Prashant Bhushan

(گرافکس : منندر پال سنگھ / دی وائر)

سی بی آئی ڈائریکٹر آلوک ورما نے سی وی سی کو بھیجے جواب میں مودی حکومت پر سنگین سوال اٹھائے ہیں

دی وائر کی خاص رپورٹ : سی بی آئی ڈائریکٹر آلوک ورما نے کہا ہے کہ وزیر اعظم دفتر کے ایک بڑے افسر کے اشارے پر ان کے خلاف کارروائی کی جا رہی ہے۔ انہوں نے سی وی کمشنر کے وی چودھری پر جانبداری اور سپریم کورٹ کے حکم کی خلاف ورزی کرنے کا الزام بھی لگایا ہے۔

سی بی آئی ڈائریکٹر آلوک ورما/ فوٹو: پی ٹی آئی

سی بی آئی تنازعہ: آلوک ورما کو نہیں ملی کلین چٹ، سپریم کورٹ نے سی وی سی جانچ پر مانگا جواب

سی بی آئی ڈائریکٹر آلوک ورما پر لگے الزامات کو لے کر سپریم کورٹ میں شنوائی ہوئی۔ اس معاملے میں سی وی سی کے ذریعے کورٹ کو دی گئی جانچ رپورٹ کو سپریم کورٹ نے آلوک ورما کو سونپ دیا اور ان سے اس پر جواب مانگا ہے۔ اگلی شنوائی 20 نومبر کو ہوگی۔

فوٹو: فیس بک

شری شری روی شنکر کے ورکشاپ پر بولے پرشانت بھوشن، سی بی آئی میں اب تانترک اور سپیرے بھی آئیں گے

نئی دہلی واقع سی بی آئی ہیڈکوارٹر میں مثبت رجحان بڑھانے کے ساتھ ہی تال میل بڑھانے اور اچھے ماحول کے لیے شری شری روی شنکر کی تنظیم آرٹ آف لونگ کی جانب سے ورکشاپ کرایا جارہا ہے۔

Media bol thumbnail

میڈیا بول: سبری مالا پر امت شاہ کی نصیحت اور جانچ ایجنسیوں کی صورت حال

میڈیا بول کے اس ایپی سوڈ میں سنیے سبری مالا مندر تنازعہ پر بی جے پی صدر امت شاہ کے بیان اور سی بی آئی تنازعہ پر ہارڈ نیوز کے مدیر سنجے کپور اور سینئر صحافی پرنجائے گوہا ٹھاکرتا سے ارملیش کی بات چیت۔

CBI-Alok-Verma-IB-Officials-PTI

جاسوسی کے الزام میں آلوک ورما کے گھر کے باہر سے 4 آئی بی افسر گرفتار، آئی بی نے کی وضاحت

الزام ہے کہ آئی بی کے یہ چاروں شخص سی بی آئی ڈائریکٹر آلوک ورما کے گھر کے باہر جاسوسی کر رہے تھے۔ آئی بی نے اپنے ردعمل میں کہا ہے کہ یہ چاروں آئی بی افسر ہیں اور معمول کے مطابق گشت پر تھے۔

آلوک ورما ،فوٹو: پی ٹی آئی

سی بی آئی تنازعہ: وہ 7اہم معاملے جن کی جانچ آلوک ورما کر رہے تھے

چھٹی پر بھیجے جانے سے پہلے سی بی آئی چیف آلوک ورما رافیل سودے سے لے کر اسٹرلنگ بایوٹیک جیسے ہائی پروفائل معاملے کی جانچ کر رہے تھے ۔ ان میں سے ایک معاملہ ایسا ہے جس میں وزیر اعظم کے سکریٹری ملزم ہیں ۔

بینگلورو میں ایچ ڈی کمارسوامی کی حلف برداری کے دوران اسٹیج پر متحدہ ہوئے اپوزیشن کے رہنما (فائل فوٹو : پی ٹی آئی)

جانیے ،کیا ہےسی بی آئی تنازعے پر سیاسی رہنماؤں کا ردعمل

سی بی آئی تنازعہ: سی بی آئی چیف آلوک ورما کو چھٹی پر بھیجے جانے کے بعد اپوزیشن حکومت پر حملہ آور ہے ۔ ان کا الزام ہے کہ راکیش استھانا کو بچانے اور رافیل سودے کی جانچ سے بچنے کے لیے حکومت نے یہ قدم اٹھایا ہے۔

فوٹو : بار اینڈ بینچ

سی بی آئی معاملہ : پڑھیے ،آلوک ورماکو سپریم کورٹ کیوں جاناپڑا ؟

آلوک ورما نے سپریم کورٹ میں حکومت کے فیصلے کے خلاف عرضی داخل کی ہے،جس میں انہوں نے اشارہ کیا ہے کہ حکومت نے سی بی آئی کے کام کاج میں دخل دینے کی کوشش کی ہے۔سپریم کورٹ جمعہ کو معاملے کی شنوائی کرے گا۔

فوٹو: پی ٹی آئی/ دی وائر

سی بی آئی کی ’چندر مکھی‘ اور ’پارو‘ میں کس کا انتخاب کریں ‌گے حضور

آپ دیوداس کی چندر مکھی آلوک ورما اور پارو استھانا کا ڈولا رے ڈولا رے ڈانس دیکھیے۔ آپ کو مذہب کا نشہ دےکر حکومت کرنے کے سارے گھناؤنے کام کئے جا رہے ہیں۔ اب دیکھنا ہے کہ دیوداس پارو کو بچاتا ہے یا چندر مکھی کو۔

فوٹو: رائٹرس

سی بی آئی: ارون جیٹلی نے حکومت کے بچاؤ میں کہا ؛حکومت صرف سی وی سی کی سفارشات پر عمل کر رہی ہے

ارون جیٹلی نے کہا کہ سی بی آئی ڈائریکٹر آلوک ورما اور ان کے ڈپٹی راکیش استھانا کے خلاف الزامات ہیں جن کی جانچ ضروری ہے۔ پرشانت بھوشن نے نئے سی بی آئی چیف ناگیشور راؤ کی تقرری پر سوال اٹھاتے ہوئے کہا کہ ان کے خلاف سنگین الزامات ہیں ۔

فوٹو: منیزہ حفیظی

کیا ڈسالٹ بنا دباؤ کے ایسی کمپنی کو پارٹنر بنائے گی جس کا کوئی تجربہ نہ ہو: ارون شوری

رافیل ڈیل کو لے کر فرانس کے سابق صدر فرانسوا اُولاندکے بیان ، سنگھ کے سہ روزہ پروگرام میں موہن بھاگوت کا بیان اور میڈیا کے رول پر سینئر رہنما ارون شوری سے دی وائر کے بانی مدیر ایم کے وینو کی بات چیت۔

فوٹو: رائٹرس

رافیل گھوٹالے پر سپریم کورٹ میں جانے کو لے کر کشمکش،وہاں بھی ہے بدعنوانی : پرشانت بھوشن

سوراج ابھیان کے چیئرمین اور سپریم کورٹ کے سینئر وکیل پرشانت بھوشن نے کہا کہ سپریم کورٹ میں کوئی معاملہ لے جانے سے پہلے سوچنا پڑتا ہے کیوں کہ سپریم کورٹ میں بھی بدعنوانی ہے۔

علامتی فوٹو : رائٹرس

’لوگ مظاہرہ کرنے سیاسی رہنماؤں کے دفتروں کے پاس کیوں نہیں آ سکتے؟‘

‘وسط دہلی میں مظاہرہ پر پابندی لگانے والے مرکزی حکومت کے فیصلے پر سپریم کورٹ نے کہا ‘جب انتخاب کے دوران رہنما ووٹ مانگنے کے لئے عوام کے درمیان جا سکتے ہیں تو انتخاب کے بعد مظاہرہ کرنے کے لئے لوگ ان کے دفتروں کے پاس کیوں نہیں آ سکتے؟۔

مدھو کشور اور پرشانت بھوشن (فوٹو:فیس بک /رائٹرس)

فیک نیوز پھیلانے کا الزام لگاتے ہوئے پرشانت بھوشن نے مدھو کشور کے خلاف کیس درج کرایا

سینئر وکیل پرشانت بھوشن نے  مدھو کشور کے خلاف شکایت درج کرائی ہے۔انہوں نے کہا کہ ؛ ان کے جھوٹ کا پردہ فاش کرنے کا وقت آگیا ہے۔ نئی دہلی :سینئر وکیل پرشانت بھوشن نے سماجی کارکن اور قلمکار مدھو کشور کے خلاف جھوٹے انفارمیشن ٹوئٹ کرنے کو […]

RakeshAsthana_PrashantBhushan

سی بی آئی کے خصوصی ڈائرکٹر استھانہ کی تقرری منسوخ کرنے سے سپریم کورٹ کا انکار

عدالت نے کہا کہ گجرات کیڈر کے سینئر آئی پی ایس افسر مسٹر استھانہ کی تقرری میں کسی قانون کی خلاف ورزی نہیں کی گئی ہے۔ نئی دہلی:سپریم کورٹ نے ہندوستانی پولیس سروس (آئی پی ایس) کے سینئر افسر راکیش استھانہ کی مرکزی تفتیشی بیورو (سی بی آئی) کے […]

supreme_court

جج رشوت معاملہ : ایس آئی ٹی جانچ کا مطالبہ خارج

سپریم کورٹ نے ایک جج کی مبینہ رشوت خوری معاملے کی ایس آئی ٹی کے ذریعہ چھان بین کے  مطالبہ کواہانت آمیز کہا ہے۔ نئی دہلی:سپریم کورٹ نے سینئر وکیل کامنی جیسوال کی اس عرضی کو مسترد کردیا جس میں میڈیکل کالج میں داخلے کے ایک گھپلے میں […]