Israel

بنیامن نتن یاہو اور نریندر مودی، درمیان میں ہرمیس 900۔ (تصویر بہ شکریہ: ایکس اکاؤنٹس اور وکی میڈیا کامنز)

اسرائیل کو ایکسپورٹ کیے گئے اڈانی جوائنٹ وینچر کے ڈرون غزہ قتل عام میں استعمال ہوئے

غزہ کے گنجان آباد شہری علاقوں میں اسرائیلی دفاعی افواج کی طرف سے حملوں کے لیے استعمال کیے جا رہے ہرمیس 900 ڈرون کی فراہمی میں ایک ہندوستانی گروپ کا کردار مودی حکومت کے فوری جنگ بندی کا مطالبہ کرنے والے سرکاری موقف کے برعکس نظر آتا ہے۔

آئی ٹی آئی لکھنؤ میں بھرتی مہم۔ (تصویر: اسد رضوی)

یوپی: بے روزگار کارکن جنگ سے متاثرہ ملک اسرائیل جانے کو مجبور، نوکری کی شرطوں  کے بارے میں بھرتی کرنے والے خاموش

جنگ سے متاثرہ ملک اسرائیل میں پرکشش تنخواہ پر کنسٹرکشن انڈسٹری سے متعلق ملازمتوں کے لیے 10000 ہندوستانی کارکنوں کو بھیجنے کے لیے لکھنؤ میں ہوئے بھرتی کے عمل میں شامل لوگوں نے بتایا کہ وہ اسرائیل جانا چاہتے ہیں کیونکہ ہندوستان میں انہیں روزگار نہیں مل رہا ہے۔

AJAY-SV-Thumb

کیا عالمی عدالت انصاف کے فیصلے  کو اسرائیل تسلیم کرے گا؟

ویڈیو: غزہ پر اسرائیل کے حملے کے درمیان جنوبی افریقہ نے اس پر نسل کشی کا الزام لگاتے ہوئے عالمی عدالت انصاف سے رجوع کیا تھا، جس نے اپنے فیصلے میں اسرائیل سے جینوسائیڈ کنونشن پر عمل کرنے کو کہا ہے۔ تاہم، اس نے جنگ بندی کی ہدایات نہیں دیں۔ فیصلے کی پیچیدگیوں پر دی وائر کے بانی مدیر سدھارتھ وردراجن کے ساتھ بات چیت۔

 (علامتی تصویر بہ شکریہ: Pixabay)

ہندوستانی مزدوروں کو سیکورٹی کے بغیر اسرائیل بھیجے جانے پر ٹریڈ یونینوں نے تشویش کا اظہار کیا

گزشتہ دسمبر میں اتر پردیش اور ہریانہ کی سرکارنے اسرائیل میں ملازمت کے لیے تعمیراتی کارکنوں سے درخواستیں طلب کی تھیں۔ حکومت کا منصوبہ تنازعات سے متاثرہ ملک میں کم از کم 10000 مزدوروں کو بھیجنے کا ہے۔ ٹریڈ یونینوں کی دلیل ہے کہ ہندوستانی حکومت بیرون ملک تنازعات والے علاقوں میں کام کرنے جانے والے ہندوستانی مزدوروں کے لیے طے شدہ عمومی حفاظتی معیارات کو نظر انداز کر رہی ہے۔

سندیپ پانڈے (مائیک کے ساتھ)۔ (تصویر بہ شکریہ: X/@RajeevKisanNeta)

اسرائیلی حملے کو امریکی حمایت کے پیش نظر سندیپ پانڈے نے میگسیسے ایوارڈ لوٹایا

سماجی کارکن سندیپ پانڈے کو سال 2002 میں باوقار میگسیسے ایوارڈ سے نوازا گیا تھا۔ انہوں نے ایک بیان جاری کرتے ہوئے کہا کہ فلسطینی شہریوں کے خلاف موجودہ حملوں میں اسرائیل کی کھل کر حمایت کرنے میں امریکہ کے رول کو دیکھتے ہوئے ان کے لیے اپنے پاس یہ ایوارڈ رکھنا ناقابل برداشت ہو گیا ہے۔

فوٹو بہ شکریہ: ڈبلیو ایچ او

فلسطین کے لیے جنوبی افریقہ کی حمایت

فلسطین میں جاری تنازع کو پچاس سے زیادہ دن ہو چکے ہیں، اور اب تک 12000 سے زائد فلسطینی عوام شہید ہوچکے ہیں،لیکن ابھی تک چند ممالک نے ہی فلسطینیوں کی حالت زار پر لب کشائی کی ہے اور ان میں سے بھی صرف ایک ملک یعنی جنوبی افریقہ نے واضح طور پر اسرائیل کے خلاف سفارتی اقدامات کیے ہیں، اور اسرائیلی جارحیت کو فوری طور پر روکنے کا مطالبہ کیا ہے۔

ویوین سلور، فوٹو بہ شکریہ: وکی پیڈیا

ویوین سلور: اسرائیل میں فلسطینیوں کی آواز خاموش ہوگئی

وفاتیہ: ویوین سلور 7 اکتوبر کو اسرائیل پر حماس کے حملوں کے بعد غائب تھی، اور گمان تھا کہ شاید حماس کے عسکری اس کو اپنے ساتھ لے کر گئے ہیں اور غازہ میں فلسطینوں میں ان کی مقبولیت اور گڈ ول کی وجہ سے وہ شاید محفوظ ہوں گی۔ ان کا موازنہ ہندوستان میں امن مساعی کے کسی داعی سے کیا جائے، تو وہ آنجہانی نرملا دیش پانڈے تھی۔ وہ ان ہی کی طرح معتدل مزاج کی مالک تھی اور انتہائی اشتعال انگیز لمحات میں بھی اپنے نرم لہجے کو برقرار رکھتی تھی اور شاید ہی ان کے چہرے سے مسکراہٹ غائب ہوتی تھی۔

maxresdefault-1

اسرائیل اور فلسطین کی 2000 سالہ تاریخ کی کہانی

ویڈیو: اسرائیل اور فلسطین کے تنازعہ کی تاریخ بہت پرانی ہے۔ اسرائیل اور فلسطین کیسے وجود میں آئے، دونوں ممالک کی 2000 سالہ تاریخ کیا ہے، یہودیوں کو پناہ دینے والے فلسطین کو یہودی قوم اسرائیل نے ہی کیسے تباہ کر دیا، بتا رہے ہیں دی وائر کے اجے کمار۔

قاہرہ امن سربراہی اجلاس میں اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل انتونیو گوتریس، فوٹو بہ شکریہ: یو این

اسرائیل حماس جنگ اور ناکام قاہرہ امن اجلاس

مصر نے مغربی ایشیا میں جاری تنازع میں فلسطینیوں کے ساتھ اظہار یکجہتی اور غزہ میں جاری انسانی بحران کا حل تلاش کرنے کی کوشش میں قاہرہ امن سربراہی اجلاس کی میزبانی کی، لیکن اس کا نتیجہ جیسا کہ امید کی جارہی تھی کچھ زیادہ خوش آئند نہیں رہا اور نہ ہی اس میں کوئی حکمت عملی وضع کی گئی۔

ہندوستان میں اسرائیلی سفیر ناؤر گیلون۔ (تصویر بشکریہ: X/@NaorGilon)

اسرائیل نے ہندوستان سے حماس کو دہشت گرد تنظیم قرار دینے کی اپیل کی

اسرائیلی سفیر ناؤر گیلون نے کہا کہ انسداد دہشت گردی کی کارروائیوں میں ہندوستان ہماری بھرپور حمایت کر رہا ہے۔ اب وقت آگیا ہے کہ وہ حماس کو ہندوستان میں دہشت گرد تنظیم قرار دے۔ انہوں نے حماس کے خلاف انسداد دہشت گردی کی کارروائیوں میں اسرائیل کی حمایت کرنے پر ہندوستان کا شکریہ ادا کیا۔

غزہ میں آرتھوڈوکس یونانی چرچ اسرائیلی حملے میں تباہ۔ (تصویر بہ شکریہ: ویڈیو گریب)

فلسطینی عیسائیوں اور مسلمانوں کو پناہ دینے والے غزہ چرچ پر اسرائیل کا حملہ

حماس کے زیر انتظام چلنے والی وزارت داخلہ نے کہا ہے کہ غزہ میں آرتھوڈوکس یونانی چرچ پر اسرائیلی فضائی حملے میں کم از کم آٹھ افراد مارے گئے ہیں۔جس وقت یہ حملہ ہوا اس وقت عیسائی اور مسلم کمیونٹی کے تقریباً 500 لوگ یہاں پناہ لیے ہوئے تھے۔ اسرائیل اور فلسطین کے درمیان جنگ شروع ہونے کے بعد انہیں نقل مکانی کو مجبور ہونا پڑا تھا۔

فضائی حملے کے بعد غزہ کا ہسپتال۔ (تصویر بہ شکریہ:ایکس /@Birzeit University)

غزہ: اسپتال پر اسرائیلی حملے میں 500 افراد ہلاک، اسرائیل نے ’مس فائر‘ فلسطینی راکٹ کو مورد الزام ٹھہرایا

بتایا گیا ہے کہ اسپتال میں مرنے والوں کی تعداد میں مزید اضافے کا اندیشہ ہے۔ 1982 میں لبنان کے صابرہ اور شتیلا میں اسرائیلی فوج اور اس کے اتحادیوں کے ہاتھوں قتل عام کے بعد کسی ایک واقعے میں ہلاک ہونے والے فلسطینیوں کی یہ تعداد سب سے زیادہ ہے۔

Arfa-Ji-Thumb-1 (1)

اسرائیل — فلسطین جنگ کے بہانے ہندوستانی مسلمان کیوں بنے نشانہ؟

ویڈیو: حماس کے حملے کے بعداسرائیل — فلسطین جنگ کے حوالے سے سوشل میڈیا پر ایک طبقہ ہندوستان کے مسلمانوں کو نشانہ بنا رہا ہے۔ اس موضوع پر دی وائر کی سینئر ایڈیٹر عارفہ خانم شیروانی کا نظریہ۔

این سی پی کے قومی ترجمان کلائڈ کراسٹو۔ (تصویر بہ شکریہ: ٹوئٹر ویڈیو گریب)

بی جے پی رہنماؤں نے فوراً سے پیشتر اسرائیل کی حمایت کی، لیکن منی پور کے مسئلے پر خاموش ہیں: این سی پی

نیشنلسٹ کانگریس پارٹی (شرد پوار گٹ) نے بی جے پی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ بی جے پی لیڈروں نے اسرائیل کی حمایت میں ‘تیزی’ دکھائی ہے، لیکن وہ منی پور کے معاملے پر خاموشی اختیار کیے ہوئے ہیں۔ ان کی ‘خاموشی’ مادر وطن میں اس مسئلے (منی پور تشدد) پر ان کے ارادوں کے بارے میں بہت کچھ کہتی ہے۔

روپیش کمار سنگھ۔

روپیش اور دیگر تمام صحافیوں کی رہائی نہ صرف صحافت بلکہ جمہوریت کو بچانے کی جدوجہد کا ایک لازمی حصہ ہے

روپیش کمار سنگھ کی دوبارہ گرفتاری کو ایک سال ہو گیا ہے اور اس دوران انہیں چار نئے مقدمات میں ملزم بنا دیا گیا ہے۔ حال ہی میں وزیر اعظم مودی کے امریکہ دورے کے موقع پر ‘واشنگٹن پوسٹ’ نے پورے صفحے پر ہندوستانی جیلوں میں بند صحافیوں کی رہائی کا مطالبہ کیا تھا۔ ہندوستان میں بھی اس نوع کا مطالبہ ضروری ہے۔

سدھارتھ بھاٹیہ اور ڈینی بین–موشے۔

’یہ اسرائیل کے لیے ایک وجودی بحران ہے، ہم نہیں جانتے کہ آگے کیا ہوگا‘

آڈیو: وزیر اعظم بینجامن نیتن یاہو کی طرف سے لائے گئے متنازعہ عدالتی اصلاحات کے خلاف اسرائیل میں ہو رہے مظاہروں کو وہاں کےسرکردہ فلمساز ڈینی بین –موشے ڈاکیومنٹری کی شکل میں درج کر رہے ہیں ۔ ان کے ساتھ بات چیت۔

لوک سبھا میں مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ۔ (تصویر: پی ٹی آئی)

لوک سبھا میں کانگریس ایم پی کے پیگاسس جاسوسی کا معاملہ اٹھانے پر مرکزی وزیر داخلہ نے ثبوت مانگے

لوک سبھا میں منشیات کی اسمگلنگ پر نگرانی سے متعلق معاملے پر کانگریس کے رکن پارلیامنٹ گورو گگوئی نے پیگاسس اسپائی ویئر سے جاسوسی کے بارے میں مرکزی حکومت سےجواب دینے کو کہا۔

(تصویر: رائٹرس)

انٹلی جنس بیورو نے پیگاسس کے لیے استعمال ہونے والی کٹ جیسا ہارڈ ویئر خریدا تھا: رپورٹ

آرگنائزڈ کرائم اینڈ کرپشن رپورٹنگ پروجیکٹ (او سی سی آر پی) کی ایک رپورٹ میں درآمدی دستاویزوں کے حوالے بتایا گیا ہے کہ 2017 میں ہندوستانی انٹلی جنس ایجنسیوں نے اسرائیلی کمپنی این ایس او گروپ سے ایسا ہارڈ ویئر خریداتھا، جو پیگاسس اسپائی ویئر کے لیے استعمال ہونے والے آلات کی تفصیلات سےمیل کھاتا ہے۔

آنڈرئس مانئول لوپیز اوبراڈور۔ (فائل فوٹو: رائٹرس)

میکسیکو: صدر کے پیگاسس استعمال نہ کرنے کے وعدے کے باوجود صحافی اور کارکن بنے نشانہ

میکسیکو کے صدر آنڈرئس مانئول لوپیز اوبراڈور نے 2018 میں اقتدار سنبھالنے کے بعد اعلان کیا تھا کہ ان کی حکومت میں پیگاسس اسپائی ویئر کا غلط استعمال نہیں ہوگا، لیکن سٹیزن لیب کی حالیہ رپورٹ بتاتی ہے کہ ان کے دور میں دو صحافیوں اور انسانی حقوق کے ایک کارکن کو اسپائی ویئر سے نشانہ بنایا گیا۔

(السٹریشن: پری پلب چکرورتی/دی وائر)

پیگاسس جاسوسی معاملہ: سپریم کورٹ سچائی سے بس دو قدم دور ہے

پیگاسس معاملے پر سپریم کورٹ کی تشکیل کردہ تکنیکی کمیٹی کی جانب سے کوئی حتمی اور فیصلہ کن نتیجہ نہ آنے کے بعد عدالت کے پاس سچ جاننے کے دو آسان طریقے ہیں۔ ایک، مرکزی وزیر داخلہ اور این ایس اے سمیت تمام اہم عہدیداروں سے ذاتی حلف نامہ طلب کرنا اور دوسرا، معروف تنظیموں سے کمیٹی کے نتائج کاتجزیہ کروانا۔

(السٹریشن: دی وائر/پی ٹی آئی)

پیگاسس: کمیٹی کو پانچ فون میں ملا میلویئر، حکومت نے جانچ میں تعاون نہیں کیا – سی جے آئی رمنا

پیگاسس اسپائی ویئر کے ذریعے ملک کے رہنماؤں، صحافیوں اور کارکنوں کی جاسوسی کے الزامات پر سپریم کورٹ کی جانب سے مقرر کردہ تکنیکی کمیٹی نے کہا ہے کہ وہ حتمی طور پر یہ نہیں کہہ سکتے کہ ڈیوائس میں پایا جانے والا میلویئر پیگاسس ہے یا نہیں۔ تاہم جاسوسی کے الزامات پر سپریم کورٹ میں سماعت جاری رہے گی۔

Rupesh Thumb

عوام کی آواز بلند کرنے والوں کو دھمکیاں دی جا رہی ہیں: اپسا شتاکشی

ویڈیو: جھارکھنڈ کے صحافی روپیش کمار سنگھ کو 17 جولائی کو ماؤنوازوں سے مبینہ تعلقات کے الزام میں گرفتار کیا گیا ہے۔ ان کی اہلیہ اپسا شتاکشی نے بتایا کہ انہیں جیل میں متعدی مریضوں کے وارڈ میں رکھا گیا ہے اور وہاں کی حالت ٹھیک نہیں ہے۔ ان کے ساتھ سمیدھا پال کی بات چیت۔

(السٹریشن: پری پلب چکرورتی/دی وائر)

پیگاسس پروجیکٹ: سال بھر میں کہاں تک پہنچی حکومت ہند کے ذریعے اسپائی ویئر کے استعمال کے دعوے کی تحقیقات

قابل ذکر ہے کہ 18 جولائی 2021 سے پیگاسس پروجیکٹ کے تحت ایک بین الاقوامی میڈیا کنسورٹیم، جس میں دی وائر سمیت دنیا بھر کے 17 میڈیا ادارے شامل تھے، نے ایسے موبائل نمبروں کی اطلاع دی تھی، جن کی نگرانی پیگاسس اسپائی ویئر کے ذریعے کی گئی تھی یا وہ ممکنہ نگرانی کے دائرے میں تھے۔ اس میں بہت سے ہندوستانی بھی تھے۔ سپریم کورٹ کی جانب سے اس کی تحقیقات کے لیے تشکیل دی گئی کمیٹی کی طرف سے حتمی رپورٹ ابھی دی جانی ہے۔

روپیش کمار سنگھ(فوٹو بہ شکریہ: فیس بک)

ماؤ نوازوں سے تعلق کے الزام میں جھارکھنڈ پولیس نے آزاد صحافی کو گرفتار کیا

جھارکھنڈ کے رام گڑھ میں رہنے والے فری لانس صحافی روپیش کمار سنگھ کو سال 2021 میں سرائےکیلا کھرساواں ضلع میں درج ایک کیس میں گرفتار کیا گیا ہے، جس میں سی پی آئی (ماؤسٹ) لیڈر پرشانت بوس عرف کشندا  ملزم ہیں۔ جون  2019 میں بھی بہار کی […]

(فوٹو: رائٹرس)

ہندوستانی قیادت نے پیگاسس میں خصوصی دلچسپی دکھائی تھی، کئی سالوں کے معاہدے کے لیے کروڑوں روپے ادا کیے

دی نیویارک ٹائمس سے وابستہ اسرائیلی صحافی رونن برگ مین نے دی وائر کو بتایا کہ ہندوستان کے ساتھ ہوئے معاہدے کی شرائط کےمطابق یہاں کی خفیہ ایجنسیاں بیک وقت پچاس فون کو اسپائی ویئر حملوں کا نشانہ بنا سکتی تھیں۔

(فوٹو: دی وائر)

پیگاسس سے متعلق نیویارک ٹائمس کی حالیہ رپورٹ کا نوٹس لے سپریم کورٹ کمیٹی: ایڈیٹرس گلڈ

ایڈیٹرس گلڈ آف انڈیا نے سپریم کورٹ کے ذریعے پیگاسس کےمعاملے میں بنائی گئی کمیٹی سے دی نیویارک ٹائمس کی جانب سے پیگاسس اسپائی ویئر خریدنے کے دعوے پرحکومت سےجواب طلب کرنے کی درخواست کی ہے۔ گلڈ نے یہ بھی کہا کہ کمیٹی کی کارروائی کو بڑے پیمانے پرعوام کے لیے کھلا رکھاجائے، تاکہ گواہوں کو بلائے جانے اور ان کے جوابوں میں مکمل شفافیت ہو۔

(السٹریشن: دی وائر)

مرکزی حکومت کی جانب سے پیگاسس کی خریداری سے متعلق رپورٹ پر اپوزیشن نے کہا-غیر قانونی جاسوسی ملک سے غداری

کانگریس لیڈر راہل گاندھی نے کہا کہ مودی حکومت نے جمہوری اداروں، سیاست دانوں اور عوام کی جاسوسی کے لیے پیگاسس کی خریداری کی ۔ سی پی آئی (ایم) لیڈر سیتارام یچوری نے کہا کہ اتنے اہم مسئلہ پر خاموشی کا مطلب صرف اپنے مجرمانہ فعل کو تسلیم کرنا ہے۔ نیویارک ٹائمس نے اپنی ایک رپورٹ میں بتایا ہے کہ ہندوستان نے 2017 میں اسرائیل کے ساتھ دفاعی معاہدے کے تحت پیگاسس کی خریداری کی تھی۔

(السٹریشن: پری پلب چکرورتی/دی وائر)

ہندوستان  نے 2017 میں اسرائیل کے ساتھ دفاعی معاہدے کے تحت پیگاسس کی خریداری کی تھی: رپورٹ

نیویارک ٹائمس نے سال بھرکی تفتیش کے بعد اپنی ایک رپورٹ میں کہا ہے کہ حکومت ہند نے 2017 میں ہتھیاروں کی خریداری کے لیے اسرائیل کے ساتھ ہوئے دو ارب ڈالر کے دفاعی معاہدے کے تحت پیگاسس کی خریداری کی تھی۔ رپورٹ بتاتی ہے کہ اسرائیلی وزارت دفاع نے نئے معاہدوں کے تحت پولینڈ، ہنگری،ہندوستان سمیت کئی ممالک کو پیگاسس فروخت کیا۔

(السٹریشن: پری پلب چکرورتی/دی وائر)

پیگاسس: سپریم کورٹ کی کمیٹی  نے جانچ کے لیےدرخواست گزاروں سے فون جمع کرنے کو کہا

درخواست گزاروں کو بھیجے ایک ای میل میں کہا گیا ہے کہ جس ڈیوائس میں مبینہ طور پر پیگاسس اسپائی ویئر ڈالا گیا تھا،اس کو نئی دہلی میں جمع کرایا جائے۔حالانکہ یہ نہیں بتایا گیا ہے کہ آخر اس کو کس مخصوص جگہ پر جمع کرنا ہے۔

(السٹریشن: دی وائر)

ایپل کا پیگاسس کےخلاف مقدمہ کرنا حکومت ہند  کے لیے شرمندگی کا سبب بن سکتا ہے

وہاٹس ایپ یا فیس بک کے برعکس ایپل متنازعہ نہیں ہے اور مودی حکومت اس کو اعلیٰ پائیدان پر رکھتی ہے۔ اس پس منظر میں اب تک پیگاسس کے استعمال سےانکار کرتی آئی حکومت ہند کے لیے ایپل کے آپریٹنگ سسٹم میں ہوئی دراندازی کے سلسلے میں کمپنی کے نتائج کو مسترد کرنا بہت مشکل ہوگا۔

(فوٹو:  رائٹرس)

ایپل نے پیگاسس اسپائی ویئر بنانے والی کمپنی اسرائیل کے این ایس او گروپ پر مقدمہ دائر کیا

تکنیکی کمپنی ایپل نے شمالی کیلی فورنیا عدالت میں اسرائیل کے این ایس او گروپ پر مقدمہ دائر کیا ہے۔ ایپل نے ایک بیان میں کہا ہے کہ این ایس او گروپ نے اپنے پیگاسس اسپائی ویئر کے ذریعے ایپل صارفین کےآلات کو نشانہ بنایا ہے۔ایپل کا یہ قدم امریکی حکومت کی جانب سے این ایس او گروپ کو بلیک لسٹ کرنے کے کچھ ہفتوں بعد آیا ہے۔

(السٹریشن: پری پلب چکرورتی/دی وائر)

پیگاسس معاملے میں سپریم کورٹ کا فیصلہ ملک کی جمہوریت کو پھر سے مضبوط کرنے کا مادہ رکھتا ہے

پیگاسس جاسوسی کا معاملہ ایک طرح سے میڈیا، سول سوسائٹی،عدلیہ،حزب اختلاف اور الیکشن کمیشن جیسے جمہوری اداروں پر آخری حملے جیسا تھا۔ ایسے میں کوئی حیرانی کی بات نہیں ہے کہ سپریم کورٹ کے عبوری فیصلے نے کئی لوگوں کو راحت پہنچائی، جو حال کے سالوں میں ایک ان دیکھی بات ہو چکی ہے۔

کرن تھاپر اور دشینت دوے۔ (فوٹو: دی وائر)

پیگاسس فیصلہ ’تاریخی‘، یہ ’اندھیرے میں اجالے‘ کی طرح ہے: سینئر وکیل دشینت دوے

سپریم کورٹ کے سینئر وکیل دشینت دوے نے کہا کہ یہ فیصلہ بذات خود اس بات کا ثبوت ہے کہ کورٹ نے پہلی نظر میں سرکار کو قصوروار ٹھہرایا ہے۔ وہیں آرین خان معاملے میں انہوں نے کہا کہ نچلی عدالت میں کچھ سنگین گڑبڑی ہے، جس کی وجہ سے ہندوستان ایک‘پولیس اسٹیٹ’بننے کی جانب بڑھ رہا ہے۔

(السٹریشن: پری پلب چکرورتی/دی وائر)

پیگاسس معاملہ: سپریم کورٹ نے جن کی جانچ کا حکم دیا ہے، وہ سات نکات کون سے ہیں

سپریم کورٹ کے ذریعے بنائی گئی کمیٹی کو پیگاسس جاسوسی معاملے میں سات نکات پر جانچ کرنے اور سات نکات پر سفارش کی ہدایت دی گئی ہے۔ عدالت نے کہا کہ سرکار کےقومی سلامتی کا حوالہ   دینےمحض سے عدالت خاموش تماشائی نہیں بن سکتی۔ نئی دہلی: سپریم کورٹ […]

سپریم کورٹ/ فوٹو: پی ٹی آئی

پیگاسس: ہندوستانی شہریوں کی جاسوسی کے الزامات کی جانچ کے لیےعدالت نے ماہرین کی کمیٹی بنائی

سپریم کورٹ نےکمیٹی کی تشکیل کرتے ہوئے کہا کہ قومی سلامتی کی آڑ میں پرائیویسی کی خلاف ورزی نہیں ہو سکتی۔ عدالت نے اس معاملے میں مرکزی حکومت کی جانب سے مناسب حلف نامہ دائر نہ کرنے کو لےکرشدید برہمی کا اظہار کیا اور کہا کہ قومی سلامتی کو خطرہ ہونے کا دعویٰ کرنا کافی نہیں ہے، اس کو ثابت بھی کرنا ہوتا ہے۔

برسلز میں پیگاسس پروجیکٹ کے لیےڈیفنی کیرواناایوارڈحاصل کرتے فاربڈین اسٹوریز کی سینڈرن ری گاڈ اور لارینٹ رچرڈ (فوٹو بہ شکریہ ٹوئٹر)

پیگاسس پروجیکٹ کو صحافت کے لیے یورپی پارلیامنٹ کا 2021 ڈیفنی کیروانا ایوارڈ ملا

دی وائرسمیت ایک بین الاقوامی میڈیا کنسورٹیم نے پیگاسس پروجیکٹ کے تحت یہ انکشاف کیا تھا کہ اسرائیل کی این ایس او گروپ کمپنی کے پیگاسس اسپائی ویئر کے ذریعے کئی ممالک کے رہنما ،صحافی، کارکنوں وغیرہ کے فون مبینہ طور پر ہیک کرکے ان کی نگرانی کی گئی یا پھر وہ سرولانس کے ممکنہ نشانے پر تھے۔

(فوٹو : رائٹرس)

سال 2019 میں ہندوستان میں ہوئے وہاٹس ایپ-این ایس او ہیک کا وقت پیگاسس پروجیکٹ کے ڈیٹابیس سے میل کھاتا ہے

پیگاسس پروجیکٹ کےتحت ملے دستاویز دکھاتے ہیں کہ 2019 میں جن ہندوستانی نمبروں کو وہاٹس ایپ نے ہیکنگ کی وارننگ دی تھی، وہ اسی مدت میں میں چنے گئے تھے جب وہاٹس ایپ کے مطابق پیگاسس اسپائی ویئر نے اس میسیجنگ ایپ کی کمزوریوں کا فائدہ اٹھاتے ہوئے اس کے صارفین کو نشانہ بنایا تھا۔