Twitter

فلمساز اویناش داس۔ (فوٹو بہ شکریہ: سوشل میڈیا)

گرفتار آئی اے ایس افسر کے ساتھ امت شاہ کی تصویر شیئر کرنے پر فلمساز کے خلاف مقدمہ درج

گجرات پولیس نے منی لانڈرنگ کیس میں حال ہی میں گرفتار جھارکھنڈ کی مائننگ (کان کنی)سکریٹری پوجا سنگھل کے ساتھ مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ کی تصویر شیئر کرنے کے معاملے میں فلمساز اویناش داس کے خلاف مقدمہ درج کیا ہے۔ اس کے علاوہ ان کے خلاف 17 مارچ کو فیس بک پر ایک مورف شدہ تصویر شیئر کرکے قومی پرچم کی توہین کرنے کا مقدمہ بھی درج کیا گیا ہے، جس میں ایک خاتون ترنگا پہنے نظر آرہی ہیں۔

متنازعہ کمرے کے قریب پولیس اہلکار۔ (تمام تصویریں: رابعہ شیریں)

کرناٹک: ہندوتوا تنظیم جن جاگرتی سمیتی  نے اسٹیشن پر بنے نماز ہال کو ’قومی سلامتی کے لیے خطرہ‘ قرار دیا

بنگلورو واقع کے ایس آر ریلوے اسٹیشن پر قلیوں کےریسٹ روم میں طویل عرصے سےمسلمان کارکن نماز پڑھ رہے تھے۔ اب ہندو جن جاگرتی سمیتی نے اس پر اعتراض کرتے ہوئے اس کو ‘سازش کا حصہ’ قرار دیا ہے۔

cover-image@2x (1)

ٹیک فاگ ایپ کے سلسلے میں پارلیامانی کمیٹی نے وزارت داخلہ سے جواب طلب کیا

دی وائر نے ایک تفتیش میں خفیہ ایپ ٹیک فاگ کا انکشاف کیاہے، جس کےاستعمال سےسوشل میڈیاٹرینڈ میں ہیر پھیر اور وہاٹس ایپ فشنگ کیے جانے کی بات سامنے آئی ہے۔ داخلہ امور کی پارلیامانی کمیٹی کے چیئرمین آنند شرما نے وزارت داخلہ سےاس سلسلے میں متعلقہ وزارتوں کے ساتھ تال میل قائم کرکے 20 جنوری تک کمیٹی کے سامنے جواب پیش کرنے کو کہا ہے۔

(علامتی تصویر: رائٹرس)

رویش کمار کا بلاگ: ٹیک فاگ پروپیگنڈہ محض نہیں، قتل عام کو اکسانے کا ٹول ہے

آئی ٹی سیل کی پراسرار دنیا میں نیشن بلڈنگ کے نام پر کتنے نوجوانوں کو مجرم بنایا جا رہا ہے اس سےچوکنا رہنے کی ضرورت ہے۔ ٹیک فاگ سرکار کا ٹول کٹ- بی جے پی کا، بی جے پی کے ذریعہ بی جے پی کے کام آنے والا ٹول کٹ ہے۔اس سے اکثریتی معاشرہ نے خود کو نہ بچایا تو گھر گھر میں ہتھیارےپیدا ہو جائیں گے۔

ترنمول کانگریس کے ایم پی ڈیرک اوبرائن۔ (فوٹو: پی ٹی آئی)

ٹیک-فاگ ایپ قومی سلامتی کو خطرے میں ڈال سکتا ہے: ڈیرک اوبرائن

دی وائر نے دو سالوں کی تفتیش کے بعدذرائع کی مدد سےایک خفیہ ایپ ٹیک-فاگ کا انکشاف کیا،جس کا استعمال مقتدرہ جماعت سے وابستہ افراد مصنوعی طور پر پارٹی کی مقبولیت کوبڑھانے، اس کے ناقدین کو ہراساں کرنے اور بڑے سوشل میڈیا پلیٹ فارموں پر بڑے پیمانے پرعوامی رائے کو گمراہ کرنے کے لیے کرتے ہیں۔

cover-image@2x (1)

ٹیک-فاگ: بی جے پی کا مددگار ایپ، جس نے سائبر آرمی کو نفرت پھیلانے اور ٹرینڈس سے چھیڑ چھاڑ کرنے کی طاقت دی ہے

دی وائر نے ان دعووں کی تفتیش کی ہے، جن میں کہاگیاہے کہ آن لائن کارکنوں کےذریعے اِنکرپٹیڈمیسجنگ پلیٹ فارموں کو ہائی جیک کرنے اور گھریلو صارفین کے بیچ رائٹ ونگ پروپیگنڈے کوفروغ دینے کے لیے ایک انتہائی نفیس ایپ ٹیک- فاگ کا استعمال کیا جا رہا ہے ۔

(فوٹو: رائٹرس)

پوری دنیا میں انفارمیشن سے متعلق سب سے زیادہ سرکاری درخواستیں ہندوستان سے موصول ہوئیں: ٹوئٹر

ٹوئٹر کی دوسالہ شفایت کی رپورٹ میں کہا گیا کہ سال 2020 کی دوسری ششماہی کے دوران سرکاری اطلاعات یا انفارمیشن کے لیے ہندوستان سے جو درخواستیں موصول ہوئیں، وہ عالمی سطح پر25 فیصدی ہیں۔

1502 AKI.00_33_35_01.Still004

ملک میں ’تاناشاہ‘، بیرون ملک جمہوریت کا مسیحا؛ اصلی مودی کون؟

ویڈیو: جی7چوٹی کانفرنس کےدوران ہندوستان کےوزیراعظم نریندر مودی نے جمہوری اور آئینی قدروں کی بات کی، لیکن ملک کے اندر صورتحال کچھ اور ہی ہے۔ اس موضوع پر دی وائر کی سینئر ایڈیٹر عارفہ خانم شیروانی کا نظریہ۔

3105 GONDI.00_13_16_06.Still016

مودی سرکار کو کارٹونسٹوں سے ڈر کیوں لگتا ہے؟

ویڈیو: حال ہی میں ٹوئٹر نے معروف کارٹونسٹ منجل کو ایک ای میل بھیج کر کہا تھا کہ ان کے اکاؤنٹ کے خلاف حکومت ہند سے شکایت ملی ہے۔ حکومت کا ماننا ہے کہ ان کے ٹوئٹر اکاؤنٹ کا موادہندوستانی قوانین کی خلاف ورزی کرتا ہے۔ ٹوئٹر نے منجل کو مشورہ دیا کہ وہ قانونی صلاح لے سکتے ہیں اور کورٹ میں سرکار کے اپیل کو چیلنج دے سکتے ہیں۔

کارٹونسٹ منجل (فوٹوبہ شکریہ ٹوئٹر)

کارٹونسٹ منجل کو ٹوئٹر کا نوٹس،کہا-حکومت ٹوئٹر ہینڈل کے خلاف چاہتی ہے کارروائی

ٹوئٹر انڈیا نے کارٹونسٹ منجل کو ای میل بھیج کر کہا ہے کہ انڈین لاء انفورسمنٹ نے شکایت کی ہے کہ ان کے ٹوئٹر ہینڈل کا مواد ہندوستانی قانون کی خلاف ورزی کرتا ہے۔ حالانکہ ٹوئٹر نے کہا کہ انہوں نے مواد کو لےکر کوئی کارروائی شروع نہیں کی ہے۔

(فوٹو بہ شکریہ: فیس بک)

ٹوئٹر نے تشدد کے لیے اکسانے والے ٹوئٹ پر کنگنا رناوت کا ٹوئٹر اکاؤنٹ مستقل طور پر بند کیا

کنگنا رناوت مبینہ طور پر اشتعال انگیز ٹوئٹ کے لیے جانی جاتی رہی ہیں۔ انہوں نے مغربی بنگال میں بی جی پی پر ممتا بنرجی کی ترنمول کانگریس کی جیت اور انتخاب کےبعدتشدد کو لےکرصوبے میں صدر راج کی مانگ کرتے ہوئےتشددکے لیے بنرجی کو قصوروار ٹھہرایا تھا اور انہیں ایسے ناموں سےمخاطب کیا تھا، جن کو شائع نہیں جا سکتا ہے۔

(فوٹو:  رائٹرس)

صحافیوں، کارکنوں، رہنماؤں کے خلاف کارروائی اظہار رائے کی آزادی کی خلاف ورزی: ٹوئٹر

ٹوئٹر انڈیا نے کہا کہ حکومت ہندکی ہدایت کےمطابق کچھ کارروائی کی ہے لیکن وہ میڈیا اداروں ، صحافیوں،کارکنوں اور رہنماؤں سے متعلق اکاؤنٹ کو بلاک نہیں کرےگا۔ مائیکروبلاگنگ پلیٹ فارم نے یہ بھی کہا کہ وہ اپنے اور متاثر ہوئے اکاؤنٹ دونوں کے لیے ہندوستانی قانون کے تحت متبادل تلاش کر رہا ہے۔

WhatsApp Image 2021-02-01 at 09.56.11

گولی یا حادثہ: کیا ہے نوریت سنگھ کے موت کی سچائی؟

ویڈیو: 26 جنوری کوزرعی قوانین کی مخالفت میں نکالے گئے کسانوں کے ٹریکٹر پریڈ کے دوران راجدھانی دہلی میں تشددہو گیا تھا۔ اس دوران اتر پردیش کے رام پور ضلع کے 25سالہ نوریت سنگھ کی موت ہو گئی تھی۔ معاملے کے عینی شاہدین کا دعویٰ ہے کہ ان کی موت گولی لگنے سے ہوئی، وہیں پولیس کا دعویٰ ہے کہ ان کی موت ٹریکٹر پلٹنے کی وجہ سے ہوئی۔

ٹوئٹر کی جانب سے روک لگائے گئے اکاؤنٹ کے اسکرین شاٹ۔ (فوٹو: @zoo_bear)

ٹوئٹر اکاؤنٹ بلاک معاملہ: سرکار نے ٹوئٹر کو حکم کی تعمیل یا نتائج بھگتنے کی وارننگ دی

گزشتہ سوموار کو مرکزی حکومت کی درخواست پر ٹوئٹر نے کئی اکاؤنٹس پر روک لگا دی تھی۔ حالانکہ اسی دن دیر رات تک یہ روک ہٹا دی گئی۔ اب سرکار کا کہنا ہے کہ ٹوئٹر ہیش ٹیگ مودی پلاننگ فارمر جینوسائیڈ لکھنے والے اکاؤنٹ ہٹانے سے متعلق اس کے آرڈر مانے یا پھر اس کا نتیجہ بھگتنے کو تیار رہے۔

(فوٹو: پی ٹی آئی)

زرعی قانون: مظاہرین نے چھ فروری کو تین گھنٹے کے ملک گیر ’چکہ جام‘ کا اعلان کیا

کسان رہنماؤں نے کہا کہ وہ احتجاج کی جگہوں کےقریبی علاقوں میں انٹرنیٹ خدمات معطل کرنے،حکام کی جانب سے مبینہ طور پر ہراساں کیے جانے اور دیگر مدعوں کے خلاف تین گھنٹے تک قومی اور ریاستی شاہراہوں کو جام کرکے اپنی مخالفت درج کرائیں گے۔

ٹوئٹر کی جانب سے روک لگائے گئے اکاؤنٹ کے اسکرین شاٹ۔ (فوٹو: @zoo_bear)

وزارت داخلہ کی ’درخواست‘ پر ٹوئٹر نے کسانوں کی تحریک کے بارے میں ٹوئٹ کر نے والے کئی اکاؤنٹس پر روک لگائی

ٹوئٹر نے جن اکاؤنٹ پر روک لگائی ہے ان میں کارواں میگزین، کسان ایکتا مورچہ، سی پی آئی ایم کے محمد سلیم، کارکن ہنس راج مینا، ایکٹر سشانت سنگھ، پرسار بھارتی کے سی ای او سمیت کئی صحافی اور قلمکار بھی شامل ہیں۔

(علامتی تصویر،فوٹو: رائٹرس)

وزیر اعظم  کے بارے میں توہین آمیز تبصرہ کر نے والے پائلٹ کو گو ایر نے برخاست کیا

پائلٹ نے گزشتہ سات جنوری کو وزیر اعظم کے بارے میں توہین آمیز ٹوئٹ کیا تھا۔ اس کے بعد انہوں نے اسی دن اس ٹوئٹ کو ہٹاکر معافی مانگتے ہوئے ایک دوسرا ٹوئٹ کیا اور اپنا اکاؤنٹ لاک کر دیا ہے۔

Amit-Malviya-tweet

ہندوستان میں پہلی بار ٹوئٹر نے بی جے پی آئی ٹی سیل کے ٹوئٹ کو ’مینیپولیٹیڈ میڈیا‘ قرار دیا

بی جے پی آئی ٹی سیل چیف امت مالویہ کے ذریعےکسانوں کے احتجاج کی ایڈیٹیڈ کلپ ٹوئٹ کیے جانے کے ایک دن بعد ٹوئٹر نے اسے ‘مینیپولیٹیڈ میڈیا’ کے طور پر نشان زد کیا ہے،جس کا مطلب ہے کہ اس ٹوئٹ میں شیئر کی گئی جانکاری سے چھیڑ چھاڑ کی گئی ہے۔

(علامتی تصویر، فوٹو: رائٹرس)

کیرل میں ’توہین آمیز‘ سوشل میڈیا پوسٹ پر ہو سکتی ہے تین سال کی سزا

گورنر عارف محمد خان نے کیرل پولیس ایکٹ میں نئی دفعہ118(اے)جوڑ نے کے اہتمام کو منظوری دے دی ہے، جس کے تحت توہین آمیز سوشل میڈیا پوسٹ پر تین سال کی قیدیا10000روپے کا جرمانہ یا دونوں کی سزا ہو سکتی ہے۔

وزیر اعظم نریندر مودی(فوٹوبہ شکریہ: پی آئی بی)

وزیر اعظم مودی کے یوم پیدائش پر سوشل میڈیا پر ٹرینڈ ہوا ’راشٹریہ بے روزگار دوس‘

وزیر اعظم نریندر مودی کے 70ویں یوم پیدائش کے موقع پر ٹوئٹر پر دن بھر کئی ایسے ہیش ٹیگ ٹرینڈ کرتے رہے، جن کے ذریعہ ٹوئٹر صارفین نے ملک میں بڑھتی بےروزگاری اور شدید معاشی بحران کی طرف اشارہ کرتے ہوئے وزیر اعظم سے جواب طلب کیا۔

HBB 2 July 2020.00_36_57_04.Still002

جب مجھے جہادی اور دہشت گرد کہا گیا تب میں نے طے کیا کہ چپ نہیں رہوں گا: عرفان پٹھان

ویڈیو: ہندوستانی کرکٹ ٹیم کے سابق آل راؤنڈرعرفان پٹھان نے حال ہی میں سابق ہندوستانی کوچ گریگ چیپل کا دفاع کیا تھا۔ انہوں نے کہا تھا کہ ان کا کریئر برباد کرنے کے لیے لوگ چیپل کو الزام دیتے ہیں، لیکن اس میں ان کا کوئی ہاتھ نہیں ہے۔ اس کو لےکر ٹوئٹر پر لوگوں نے انہیں ٹرول کیا۔ یہاں تک کہہ دیا کہ وہ اگلا دہشت گرد حافظ سعید بننا چاہتے ہیں۔ اس موضوع پر دی وائر کی عارفہ خانم شیروانی نے ان سے بات چیت کی۔

(علامتی تصویر، فوٹو: رائٹرس)

سوشل میڈیا پوسٹ کے فیکٹ چیک کے لیے وزارت اطلاعات و نشریات کے تحت آنے والی کمپنی نے ٹینڈر منگائے

سائبر قانون کے جان کار اور فیک نیوز کا پتہ لگانے والے ماہرین نے اس قدم پرتشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس سے سرکار کے لیے غیرقانونی نگرانی کے راستے کھل جا ئیں گے اور اس کا استعمال لوگوں کو پریشان کرنے کے لیےہو سکتا ہے۔

(فوٹو بہ شکریہ: آصف خان/رائٹرس)

’مجھے ان ٹوئٹس کی وجہ سے نوکری سے نکالا گیا، جو میں نے کیے ہی نہیں تھے‘

گزشتہ دنوں گو ایئر کے ذریعے ان کے ایک پائلٹ کو یہ کہتے ہوئے نوکری سے نکال دیا گیا کہ انہوں نے ٹوئٹر پر ہندو بھگوانوں کو لےکرقابل اعتراض تبصرہ کیا تھا۔ نوکری سے نکالے گئے اسٹاف کا کہنا ہے کہ وہ ٹوئٹر اکاؤنٹ ان کا نہیں ہے اور کمپنی نے بنا ان کی بات سنے یہ فیصلہ لیا ہے۔

کپل مشرا،فوٹو: پی ٹی آئی

متنازعہ ٹوئٹ کو لے کر بی جے پی امیدوار کپل مشرا کے خلاف ایف آئی آر درج

دہلی کے ماڈل ٹاؤن اسمبلی حلقہ سے بی جے پی امیدوار کپل مشرا نے 8 فروری کو ہونے والے اسمبلی انتخاب کو ہندوستان بنام پاکستان کامقابلہ بتاکرایک ٹوئٹ کیا تھا۔ ٹوئٹر نے الیکشن کمیشن کی ہدایت کے بعد یہ متنازعہ ٹوئٹ ہٹا دیا ہے۔

فوٹو بہ شکریہ : پی آئی بی ٹوئٹر

مرکزی حکومت کے بارے میں ‘فیک نیوز’ سے نپٹنے کے لیے پی آئی بی نے فیکٹ چیک یونٹ بنایا

وزارت اطلاعات و نشریات نے لوگوں سے سوشل میڈیا سمیت کسی بھی پلیٹ فارم پر نظر آنے والی مرکزی حکومت کی وزارت، محکمہ جات اورمنصوبوں سے متعلق کسی ‘مشکوک مواد’ کی تصویر ای میل کرنے کی اپیل کی اور کہا کہ اس کی چھان بین کی جائےگی۔

0511 HBB Thumb F (1)

ویڈیو: کیا ٹوئٹر پر ذات کی بنیاد پر امتیازی سلوک کرنے کے الزام جائز ہیں؟

ویڈیو: حال ہی میں سوشل میڈیا کے بڑے پلیٹ فارم ٹوئٹر پر ذات کی بنیاد پر امتیازی سلوک کرنے کے الزامات لگے ہیں۔ ہم بھی بھارت کے اس ایپی سوڈ میں دی وائر کی سینئر ایڈیٹر عارفہ خانم شیروانی اس موضوع پر دہلی یونیورسٹی کے پروفیسر رتن لال، سپریم کورٹ کے سینئر وکیل سنجے ہیگڑے اور دی وائر کی سوشل میڈیا ایڈیٹر نااومی بارٹن سے بات کر رہی ہیں۔

فوٹو: رائٹرس

سوشل میڈیا پر شہری حقوق کے تحفظ کو لے کر پارلیامانی کمیٹی نے ٹوئٹر کو طلب کیا

کچھ دن پہلے رائٹ ونگ تنظیم یوتھ فار سوشل میڈیا ڈیموکریسی کے ممبروں نے ٹوئٹر پر الزام لگایا تھا کہ اس نے رائٹ ونگ مخالف رخ اختیار کیا ہے اور ان کے ٹوئٹر اکاؤنٹس کو بند کر دیا ہے۔ تنظیم نے پارلیامانی کمیٹی کے صدر انوراگ ٹھاکر سے اس کی شکایت کی تھی۔

fake 2

اے ایم یو میں کشمیریوں کی حمایت میں احتجاج، مودی کی ارتھی اور آدم خور روہنگیاؤں کا سچ

اس دفعہ ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوا جس میں یہ دکھایا گیا تھا کہ کچھ لوگ احتجاج کے طور پر پرائم منسٹر نریندر مودی کی غائبانہ ارتھی نکال رہے ہیں۔ ویڈیو کے ساتھ دعویٰ کیا گیا تھا کہ یہ پاکستان کا ویڈیو ہے جہاں بے جے پی کی شکست کے بعد یہ ارتھی نکالی جا رہی ہے۔

Don`t copy text!