

 (علامتی فوٹو : رائٹرس)

جئے پور میں زیکا وائرس کا قہر نہ روک پانے میں سرکاری بد انتظامی کا بڑا رول

ڈیپارٹمنٹ آف میڈیکل، ہیلتھ اینڈ فیملی ویلفیئر جئے پور میں زیکا وائرس پر کنٹرول کا دعویٰ کر رہا ہے، لیکن سرکاری اعداد و شمار کے مطابق اس کی چپیٹ میں آنے والے لوگوں کی تعداد 130 سے زیادہ ہو چکی ہے۔