Madhya Pradesh

(فوٹوبہ شکریہ: اے بی وی پی/فیس بک  پیج)

مدھیہ پردیش: اے بی وی پی نے لا کالج کے اساتذہ پر ’مذہبی انتہا پسندی‘ کو فروغ دینے کا الزام لگایا، 6 اساتذہ کو ہٹایا گیا

یہ معاملہ گورنمنٹ لا کالج اندور کا ہے۔ اے بی وی پی نے ہنگامہ کرتے ہوئے دعویٰ کیا تھا کہ کالج میں کچھ اساتذہ طلبہ کے درمیان شدت پسندی ، لو جہاد اور ملک کے بارے میں منفی باتوں کو فروغ دے رہے ہیں۔ اس معاملے میں کالج کی طرف سے عارضی طور پر ہٹائے گئے چھ اساتذہ میں سے چار مسلمان ہیں۔

گجرات کے موربی سول اسپتال  کے دورے پر وزیر اعظم نریندر مودی (بائیں) اور مدھیہ پردیش کے گوالیار کا جے اے ایچ اسپتال(تصویر: پی ٹی آئی/دیپک گوسوامی)

آئے دن رہنماؤں کے اسپتالوں کے دوروں سے بدلتا کیا ہے؟

آپ بیتی: موربی پل حادثے کے بعد وزیر اعظم مودی کے اسپتال کے دورے سے پہلے ہی اس کے کایا پلٹ کی تصویریں سامنے آ ئی تھیں۔یہ سب نیا نہیں ہے۔ مدھیہ پردیش کے گوالیار کے جیاروگیہ اسپتال کے ایسے ہی کچھ دوروں کا گواہ ہونے کی وجہ سےمیں جانتا ہوں کہ لیڈروں کے اس طرح کے دورے سے اخبارات کی سرخیوں کے علاوہ اورکچھ نہیں بدلتا۔

ویر داس۔ (فوٹوبہ شکریہ: فیس بک)

ہندو تنظیموں کے احتجاج کے بعد اسٹینڈ اپ کامیڈین ویر داس کا بنگلورو میں ہونے والا شو رد

بنگلور میں ہونے والے ویر داس کے شو کو لے کر ہندو جن جاگرتی ویدیکے نے پولیس اسٹیشن میں شکایت درج کرائی تھی۔ شو کو رد کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے الزام لگایا گیا تھاکہ اس سے ہندوؤں کے مذہبی جذبات مجروح ہوں گے اور دنیا کے سامنے ہندوستان کی بدنامی ہو گی۔

کوڑا کرکٹ پھینکتے ہوئے شیوپور میونسپلٹی ملازمین کےوائرل ویڈیو کا اسکرین شاٹ۔ (بہ شکریہ: فیس بک)

مدھیہ پردیش: بی جے پی رہنماؤں نے صاف سڑک پر کچرا ڈلوایا، پھر جھاڑو لگا کر دیا صفائی کا پیغام

معاملہ شیوپور ضلع کا ہے۔ یکم نومبر کو مدھیہ پردیش کے یوم تاسیس کے موقع پر بی جے پی کے مقامی لیڈروں نے ایک صفائی مہم کا اہتمام کیا تھا۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق رہنماؤں کی آمد سے قبل میونسپلٹی کے عہدیداروں اور ملازمین نے کوڑا کرکٹ پھیلادیا اور پھر رہنماؤں نے جھاڑولگاتے ہوئے فوٹو کھنچوائے ۔

(فوٹوبہ شکریہ: حکومت مدھیہ پردیش)

مدھیہ پردیش: پردھان منتری آواس یوجنا کے تحت بنائے گئے درجنوں گھر زمین پر ندارد

ایک میڈیا رپورٹ کے مطابق، مدھیہ پردیش کے ستنا ضلع کے رہیکوارہ گرام پنچایت میں پردھان منتری آواس یوجنا کے تحت 600 مکانات بنائے گئے ہیں، لیکن تحقیقات میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ کاغذات میں ان لوگوں کے نام گھروں کا الاٹمنٹ دکھایا گیا ہے، جن کی موت ہوچکی ہے۔ تقریباً 75 گھر تلاش کرنے پر بھی نہیں ملتے ہیں۔

(علامتی تصویر: دی وائر)

ایم پی میں ہندوتوادی لیڈر نے ’مسلمانوں کا ڈر‘ دکھا کر کسانوں سے سستے داموں میں زمین خریدی: رپورٹ

معاملہ مدھیہ پردیش کے کھرگون ضلع کا ہے۔ بی جے پی لیڈر رنجیت سنگھ دانڈیر پہلے بجرنگ دل میں تھے۔ الزام ہے کہ انہوں نے ‘تنظیم زرخیز’ نامی ادارہ بنا کر 2000کی دہائی میں کسانوں کی کئی ایکڑ زمین یہ ڈر دکھا کر سستے داموں خریدلی کہ اس پر مذبح خانہ بننے والا ہے۔ سودا ہونے کے بعد تنظیم کا نام بدل کر پی سی مہاجن فاؤنڈیشن کر دیا گیا۔

سادھوی پرگیہ ٹھاکر مدھیہ پردیش کے وزیر اعلیٰ شیوراج سنگھ چوہان کے ساتھ۔ (فائل فوٹو: پی ٹی آئی)

مدھیہ پردیش: بی جے پی ایم پی پرگیہ ٹھاکر نے کہا — میرے گود لیے ہوئے گاؤں میں لڑکیوں کو بیچا جا رہا ہے

مدھیہ پردیش کی راجدھانی بھوپال سے لوک سبھا ایم پی پرگیہ ٹھاکر نے ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ان کے گود لیے تین گاؤں کے لوگ اتنے غریب ہیں کہ ان کے پاس کھانے تک کے پیسے بھی نہیں ہیں، اس لیے وہ غیر قانونی شراب بناتے اور بیچتے ہیں۔ جب پولیس انہیں پکڑلیتی ہے تو ان کے گھر والے اپنی بچیوں کو بیچ کر پولیس کو پیسے دیتے ہیں اور انہیں چھڑا تے ہیں۔

وزیر اعلیٰ شیوراج سنگھ چوہان۔ (فوٹوبہ شکریہ: فیس بک/چوہان شیوراج)

غذائی قلت سے جوجھ رہے مدھیہ پردیش میں سامنے آیا ’پوشن آہار‘ گھوٹالہ

سی اے جی کی ایک رپورٹ سے پتہ چلتا ہے کہ ریاست میں بچوں، لڑکیوں، حاملہ خواتین اور دودھ پلانے والی ماؤں میں تقسیم کیے جانے والے ٹیک ہوم راشن میں کروڑوں روپے کا غبن کیا گیا ہے۔ اس کے علاوہ نیوٹریشن کی کوالٹی بھی اسٹینڈرڈ سے نیچے پائی گئی ہے۔ غور طلب ہے کہ اس وزارت کا چارج خود وزیر اعلیٰ شیوراج سنگھ چوہان کے پاس ہے۔

منورفاروقی۔ (فوٹو بہ شکریہ: فیس بک)

ہندو رائٹ ونگ کے دباؤ کے بعد دہلی پولیس نے منور فاروقی کے شو کی اجازت نہیں دی

دہلی میں منور فاروقی کاشو 28 اگست کو ہونا تھا۔ وشو ہندو پریشد نے پولیس کمشنر سے شو کو رد کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے الزام لگایا تھا کہ فاروقی ‘اپنے شو میں ہندو دیوتاؤں کا مذاق اڑاتے ہیں۔’ اس سے پہلےاس ماہ کے شروع میں بنگلورو میں بھی ان کا شو اجازت نہ ملنےکی وجہ سے ردکر دیا گیا تھا۔

مہیش کٹارے 'سگم'۔ (فوٹو بہ شکریہ: Facebook/@maheshkatare.sugam)

مدھیہ پردیش: مقامی مسائل کو اٹھانے والے ایوارڈ یافتہ شاعر کو گھر گرانے کا نوٹس ملا

بینا میونسپلٹی نے ہندی اور بندیلی کے معروف شاعر مہیش کٹارے ‘سگم’ کو نوٹس بھیجا ہے اور دعویٰ کیا ہے کہ ان کا مکان غیر قانونی ہے۔ وہیں، کٹارے کا کہنا ہے کہ ان کے پاس تمام ضروری دستاویزاور اجازت نامے ہیں اور وہ باقاعدگی سے ہاؤس ٹیکس بھی جمع کرا رہے ہیں۔

جائے وقوع پر موجود پولیس۔ (تصویر: اسپیشل ارینجمنٹ)

مدھیہ پردیش: گائے کی اسمگلنگ کے شبہ میں ایک مسلمان شخص کا پیٹ پیٹ کر قتل، دو زخمی

مہاراشٹر کے امراوتی کے رہنے والے نذیر احمد مبینہ طور پر اپنے دو ساتھیوں کے ساتھ مدھیہ پردیش کے ہوشنگ آباد ضلع سے ایک ٹرک میں 28 گائے لے کر جا رہے تھے،جب راستے میں ان پر گئو رکشکوں کے ایک گروپ نے حملہ کیا۔ نذیر کی موت سر میں چوٹ لگنے سے ہوگئی۔ حملے میں زخمی ہونے والے ان کے ساتھیوں کا کہنا ہے کہ وہ گائے کو امراوتی کے مویشی میلے میں بیچنے کے لیے لے جا رہے تھے۔

ادے پور قتل معاملے کے خلاف بجرنگ دل کا مظاہرہ۔ (فوٹو: اسپیشل ارینجمنٹ)

مدھیہ پردیش: ادے پور مرڈر کیس کے خلاف احتجاجی مظاہرے، مسلمانوں کے خلاف تشدد کی اپیل

ادے پورمرڈر کیس کے خلاف وشو ہندو پریشد اور بجرنگ دل سمیت دیگر دائیں بازو کےگروپوں نے مدھیہ پردیش کے مختلف اضلاع میں مظاہرے کیے، جن میں مسلمانوں کے خلاف نہ صرف اشتعال انگیز نعرے لگائے گئے بلکہ ان کے خلاف تشدد کی اپیل بھی کی گئی ۔

(السٹریشن: پری پلب چکرورتی/ دی وائر)

بی جے پی کے لیے ملک کی شبیہ کا مطلب آخر کیا ہے …

اگر سنگھ پریوار سے وابستہ حکمراں اور ان کے پیروکارسمجھتے ہیں کہ ملک کی شبیہ مدھیہ پردیش میں محمد ہونے کے شبہ میں بھنور لال کو بھاجپائیوں کے ذریعےپیٹ پیٹ کر مار دیے جانے سے نہیں، بلکہ راہل گاندھی کے لندن میں یہ کہنے سے خراب ہوتی ہے کہ بی جے پی نے ملک میں مٹی کا تیل اس طرح چھڑک دیا ہے کہ ایک چنگاری بھی ہمیں بڑی مصیبت میں مبتلا کرسکتی ہے، تو انہیں بھلا کون سمجھا سکتا ہے!

Rajiv-Kumar-PTI

راجیو کمار نے چیف الیکشن کمشنر کا عہدہ سنبھالا

راجیو کمار ستمبر 2020 سے الیکشن کمشنر کے طور پر الیکشن کمیشن سے وابستہ تھے۔ 12 مئی کو وزارت قانون نے نئے چیف الیکشن کمشنر کے طور پر ان کے نام کا اعلان کیا تھا۔ وہ سشیل چندر کی جگہ سنبھالیں گے، جو 14 مئی کو ریٹائر ہوئےہیں۔

مدھیہ پردیش کے ڈنڈوری میں آصف خان کا منہدم گھر۔ (فوٹو بہ شکریہ: ٹوئٹر)

ایم پی: ہندو خاتون سے شادی کرنے پر مسلم نوجوان کے گھر اور دکانوں پر چلا تھا بلڈوزر، عدالت نے دیا تحفظ

معاملہ ڈنڈوری کا ہے، جہاں خاتون کے اہل خانہ کی جانب سے ایک مسلم نوجوان پر اغوا کا الزام لگائے جانے کے بعد انتظامیہ نے ان کے گھر اور دکان توڑ دیے تھے۔ خاتون نے ہائی کورٹ میں درخواست دائر کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس نے اپنی مرضی سے شادی کی ہے، جس کے بعد عدالت نے اغوا کے کیس میں کارروائی نہ کرنے کی ہدایت دی ہے۔

(علامتی تصویر: پی ٹی آئی)

گجرات: ہنومان جینتی شوبھا یاترا کے دوران درگاہ پر بھگوا جھنڈا لگانے کے معاملے میں 30 لوگ گرفتار

گجرات کے ضلع گر سومناتھ کے ویراول قصبے کا معاملہ۔ پولیس نے بتایا کہ ہنومان جینتی پر بنا اجازت شوبھا یاترا نکالی گئی تھی۔ اس سلسلے میں دو ایف آئی آر درج کی گئی ہیں۔ اس کے علاوہ مہاراشٹر کے امراوتی ضلع کے اچل پور شہر میں مذہبی جھنڈوں کو ہٹانے کو لے کر دو کمیونٹی کے درمیان تصادم ہوا جس کے بعد یہاں کرفیو لگا دیا گیا۔

1304 Sumedha Hyd Story.00_12_15_21.Still006

رام نومی تشدد کے بعد ایم پی کے مسلمانوں کے گھروں پر چلا بلڈوزر، سپریم کورٹ خاموش کیوں ہے؟

ویڈیو: مدھیہ پردیش کے وزیر اعلیٰ شیوراج سنگھ چوہان کی ہدایت پر کھرگون ضلع انتظامیہ اور پولیس نے رام نومی کے جلوس پر حملے میں مبینہ طور پر ملوث افراد کے گھر توڑ دیے ہیں۔ اس معاملے پر سپریم کورٹ کے وکیل پرشانت بھوشن سے دی وائر کی سینئر ایڈیٹر عارفہ خانم شیروانی کی بات چیت۔

(علامتی تصویر: رائٹرس)

کھرگون تشدد میں پہلی موت کی تصدیق، متاثرہ خاندان نے پولیس پر موت کو چھپانے کا الزام لگایا

پولیس نے بتایا کہ شہر میں فرقہ وارانہ تشدد کے اگلے دن 11 اپریل کو ایک نامعلوم لاش ملی تھی۔ کھرگون میں فریزر کی سہولت نہ ہونے کی وجہ سے لاش کو پوسٹ مارٹم کے بعد اندور کے اسپتال میں رکھا گیا۔ وہیں متوفی ابریش خان کے اہل خانہ کا الزام ہے کہ 12 اپریل کو کچھ لوگوں نے اسے پولیس کی حراست میں دیکھا تھا۔

کرناٹک کے ہبلی میں فرقہ وارانہ تصادم کے بعد دفعہ 144 نافذ کر دی گئی ہے۔ (تصویر: پی ٹی آئی)

ہنومان جینتی پر فرقہ وارانہ تشدد کے واقعات، کرناٹک کے ہبلی میں دفعہ 144 نافذ

دہلی، آندھرا پردیش اور اتراکھنڈ سے ہنومان جینتی کے جلوسوں کے دوران فرقہ وارانہ تشدد کے متعدد واقعات سامنےآئے ہیں۔ بتایا جا رہا ہے کہ کرناٹک کے ہبلی شہر میں ایک سوشل میڈیا پوسٹ کو لے کر پولیس اہلکاروں، ایک ہسپتال اور ایک مندر پر حملہ کیا گیا۔ اس میں 12 پولیس اہلکار بھی زخمی ہوئے ہیں۔ معاملے میں تقریباً 40 لوگوں کو گرفتار کیا گیا ہے۔

فوٹو: کاشف کاکوی

کھرگون تشدد: پی ایم آواس یوجنا کے تحت بنائے گئے مکان کو منہدم کرنے کے بعد حکومت متاثرہ خاندان کی باز آباد کاری کرے گی

مدھیہ پردیش کے کھرگون شہر میں رام نومی کے موقع پر ہوئے فرقہ وارانہ تشدد کے بعد ضلع انتظامیہ نے کئی مکانات اور دکانوں کو منہدم کر دیا تھا۔ اس میں حسینہ فخرو کے گھر کو بھی بلڈوزر سے توڑ دیا گیا تھا، جبکہ ان کے پاس موجود دستاویزوں سے پتہ چلتا ہے کہ یہ مکان پردھان منتری آواس یوجنا کے تحت منظور کیا گیا تھا۔

mcms

کھرگون فسادات کے متاثرین نے کہا، جب ان کے تہوار آتے ہیں تو ہمیں اپنی جان بچاکر بھاگنا پڑتا ہے

ویڈیو: 10 اپریل کو رام نومی کے موقع پر ہندوتوا گروپوں کی طرف سے نکالے گئے جلوسوں کے دوران ملک کے مختلف شہروں میں فرقہ وارانہ تشدد کی خبریں موصول ہوئیں۔ ان میں مدھیہ پردیش کا کھرگون شہر بھی شامل ہے۔ تشدد کے بعد ضلع انتظامیہ کی جانب سے متعدد مکانوں اور دکانوں کو گرانے کی کارروائی کی گئی تھی۔

مدھیہ پردیش میں رام نومی تشدد کے ملزمین کے مبینہ غیر قانونی تعمیرات کو منہدم کرنے کی تصویر۔

مدھیہ پردیش: رام نومی تشدد میں ملزم بنائے گئے تین لوگ تشدد کے دوران جیل میں بند تھے

مدھیہ پردیش کے بڑوانی ضلع کے سیندھوا میں رام نومی کے موقع پر ہوئے فرقہ وارانہ تصادم میں بائیک جلانے کے الزام میں تین لوگوں کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ واقعے کے اگلے ہی روز ان میں سے ایک کے گھر کو انتظامیہ نے غیر قانونی تعمیرات قرار دے کر توڑ دیا۔ اب یہ بات سامنے آئی ہے کہ تینوں ملزمین قتل کی کوشش کے ایک مقدمے میں مارچ سے جیل میں بند ہیں۔

کھمبھات قصبے کے شکر پورہ علاقےسے ناجائز قبضہ ہٹانے کے لیے انتظامیہ نے جمعہ کو بلڈوزر چلوایا۔ (فوٹو بہ شکریہ: اے این آئی)

رام نومی تشدد: مدھیہ پردیش کے بعد گجرات کے کھمبھات میں مبینہ غیر قانونی تعمیرات پر بلڈوزر چلا

آنند ضلع کلکٹر نے کہا کہ غیر قانونی قبضے اور غیر قانونی تعمیرات کے ساتھ ساتھ سڑکوں کے کنارے کھڑی جھاڑیوں پر بھی بلڈوزر چلائے جارہے ہیں کیونکہ رام نومی کے جلوس پر پتھراؤ کے بعد شرپسندانہی جھاڑیوں میں چھپ رہے تھے۔ کانگریس نے اس مہم کو غیر آئینی اور انسانی حقوق کی خلاف ورزی قرار دیا ہے۔

1304-Kashif-Kakvi.00_25_44_08.Still003-1200x600

’یہ آزاد ہندوستان کی تاریخ کا بدترین دور ہے‘

ویڈیو: گزشتہ چند دنوں میں کئی صوبوں میں فرقہ وارانہ واقعات کے بعد کشیدگی کا ماحول ہے۔ مدھیہ پردیش میں مسلمانوں کے مکان اور دکان توڑے گئے، مساجد کے سامنے غیرمہذب نعرے بازی کی گئی۔ اس سلسلے میں دی وائر کی سینئر ایڈیٹر عارفہ خانم شیروانی نے مؤرخ رام چندر گہا سے بات چیت کی۔

کھرگون میں ملزمان کی تعمیرات گرانے کی کارروائی۔ (تصویر: ٹوئٹر/اسکرین شاٹ)

کھرگون تشدد: انتظامیہ نے توڑا پردھان منتری آواس یوجنا کے تحت بنایا گیا مکان

رام نومی پر فرقہ وارانہ تشدد کے بعد کھرگون میں ضلع انتظامیہ کی طرف سے کئی مکانات اور دکانوں کو منہدم کرنے کی کارروائی کی گئی تھی۔ اب ایک خاندان کے پاس دستیاب دستاویز سے پتہ چلتا ہے کہ جس گھر کو غیر قانونی قرار دے کر منہدم کیا گیا وہ پردھان منتری آواس یوجنا کے تحت بنایا گیا تھا۔

شریف پرواز۔ (فوٹو بہ شکریہ: فیس بک/@SharifParwazQawwal)

مدھیہ پردیش: ملک، وزیر اعظم اور وزیر داخلہ کے خلاف اشتعال انگیز تبصرہ کرنے پر قوال کے خلاف مقدمہ درج

مدھیہ پردیش کے ریوا ضلع میں منعقد ایک پروگرام کے دوران اشتعال انگیز تبصرہ کرنے کے الزام میں پولیس نے یوپی کے قوال شریف پرواز کے خلاف مقدمہ درج کیا ہے۔ ریاستی وزیر داخلہ نروتم مشرا نے فنکاروں کو وارننگ جاری کرتے ہوئے کہا کہ ہندوستان کے خلاف کوئی بھی گانا برداشت نہیں کیا جائے گا، کیونکہ اب مرکز میں ‘راشٹروادی’ سرکار ہے۔

(السٹریشن: دی وائر)

مدھیہ پردیش: حجاب میں ملبوس لڑکی کے یونیورسٹی میں نماز پڑھنے پر تنازعہ، جانچ کا حکم

مدھیہ پردیش کے ساگر میں واقع ڈاکٹر ہری سنگھ گور یونیورسٹی کا واقعہ۔ یونیورسٹی انتظامیہ نے طلبا کو نوٹس جاری کیا ہےاور کہا ہے کہ وہ ایسی کسی بھی سرگرمی میں شامل نہ ہوں جس سے تعلیمی سرگرمیاں متاثر ہوتی ہوں اور کیمپس کے اندر فرقہ وارانہ کشیدگی پیدا ہو۔

(السٹریشن: دی وائر)

مدھیہ پردیش: دلت آر ٹی آئی کارکن کی بے دردی سے پٹائی، پیشاب پینے پرمجبور کیا

مدھیہ پردیش کے گوالیار ضلع کے برہی گرام پنچایت کا معاملہ۔ شدید طور پر زخمی 33 سالہ دلت آر ٹی آئی کارکن کو دہلی کے ایمس ریفر کیا گیا ہے۔ پولیس نے سات ملزمین کی شناخت کی ہے اور ان کے خلاف قتل کی کوشش، اغوا اورایس ایس ٹی سےمتعلق ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کیا ہے۔

(علامتی تصویر: رائٹرس)

مدھیہ پردیش: میرج اسسٹنس اسکیم میں کروڑوں کا گھوٹالہ، 20 بینکوں اور 93 گرام پنچایتوں کی جانچ شروع

مدھیہ پردیش میرج اسسٹنس اسکیم کےتحت 30.4 کروڑ روپے کا یہ گھوٹالہ 2019 اور 2021 کےبیچ کا ہے۔ اس گھوٹالے کے تحت ہزاروں لڑکیوں کی فرضی شادیاں کرائی گئیں تاکہ گھوٹالہ کرنے والے مکھیہ منتری کنیا وواہ یوجنا کے تحت فائدہ حاصل کرنے کے لیے درخواست دے سکیں۔

image

مدھیہ پردیش: گائے کے سامنے پیشاب کرنے پر مسلمان  بزرگ کی پٹائی، مقدمہ درج

یہ واقعہ مدھیہ پردیش کے رتلام ضلع کا ہے۔ سیف الدین کا کہنا ہے کہ انہوں نے گائے کے سامنے پیشاب نہیں کیا تھا۔ اس کے باوجود زدو کوب کرنے کے بعد زبردستی ان سے یہ بات قبول کروائی گئی۔ پولیس نے سیف الدین کو ہراساں کرنے اور اس واقعہ سے متعلق ویڈیو بنانے کے ملزم کو گرفتار کر لیا ہے۔

نروتم مشرا (فوٹو بہ شکریہ: فیس بک)

مدھیہ پردیش: پولیس کارروائی میں مستعمل اُردو اور فارسی لفظوں کو ہندی لفظوں سے بدلنے کا عمل شروع

مدھیہ پردیش کے وزیر داخلہ نروتم مشرا نے گزشتہ ماہ پولیس کارروائی میں مستعمل دوسری زبانوں کے الفاظ کو ہندی کےرائج لفظوں سے بدلنے کا اعلان کیا تھا۔ مختلف اضلاع کے سینئر پولیس افسروں سے کہا گیا ہے کہ وہ سات دنوں کے اندرطے شدہ پروفارما میں غیر ہندی الفاظ کو بدلنے سے متعلق تجاویز پیش کریں۔

1012 Bangle Seller Interview Yaqut.00_01_45_21.Still002

ضمانت ملنے کے بعد جنسی ہراسانی اور شناختی دستاویزات کی جعلسازی کے ملزم چوڑی فروش تسلیم علی کی دی وائر سے خصوصی بات چیت

ویڈیو: مدھیہ پردیش کے اندور میں13سالہ اسکولی طالبہ کو مبینہ طور پر جنسی طور پر ہراساں کرنے اور شناختی دستاویزات میں جعلسازی کے معاملے میں ساڑھے تین مہینے تک جیل میں رہنے کے بعد اتر پردیش کے رہنے والے چوڑی فروش تسلیم علی کو ضمانت پر رہا کر دیا گیا ہے۔

مدھیہ پردیش کے اندور میں چوڑی بیچنے والے مسلمان کی پٹائی کرتے لوگ۔ (اسکرین گریب: ٹوئٹر/@ShayarImran)

جس لڑکی نے مجھ پر جنسی طور پر ہراساں کرنے کا الزام گایا، میں نے اس کو دیکھا تک نہیں تھا: چوڑی فروش

مدھیہ پردیش کے اندور میں13سالہ ا سکولی طالبہ کو مبینہ طور پر جنسی طور پر ہراساں کرنےاور شناختی  دستاویزوں کی جعلسازی کے معاملے میں ساڑھے تین مہینے تک جیل میں رہنے کے بعد ضمانت پر رہا ہوئے چوڑی فروش تسلیم علی نے دعویٰ کیا کہ وہ بےگناہ ہیں […]

بھوپال میں ویب سیریز آشرم 3 کے سیٹ پر حملے کا کلیدی ملزم سشیل سدھیلے۔(لال گھیرے میں) (فوٹو اسپیشل ارینجمنٹ)

ایم پی: آشرم کے سیٹ پر حملے کے کلیدی ملزم ہیں قتل کے مجرم، وزیر اعلیٰ اور بی جے پی رہنماؤں سے رشتے

گزشتہ 24 اکتوبر کو بھوپال میں بجرنگ دل کے کارکنوں نے ویب سیریز‘آشرم’کے سیٹ پر پتھراؤ کیا تھا اور اس کےپروڈیوسر-ڈائریکٹر پرکاش جھا پر‘ہندوؤں کو غلط طریقے’سے پیش کرنے کا الزام لگاتے ہوئے سیاہی پھینکی و کرو ممبروں کے ساتھ مارپیٹ کی تھی۔ اس حملے کے کلیدی ملزم بجرنگ دل کے ریاستی کنوینر سشیل سدھیلےقتل کے معاملے میں ستمبر 2015 سے ضمانت پر باہر ہیں۔

آشرم کے سیٹ پر ایک کرو ممبرکو پیٹتے بجرنگ دل کارکن۔(بہ شکریہ: ویڈیوگریب/ @Anurag_Dwary)

مدھیہ پردیش: بجرنگ دل نے ویب سیریز کے سیٹ پر توڑ پھوڑ کی، ہندوؤں کو بدنام کرنے کا الزام

واقعہ بھوپال میں پیش آیا، جہاں بجرنگ دل کے کارکنوں نے ویب سیریز‘آشرم’کے سیٹ پر پتھراؤ کیا اور اس کے پروڈیوسراور ڈائریکٹر پرکاش جھا پر ‘ہندوؤں کو غلط طریقے’سے دکھانے اور بدنام کرنے کا الزام لگاتے ہوئے سیاہی پھینکی اور کروممبروں کے ساتھ مارپیٹ کی۔ بجرنگ دل نے اس سیریز کی شوٹنگ نہ ہونے دینے کی دھمکی بھی دی ہے۔

حملے کے بعد درگاہ (بہ شکریہ : ٹوئٹر ویڈیوگریب/@KashifKakvi)

مدھیہ پردیش: تبدیلی مذہب کے شک میں نامعلوم ہجوم نے درگاہ پر دھماکہ خیز مواد سے حملہ کیا

معاملہ نیمچ ضلع کےجاود تحصیل کا ہے۔پولیس نے بتایا کہ دو درجن نقاب پوشوں نےمبینہ طور پر ایک درگاہ پر دھماکہ خیز مواد سے حملہ کر کےاس کو نقصان پہنچایا ہے، ساتھ ہی اس کے خادم اور زائرین کی لاٹھی ڈنڈوں سے پٹائی کی۔ حملہ سنیچر کی شب تقریباً11 بجے سے اتوار کی صبح تین بجے تک چلا۔

(فوٹو بہ شکریہ: فیس بک)

مدھیہ پردیش: بی اے پہلے سال میں اختیاری مضمون کے طور پر شامل کیا جائے گا ’رام چرت مانس‘

مدھیہ پردیش کے ہائر ایجوکیشن منسٹر موہن یادو نے کہا کہ جب نئی ایجوکیشن پالیسی کے تناظر میں نیا نصاب لایا جا رہا ہے تو ہم اپنے شاندار ماضی کو بھی سامنے لانے کی کوشش کر رہے ہیں۔انہوں نے دعویٰ کیا کہ ناسا کی ایک تحقیق میں یہ ثابت ہو گیا ہے کہ رام سیتو لاکھوں سال پہلےانسانوں کے ذریعے بنایا گیا پل تھا۔

(علامتی تصویر، فوٹو: پی ٹی آئی)

مدھیہ پردیش: مسلم شخص کو ’جئے شری رام‘ بولنے کے لیے مجبور کرنے کا الزام، دو لوگ گرفتار

مدھیہ پردیش کے اجین ضلع کا معاملہ ہے۔مہیدپورقصبہ کےاسکریب ڈیلر عبدالرشید ایک گاؤں گئے تھے۔ الزام ہے کہ وہاں انہیں دھمکی دی گئی کہ علاقے میں کباڑ کا کاروبار بند کریں۔جب وہ گاؤں سے نکلے تو راستے میں دو لوگوں نے انہیں روک لیا اور ان کے ساتھ ہاتھاپائی کی۔ پھرمبینہ طور پر ‘جئے شری رام’بولنے کے لیے بھی مجبور کیا۔

(علامتی تصویر،فوٹو: پی ٹی آئی)

نام چھپا کر کون لوگ جیتے آئے ہیں اور ان کی گھٹن کو کس نے محسوس کیا ہے؟

پہچان کاتصور خالصتاًانسانی ایجاد ہے۔ پہچان کےلیے خون کی ندیاں بہہ جاتی ہیں۔ پہچان کا سوال اقتصادی سوالوں کے کہیں اوپر ہے۔اس پہچان کو اگر کوئی انڈرگراؤنڈ کر دے، تو اس کی مجبوری سمجھی جا سکتی ہے اور اس سے اس کے سماج کی حالت کا اندازہ بھی ہوتا ہے۔

Don`t copy text!