statue of unity

(فوٹو: پی ٹی آئی)

گجرات: اسٹیچیو آف یونیٹی کے ڈیلی کلیکشن اکاؤنٹ سے 5.25 کروڑ روپے غائب، کیس درج

ایچ ڈی ایف سی بینک کی وڈودرا برانچ کے منیجر نے اس کے لیے منتظمہ کمپنی رائٹر بزنس سروسز پرائیویٹ لمٹیڈ کے اسٹاف کے خلاف شکایت درج کرائی ہے۔کمپنی پر اکتوبر 2018 سے مارچ 2020 کے دوران یہ رقم نکالنے کاالزام ہے۔

دسمبر2017 میں گجرات اسمبلی انتخاب کی تشہیر کے دوران سابرمتی ریورفرنٹ پر سی پلین پر نریندر مودی۔ (فوٹو: پی ٹی آئی)

گجرات: ماحولیاتی منظوری کے بغیر سابرمتی اور اسٹیچیو آف یونیٹی کے بیچ ہوائی خدمات کا کام شروع

سی پلین سروس اور سی پلین ہوائی اڈوں کے لیےلازمی ماحولیاتی منظوری نہیں لیے جانے کے باوجود ان منصوبوں پر کام شروع کرنا انوائرنمنٹ اِمپیکٹ اسسمنٹ نوٹیفکیشن 2006 کی خلاف ورزی ہے۔

فوٹو: پی ٹی آئی

کورونا فنڈنگ کے لیے او ایل ایکس پر اسٹیچو آف یونیٹی کو فروخت کر نے کا اشتہار، معاملہ درج

گجرات پولیس نے بتایا کہ کسی نامعلوم شخص نے سنیچر کو او ایل ایکس پر ایک اشتہار دیا جس میں اس نے ہسپتالوں اور صحت سے متعلق سازوسامان خریدنے کے لئے اسٹیچو آف یونیٹی کو 30000 کروڑ روپے میں بیچنے کی ضرورت بتائی ۔

سردار پٹیل کا مجسمہ(فوٹو : پی ٹی آئی) 

اسٹیچو آف یونیٹی کے پاس واقع ہمارے آباواجداد کی زمین چھین رہی ہے حکومت: آدیواسی

گجرات کے آدیواسی فلاح و بہبود کے وزیر گنپت وساوا نے الزامات کو خارج کرتے ہوئے کہا کہ کچھ رہنما اور این جی او آدیواسیوں کا استعمال کرتے ہوئے اپنی سیاست کر رہے ہیں اور نرمدا منصوبہ کو بدنام کر رہے ہیں۔

فوٹو: آندھر پردیش حکومت

آندھر پردیش: مجوزہ اسمبلی بلڈنگ کی اونچائی اسٹیچیو آف یونیٹی سے زیادہ ہوگی

نائیڈو نے ایسے وقت میں یہ اعلان کیا ہے جب اسٹیچیو آف یونیٹی کے افتتاح کے بعد اتر پردیش کے وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ ایودھیا میں مبینہ طور پر 201 میٹر اونچا بھگوان رام کا مجسمہ بنانے کا دعویٰ کرچکے ہیں ۔

سردار پٹیل کا مجسمہ(فوٹو : پی ٹی آئی) 

گجرات: اسٹیچیو آف یونیٹی کے افتتاح کی مخالفت کیوں کر رہے ہیں ہزاروں آدیواسی؟ 

وزیر اعظم نریندر مودی 31 اکتوبر کو سردار پٹیل کے مجسمہStatue of Unityکی نقاب کشائی کرنے والے ہیں۔آدیواسیوں کا کہنا ہے کہ یہ پروجیکٹ ان کے لئے تباہ کن ہے۔اس کی مخالفت میں 72 گاؤں میں کھانا نہیں پکے‌گا۔

Photo:  StatueofUnity.in

سردار پٹیل کا مجسمہ : سہولتوں کے فقدان میں دم توڑتے بچے اور 121 کروڑ روپے کا چندہ

آخر مجسمہ کی اونچائی کیا اس بات کو چھپا سکے‌گی کہ اس کے لئےجمع کیا جا رہا فنڈ ایک طرح بھوک سے مہینوں تڑپتے اور مرتے تمام ہندوستانی کے منھ پرگویا کرارا طمانچہ ہے۔ ایک ایسے وقت میں جبکہ سرکاری ہسپتالوں میں سہولتوں کے فقدان میں دم توڑتے […]

Don`t copy text!